چنگیز خان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
چنگیز خان
(منگولی میں: ᠴᠢᠩᠭᠢᠰ ᠬᠠᠭᠠᠨ)،(منگولی میں: Чингис хаан ویکی ڈیٹا پر مقامی زبان میں نام (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Genghis Khan.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائشی نام (منگولی میں: Тэмүжин)، (منگولی میں: ᠲᠡᠮᠦᠵᠢᠨ ویکی ڈیٹا پر پیدائشی نام (P1477) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیدائش 16 اپریل 1162[1]  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ڈیلون بولڈوگ  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 25 اگست 1227 (65 سال)  ویکی ڈیٹا پر تاریخ وفات (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ینچوان  ویکی ڈیٹا پر مقام وفات (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وجۂ وفات گھوڑے سے گرنا  ویکی ڈیٹا پر وجۂ وفات (P509) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the Mongol Empire.svg منگول سلطنت  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
زوجہ بورتے  ویکی ڈیٹا پر شریک حیات (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد جوجی خان، چغتائی خان[2][3]، اوکتائی خان، تولی خان  ویکی ڈیٹا پر اولاد (P40) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد یسوخئی بہادر  ویکی ڈیٹا پر والد (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
خاندان بورجگین  ویکی ڈیٹا پر خاندان (P53) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دیگر معلومات
پیشہ عسکری قائد  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عسکری خدمات

چنگیز خان (انگریزی: Genghis Khan) (تلفظ: /ˈɛŋɡɪs ˈkɑːn/، عام طور پر تلفظ /ˈɡɛŋɡɪs ˈkɑːn/;[4][5] منگولی: [tʃiŋɡɪs xa:ŋ] ( سنیے)) منگول سردار۔ دریائے آنان کے علاقے میں پیدا ہوا۔ اصلی نام تموجن تھا جس کا مطلب ہے "لوہے کا کام کرنے والا"۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

1175ء میں تیرہ برس کی عمر اس کے باپ نے اس کی شادی بورتے سے کر دی، چونکہ شروع ہی سے چنگیز خان نہایت شاہانہ مزاج کا آدمی تھا اس لیے اپنی لیاقت کی بنا پر اسی سال تخت پر متمکن ہوا۔

چنگیز خان کا خطاب[ترمیم]

جب 1175ء کو جب وہ اپنے قبیلے کا سردار بنا تو دیگر قبائل سے اس کی چپقلش شروع ہو گئی۔ اس نے تمام قبائل اور حلقوں کو اپنے زیر اثر کرنے کی بھر پور کوشش کی کیونکہ اس وقت منگولیا پر کئی قبائل کی حکومت تھی۔ پھر صورت حال کا جائزہ لینے کے بعد اس نے سب سرداروں کو اکٹھا کیا اور مل کر دیگر علاقوں کو فتح کرنے کا منصوبہ پیش کیا۔ اس مشورے کے بعد وہ بہت مقبول ہو گیا اور دیگر سب سرداروں نے اسے متفقہ طور پر اپنا سردار تسلیم کر لیا اور متفقہ طور پر دریائے آنان کے قریب ایک مجلس میں اسے چنگیز خان کا خطاب بھی دیا۔

منگول سلطنت[ترمیم]

چنگیز خان نے باقاعدہ طور پر منگول سلطنت کو ایک مضبوط سلطنت کے طور پر متعارف کروایا، منگول سلطنت کی فوج کی تنظیم نو کے ساتھ ساتھ دیگر اداروں کو بھی مضبوط بنیادوں پر کھڑا کیا۔ اس نے فوج کی تنظیم کے جو اصول مقرر کیے وہ صدیوں تک فوجی ماہروں کے لیے مشعل راہ کا کام دیتے رہے۔ اس نے چین کو دو دفعہ تاراج کیا اور 18۔1214ء میں دو چینی ریاستوں ہیا اور کن پر قبضہ کر لیا۔

وفات[ترمیم]

1219ء میں اس کے چند سفیر، جو مختلف ممالک میں بھیجے گئے تھے، قتل ہو گئے۔ اس واقعے نے اس کو تسخیر عالم پر ابھارا اور وہ دنیا کو فتح کرنے کے ارادے سے نکل کھڑا ہوا۔ اسی سال اس نے شمالی چین اور افغان سرحد کے کئی علاقے فتح کیے۔ بخارا اور مرو کے علاقوں کو لوٹا اور ہرات پر قبضہ کر لیا۔ اس کے بعد ترکی اور جنوب مشرقی یورپی ملکوں کا رخ کیا۔ اس کی فوجوں نے جنوبی روس اور شمالی ہند تک یلغار کی۔ 1227ء میں چین پر تیسرے حملے کے دوران میں اس کا انتقال ہو گیا۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

بیرونی روابط[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. اجازت نامہ: CC0
  2. عنوان : Джагатай
  3. مصنف: Nikolay Veselovsky — عنوان : Джагатай — شائع شدہ از: Brockhaus and Efron Encyclopedic Dictionary. Volume Xа, 1893
  4. American Heritage Dictionary۔
  5. "Genghis Khan"۔ Webster's New World College Dictionary۔ Wiley Publishing۔ مورخہ 6 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ جولائی 29, 2011۔
چنگیز خان
پیدائش: 1162ء وفات: 18 اگست 1227ء
شاہی القاب
ماقبل 
ہوتولہ خان
خاماگ منگول
1189ء— موسم بہار 1206ء
خاماگ منگول کا اختتام
مغول سلطنت کا آغاز
'
اِبتدائے مغول سلطنت
خاقان مغول سلطنت
موسم بہار 1206ء18 اگست 1227ء
مابعد 
تولی خان
As regent

سانچہ:Yuan Emperors