بسو

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
بسو
Basava statue crop.png 

معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1134  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
بساونا باگیواڑی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات سنہ 1196 (61–62 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
کدال سنگم  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
رہائش کرناٹک  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں رہائش (P551) ویکی ڈیٹا پر
مذہب لنگایت دھرم[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مذہب (P140) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
پیشہ شاعر،  وفلسفی،  وریاست کار،  ومذہبی رہنما  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر

بسون (کنڑا: ಬಸವಣ್ಣ) ایک لنگایت فلسفی، سیاسی لیڈر، کنڑا زبان کے شاعر اور ہندوستان کے سماجی مصلح تھے۔[2][3][4]

بسون نے اپنی شاعری جسے ”وچن“ کہا جاتا ہے، سے سماجی بیداری پھیلائی۔ بسون نے جنسی یا سماجی امتیاز، توہمات اور رسوم جیسے کہ مقدس دھاگا باندھنے کو رد کیا،[5] لیکن اشٹ لنگ نامی ہار متعارف کیا جس پر شیو لنگ کی تصویر بنی تھی۔[6]

وہ ہندومت میں رائج رسوم اور تہواروں کے شدید مخالف تھے۔ وہ خدا کی واحدنیت کے قائل اور بت پرستی و کثرت پرستی کے کٹر حریف تھے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. https://www.encyclopedia.com/religion/dictionaries-thesauruses-pictures-and-press-releases/basava
  2. Basava Encyclopædia Britannica (2012), Quote: "Basava, (flourished 12th century, South India), Lingayat religious reformer, teacher, theologian, and administrator of the royal treasury of the Kalachuri-dynasty king Bijjala I (reigned 1156–67)."
  3. A. K. Ramanujan۔ Speaking of Śiva۔ Penguin۔ صفحات 175–177۔ آئی ایس بی این 978-0-14-044270-0۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  4. Gene Roghair۔ Siva's Warriors: The Basava Purana of Palkuriki Somanatha۔ Princeton University Press۔ صفحات 11–14۔ آئی ایس بی این 978-1-4008-6090-6۔
  5. Carl Olson (2007), The Many Colors of Hinduism: A Thematic-historical Introduction, Rutgers University Press, ISBN 978-0813540689, pages 239–240
  6. Fredrick Bunce (2010), Hindu deities, demi-gods, godlings, demons, and heroes, ISBN 9788124601457, page 983