بیروٹ کلاں

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(بیروٹ سے رجوع مکرر)
Jump to navigation Jump to search
یونین کونسل
Birote is located in Abbottabad District
Birote is located in Abbottabad District
ملکFlag of Pakistan.svg پاکستان
صوبہPK-NWFP.svg خیبر پختونخوا
ضلعضلع ایبٹ آباد
تحصیلتحصیل ایبٹ آباد
آبادی
 • کل50,012

بیروٹ [1] سرکل بکوٹ کی 100فیصد اعلی تعلیم یافتہ لوگوں کی یونین کونسل ہے۔ اس کے شمال میں مشہور کوہالہ پل (نیا کوہالہ پل تو اسی کی حدود میں ہے)، حضرت مولانا میاں پیر فقیراللہ بکوٹی کی درگاہ و آستانہ عالیہ بکوٹ شریف [2] اور آزاد کشمیر کا دار الحکومت مظفر آباد، مغرب میں خیبر پختونخوا کی سب سے اونچی چوٹی موشپوری، نتھیا گلی اور ایوبیہ، جنوب میں پنجاب کا انٹرنیشنل سیاحتی شہر مری[3][4] اور مشرق میں آزاد کشمیر کا ضلع باغ واقع ہے۔

بیروٹ کا نام[ترمیم]

تحصیل مری سے ملحقہ ضلع ایبٹ آباد کے سرکل بکوٹ ہزارہ کی یونین کونسل بیروٹ۔ بیروٹ کے مشرق میں دھیرکوٹ، ضلع باغ آزاد کشمیر جبکہ مغرب میں کوہ مشک پوری، گلیات ہزارہ کا بلند و بالا پہاڑی سلسلہ واقع ہے جبکہ شمال میں کوہالہ پل سے ملحقہ ضلع مظفرآباد آزاد کشمیر کا سلسلہ شروع ہوتا ہے جبکہ جنوب میں ملکہ کوہسار مری واقع ہے۔

بیروٹ قدیمی سنسکرت زبان کا لفظ ہے جسکی معانی "پہلوان" کے ہیں، یونین کونسل بیروٹ "بیروٹ کلاں" اور "بیروٹ خورد" جسکو مغلیہ دور حکومت میں فارسی زبان "کلاں" اور "خورد" کی اصطلاح دی گئی جس کے معانی "بڑے" اور "چھوٹے" کے ہیں، بیروٹ کلاں کا مطلب "بڑا بیروٹ" جبکہ بیروٹ خورد کا مطلب "چھوٹا بیروٹ" ہیں، یونین کونسل بیروٹ میں بیروٹ کلاں و خورد کے علاوہ کہو شرقی و غربی کا وسیع و عریض رقبہ بھی شامل ہے اسکے علاوہ بیروٹ کی حدود دیول، مری سے عباسیاں، کوہالہ تک پھیلی ہوئی ہیں۔ دوسری روایت میں "بیروٹ" کا لفظ "بی - روٹ" قدیم پہاڑی زبان کا لفظ ہے جسکے معانی "بیس روٹیوں" کے ہیں۔

