جامعہ اسلامیہ تعلیم الدین ڈابھیل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

جامعہ اسلامیہ تعلیم الدین ڈابھیل
قسمجامعہ اسلامیہ
قیام1908[1]
بانیمولانا احمد حسن بھام سملکی
چانسلرمولانا احمد بزرگ
طلبہ1000
مقامڈابھیل، بھارت[2]
کیمپسشہری

جامعہ اسلامیہ تعلیم الدین ڈابھیل یا ڈابھیل جامعہ اسلامیہ یا جامعہ اسلامیہ ڈابھیل گجرات ، بھارت کا ایک اسلامی مدرسہ ہے۔[3][4][5][6]

تاریخ[ترمیم]

احمد میاں لاجپوری کے ایک شاگرد احمد میا بھج سملکی نے سملک مسجد، سملک میں "مدرسہ تعليم الدین" کو قائم کیا تھا پھر احمد ابراہیم بزرگ سورتی سملکی کے انتقال کے بعد؛ مدرسہ کو ڈابھیل منتقل کیا گیا۔ احمد ابراہیم بزرگ سورتی سملکی کو بطور پرنسپل مقرر کیا گیا تھا اور انھوں ہی نے مدرسہ تعلیم الدین کا نام جامعہ اسلامیہ تعلیم الدین ڈابھیل تبدیل کیا تھا۔

انور شاہ کشمیری ، شبیر احمد عثمانی ، عبد الرحمن امروہوی، علامہ محمد یوسف بنوری ، محمد شفیع دیوبندی ، محمد ایوب اعظمی ، اکرام علی بھاگلپوری اور واجد حسین حسین دیوبندی اس جامعہ کے اساتذۂ حدیث رہے ہیں۔ شبیر احمد عثمانی کو انور شاہ کشمیری کی وفات کے بعد جامعہ کا شیخ الحدیث مقرر کیا گیا تھا۔احمد خان پوری موجودہ شیخ الحدیث ہیں۔

مایا ناز فضلاء[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. http://scnc.ukzn.ac.za/doc/B/Ms/Meer_Family/Meer_Ismail_Moosa_death.pdf
  2. http://wikimapia.org/5178982/Madrasah-Jamiya-Islamiyah-Talimudeen
  3. "www.tazkiya.org". www.tazkiya.org. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2017. 
  4. "**NEW - Beginning Arabic". Ashford & Staines Community Centre. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2017. 
  5. "Is it permissible to publish an English translation of the Qur'an without the Arabic text?". Nawadir (بزبان انگریزی). 2015-02-27. 01 دسمبر 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2017. 
  6. "TafseerUsmani". www.al-islam.edu.pk. 16 جنوری 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 نومبر 2017. 
  7. نایاب حسن قاسمی. دار العلوم دیوبند کا صحافتی منظر نامہ. ادارہ تحقیق اسلامی، دیوبند. صفحات 183–189.