سید ازہر شاہ قیصر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مولانا

سید ازہر شاہ قیصر
ذاتی
پیدائش دسمبر 1920
وفات 27 نومبر 1985(1985-11-27) (عمر  64 سال)
مدفن مزارِ انوری، دیوبند
مذہب اسلام
اولاد نسیم اختر شاہ قیصر
والدین
دور حکومت برطانوی ہند، انڈیا
فرقہ سنی
فقہی مسلک حنفی
تحریک دیوبندی
بنیادی دلچسپی اردو ادب
قابل ذکر کام حیاتِ انور، یادگارِ زمانہ ہیں یہ لوگ، سیرت سیدنا ابو بکر صدیق، ذرا عمرِ رفتہ کو آواز دینا
مادر علمی دار العلوم دیوبند، جامعہ اسلامیہ تعلیم الدین ڈابھیل
پیشہ ادیب، عالم
رشتہ دار انظر شاہ کشمیری (برادر)

سید ازہر شاہ قیصر دیوبندی مکتبہ فکر سے وابستہ بلند پایہ ادیب اور صحافی تھےـ آپ مولانا انور شاہ کشمیری کے خلفِ اکبر تھےـ[1][2][3]

تصانیف[ترمیم]

آپ کی نمایاں تصانیف درج ذیل ہیں:[1][3]

  • یادگار زمانہ ہیں یہ لوگ [4]
  • سیرت سیدنا ابو بکر صدیق
  • ذرا عمرِ رفتہ کو آواذ دینا
  • سفینۂ وطن کے ناخدا
  • آذانِ بلال

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب نایاب حسن قاسمی۔ دار العلوم دیوبند کا صحافتی منظر نامی۔ ادارہ تحقیقِ اسلامی، دیوبند۔ صفحہ 183-189۔
  2. "البلاغ" (اردو میں). 5 (دارالعلوم کراچی) 53 (فروری 2018): 17. https://archive.org/download/Al-Balagh-Magazine/2018_02_February_Al_Balagh.pdf۔ اخذ کردہ بتاریخ 11 July 2019. 
  3. ^ ا ب مفتی عبید انور شاہ قیصر۔ "آسمانِ ادب و صحافت کا آفتابِ جہاں تاب سید ازہر شاہ قیصر"۔ قرطاس و قلم (اکتوبر، نومبر 2012)۔ صفحہ 45-52۔
  4. یاد گارِ زمانہ ہیں یہ لوگ (ای-بُک)۔ ریختہ (Urdu زبان میں)۔ اخذ شدہ بتاریخ 24 جولا‎ئی 2019۔