دار العلوم دیوبند

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(دارالعلوم دیوبند سے رجوع مکرر)
Jump to navigation Jump to search
دار العلوم دیوبند
300px
قسم اسلامی یونیورسٹی
قیام 31 مئی 1866ء
چانسلر مجلس شوریٰ
وائس چانسلر Mufti Abul Qasim Nomani
مقام Deoband Saharanpur، اتر پردیش، بھارت
ویب سائٹ دارالعلوم دیوبند کی ویب سائٹ اور دارالعلوم کے دارالافتاء کی ویب سائٹ

ضلع سہارنپور کے ایک قصبے نانوتہ کے مولانا قاسم نانوتوی نے 30 مئی 1866ء بمطابق 15 محرم الحرام 1283ھ کو دیوبند کی ایک چھوٹی سی مسجد (مسجد چھتہ) میں مدرسۃ دیوبند کی بنیاد رکھی۔ واضح رہے کہ اس نیک کام میں انہیں مولانا محمود الحسن کے والد مولوی ذوالفقار علی صاحب اور مولانا شبیر احمد عثمانی کے والد مولوی فضل الرحمن صاحب کا عملی تعاون حاصل رہا۔

دار العلوم دیوبند نے اب تک سینکڑوں مفسر، محدث، مجاہدین، ادیب اور تلامذہ پیدا کیے ہیں جن میں مولانا محمود الحسن اور شبیر احمد عثمانی کے علاوہ مولانا اشرف علی تھانوی، مولانا عبید اللہ سندھی، مولانا حسین احمد مدنی اور سید انور شاہ کاشمیری وغیرہ قابل ذکر ہیں۔ متعدد جہادی تنظیمیں مثلا سپاہ صحابہ، لشکر جھنگوی اور تحریک طالبان پاکستان اسی دار العلوم کا فیضان ہیں۔ انہی ہستیوں نے جنوبی ایشیا اور جنوبی ایشیا سے باہر اسلام کی شمع کو روشن رکھنے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑی ہے۔ شمع سے شمع روشن کرنے کی یہ روایت اور سلسلہ ہنوز جاری ہے۔

