سلطنت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

سلطنت لفظ سلطان سے نکلا ہے جس کا مطلب "محکم یا حکمران"۔ سلطنت کو ہم حاکمیت بھی کہہ سکتے ہیں۔ سلطنت ویسے سیاسی طور پر ایک شہنشاہ یا سلطان کے زیرِ نگراں اقلیم یا جغرافیائی علاقے کو سلطنت کہلاتی ہے۔ ایک سلطنت ایک ہی شاہ یا صدر کے ماتحت قابو میں ہوتا ہے۔ سلطنت کے اندر بہت سے عہدے ہوتے ہیں جن میں بادشاہ، ملکہ، وزیر اعظم، وزیر دفاع، وزیر خزانہ، وزیر افواج، وزیر تعلیم ، باندھی، سپاہی اور دیگر بے شمار عہدے موجود ہوتے ہیں۔ لیکن سب سے بڑا عہدہ بادشاہ کا ہوتا ہے۔

سلطنت انتہائی عروج
(سن عیسوی)
انتہائی رقبہ
(لاکھ مربع میل)[1]
برطانوی سلطنت 1920ء 137.1
منگول سلطنت 1270ء 92.7
روسی سلطنت 1895ء 88.0
کنگ خاندان- چین 1790ء 56.8
ہسپانوی سلطنت 1810ء 52.9
فرانسیسی سلطنت- دوسری 1920ء 44.4
خلافت عباسیہ 750ء 42.9
خلافت امویہ 720ء 42.9
یوان خاندان- چین 1310ء 42.5
پرتگالی سلطنت 1815ء 40.2

سلطنت کی بنیاد[ترمیم]

تاریخ کی تقریباً ہر سلطنت کی بنیاد لوٹ مار رہی ہے۔[2]۔ جب مفتوحہ علاقے کنگال ہو گئے تو ہر سلطنت کا خاتمہ ہو گیا۔

اقتباس[ترمیم]

  • ہر بڑی کامیابی کے پیچھے کوئی جرم ہوتا ہے۔
"Behind every great fortune there is a crime." -Balzac (quoted at the front of "The Godfather", by Mario Puzo).[3]

نگار خانہ[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. The Biggest Empires In Human History
  2. New BBC Civilisations to ask whether Britain's culture is built on 'looting and plunder'
  3. Quote Investigator