خطہ بیروٹ، قدیم زمانے میں بھی ایک اہم تجارتی و لشکری گزرگاہ رہی یے، خطہ کوہسار و ہزارہ سے کشمیر کی جانب تمام رستے اسی قدیم گزرگاہ سے گزرتے تھے. بیروٹ آج سے تقریبا 500 سال پہلے بمطابق 1450ء کو آباد ہوا جسکو ڈھونڈ عباسی قبیلے کے بزرگ حضرت پیر سردار عبدالرحمان عباسی المعروف دادا رتن خان عباسی رح نے چمنکوٹ، آزاد کشمیر سے ہجرت فرماکر "عباسیاں، بیروٹ" میں سکونت پزیر ہوکر آباد کیا جہاں سے آپکی اولاد کوہ مری و سرکل بکوٹ ہزارہ و گلیات کی طرف آباد ہوئی۔ حضرت سردار عبدالرحمان المعروف دادا رتن خان عباسی رح کے والد سردار طالب خان عباسی المعروف تولک خان، فیروز شاہ کے دور حکومت میں ریاست ملتان کے وزیر بھی رہے اور ملتان سے واپسی پر آپ 1435ء کو کشمیر کے بادشاہ، شاہ زین العابدین کے دور حکومت میں علاقہ پونچھ، آزاد کشمیر و ملحقہ مری و سرکل بکوٹ ہزارہ کے علاقوں کے نگران و سردار مقرر ہوئے، اسی وجہ سے تولک خان عباسی کو پونچھ کا سردار بھی کہا جاتا ہے۔ سردار طالب خان عباسی المعروف تولک خان، مشہور زمانہ سپہ سالار خلافت عباسیہ، حاکم صوبہ ہرات خراسان و شمالی پاکستان کے عباسیوں کے جدامجد غیاث الدین ضراب شاہ المعروف سردار ضراب خان عباسی رح المتوفی 1078ء کی نسل سے ولی کامل اور خاندان ڈھونڈ عباسیہ کے مورث اعلی حضرت شاہ ولی خان عباسی المعروف دادا ڈھونڈ خان عباسی رح جو کہ امام الاولیاء حضرت بہاؤالدین زکریا ملتانی رح کے مرید خاص تھے، انکی پشت سے ولی کامل پیر نعمت شاہ عباسی المعروف دادا ڈھمٹ خان عباسی رح دناہ، گھوڑا گلی مری کی اولاد سے ہیں۔ سردار طالب خان المعروف تولک خان، مشہور زمانہ ولی کامل حضرت پیر نعمت شاہ عباسی المعروف دادا ڈھمٹ خان عباسی، مزار شریف دناہ، گھوڑا گلی مری المتوفی 1380ء کے فرزند پائندہ خان عباسی المعروف پمی خان کے پوتے ہیں۔

موجودہ دور کے لحاظ سے یونین کونسل بیروٹ کی آبادی 50 ہزار نفوس پر مشتمل ہے جو کہ تحصیل مری سے ملحقہ ضلع ایبٹ آباد کے سرکل بکوٹ ہزارہ کی سب سے گنجان آباد یونین کونسل ہے جو کہ تاریخی، مذہبی، تعلیمی، سماجی، سیاسی اور معاشرتی لحاظ سے خطہ سرکل بکوٹ ہزارہ میں بڑی اہمیت کی حامل رہی ہے۔ 1857ء میں ملکہ کوہسار مری میں انگریز سامراج کے خلاف لڑی جانے والی جنگ آزادی میں، بیروٹ کے سردار لالی خان عباسی کا شمار، حریت پسندوں کے قائد، سردار شیر باز خان عباسی کے قریبی رفقاء و حامیان میں ہوتا تھا، جسکی پاداش میں 1857ء میں انگریز حکومت نے سردار شیر باز خان عباسی کو انکے 8 بیٹوں اور بیشمار رفقاء کے ہمراہ ایجنسی گراؤنڈ، مری میں توپ کے آگے باندھ کر اڑایا اور اس طرح حریت پسندوں نے جام شہادت نوش کیا۔  اسکے علاوہ بھی 1948ء میں ڈوگرہ سکھ ریاست کے خلاف مجاہد اول و سابق صدر آزاد کشمیر سردار عبدالقیوم خان عباسی کی قیادت میں لڑی جانے والی جنگ آزادی کشمیر میں مجاہدین کا بیس کیمپ "عباسیاں، کوہالہ" رہا ہے اور اہلیان عباسیاں و بیروٹ نے سردار عبد القیوم خان عباسی کا بھرپور ساتھ دیا اور انکے شانہ بشانہ ڈوگرہ سکھ ریاست کے خلاف علم جہاد بلند کیا۔ بیروٹ کا شمار سرکل بکوٹ ہزارہ کے سو فیصد تعلیم یافتہ گاؤں میں ہوتا ہے اور اس سرزمین بیروٹ نے ملک کے نامور صحافی، سیاستدان، بیوروکریٹس، فوجی افسران، وکلاء،  ڈاکٹرز و انجینئرز پیدا کیے۔

بیروٹ

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Birote - Wikipedia
  2. Bakot / Bakot, North-West Frontier, Pakistan, Asia
  3. "آرکائیو کاپی". 05 اگست 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 13 اگست 2013. 
  4. عباسی،نور الہٰی، تاریخ مری