فضلائے دار العلوم

  • شیخ الہند مولانا محمودحسن دیوبندی،
  • مولانا سید احمد حسن امربھی،
  • مولانا خلیل احمد سہارنپوری،
  • مفتی عزیز الرحمن عثمانی،
  • حکیم الامت مجددالملت [[اشرف علی تھانوی]-،
  • محدث کبیر علامہ انورشاہ کشمیری،
  • مفتی کفایت اللہ دہلوی،
  • مولانا اصغر حسین دیوبندی،
  • محدث وقت مولانا سید حسین احمد مدنی،
  • مولانا اعزاز علی امروہی،
  • مفتی مہدی حسن شاہجہاں پوری،
  • مولانا محمد الیاس کاندھلوی،
  • علامہ ابراہیم کاندھلوی،
  • مولانا شبیر احمد عثمانی،
  • مولانا فخرالدین احمد مراد آبادی،
  • مولانا ظفر احمد عثمانی،
  • مولانا مناظر احسن گیلانی،
  • مصلح الامت مولانا شاہ وصی اللہ فتحپوری،
  • مولانا ڈاکٹر سیدعبدالعلی حسنی(ناظم ندوة العلماء لکھنؤ)،
  • حکیم الاسلام مولانا قاری محمد طیب دیوبندی،
  • مفتی محمد شفیع عثمانی(مفتی اعظم پاکستان)،
  • مولانا محمد ادریس کاندھلوی،
  • مولانا بدر عالم میرٹھی،
  • مولانا عبد الحفیظ بلیاوی(مصنف مصباح اللغات)،
  • مولانا حفظ الرحمن سیوہاروی،
  • مولانا شریف محی الدین اکرمی بھٹکلی(سابق قاضی شہر بھٹکل)،
  • مفتی عتیق الرحمن عثمانی،
  • مولانا حبیب الرحمن اعظمی،
  • مولانا محمد میاں دیوبندی،
  • مولانا محمد منظور نعمانی،
  • فقیہ الامت مفتی محمود حسن گنگوہی،
  • محدث وقت مولانا یوسف بنوری،
  • مولانا مسیح اللہ جلال آبادی،
  • مولانا سید منت اللہ رحمانی،
  • مولانا سید ابوالحسن علی ندوی(ناظم ندوة العلماء لکھنؤ)،
  • مولانا احتشام الحق تھانوی،
  • مفتی محمود صاحب(سابق وزیر اعلیٰ پنجاب پاکستان)،
  • مولانا ارشاد احمد قاسمی(مبلغ دار العلوم دیوبند)،
  • مولانا محمد سالم قاسمی،
  • مولانا سید اسعد مدنی،
  • مولانا انظرشاہ کشمیری،
  • مولانا محمد عمر پالن پوری،
  • مولانا وحید الزماں کیرانوی،
  • مولانا سید شوکت علی نظیر صاحب (امام وخطیب جامع مسجد ممبئی،و سرپرست اعلیٰ جامعہ حسینیہ عربیہ شری وردھن،کوکن)
  • مولانا قاضی مجاہد الاسلام قاسمی،
  • مولانا برہان الدین سنبھلی،
  • مولانا سید ارشد مدنی،
  • مولانا حکیم محمد عبد اللہ مغیثی(مہتمم جامعہ اسلامیہ عربیہ گلزاریہ حسینیہ اجراڑہ میرٹھ)،
  • مولانا اسرار الحق قاسمی(نائب صدر آل انڈیا ملی کونسل)،
  • مولانا اشرف علی باقوی قاسمی(مہتمم دار العلوم سبیل الرشاد بنگلور، وامیر شریعت کرناٹک،
  • مولانا سید ولی رحمانی،
  • مولانا عبد العلیم قاسمی بھٹکلی(مدیر نقش نوایت، ونائب ناظم جامعہ اسلامیہ بھٹکل)،
  • مفتی سعید احمد پالن پوری (شیخ الحدیث دار العلوم دیوبند)
  • مولانا محمد شفیع قاسمی بھٹکلی(ناظم ادارہ رضیۃ الابرار بھٹکل،وسابق مہتمم جامعہ اسلامیہ بھٹکل)،
  • مولانا آمان اللہ صاحب (متہمم جامعہ حسینیہ عربیہ شری وردھن،کوکن)،
  • مولانا خالد سیف اللہ رحمانی،
  • مولانا مسعود احمد ہاشمی(بانی ومہتمم مدرسہ احیاء العلوم شیموگہ)،
  • محمد عبد السمیع ندوی
  • مولانا سید محمود مدنی وغیرہم

دیوبند سے الحاق شدہ مربوط دینی مدارس

الازہر یونیورسٹی مصر کی طرح پورے عالم اسلام میں دیوبند مکتب فکر کو لازوال شہرت نصیب ہوئی۔ آج جنوبی ایشیا، وسطی ایشیا اور مشرق وسطی میں سینکڑوں کے حساب سے ایسے دینی مرسے اور درسگاہیں ہیں جو علمی اور فکری لحاظ سے دیوبند مکتب فکر سے مربوط ہیں۔ پاکستان میں مدرسہ اشرفیہ لاہور، جامعہ مدینہ لاہور ،مدرسہ عربی خیر المدارس ملتان، دار العلوم کھڈہ کراچی اور دارلعلوم حقانیہ اکوڑہ خٹک نوشہرہ، ہر سو دیوبند مکتب فکر کی روشنی پھیلانے میں مصروف عمل ہیں۔ سید عطائ اللہ شاہ بخاری رحمۃاللہ علیہ

حوالہ جات

مزید دیکھیے