جینز

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
ایک لڑکی جینز پہنی ہوئی۔ اس کے ہاتھ میں موبائل فون ہے۔

جینز ڈینم (كپڈے़) کے پتلون ہیں۔ اصل میں انہیں پہن کر محنت والے کام کرنے کے لئے ڈیزائن کیا گیا تھا مگر 1950ء کی دہائی میں یہ نوجوانوں کے درمیان مقبول ہو گئے. تاریخی برانڈوں میں ليوائس، زوڈائک اور رینگلر شامل ہیں. جینز آج ایک بہت ہی مقبول غیر رسمی لباس ہے جو دنیا بھر میں بہت سی طرزوں اور رنگوں میں مقبول ہے. "نیلے رنگ کی جینز" کی شناخت خاص طور پر ریاستہائے متحدہ کی ثقافت کے ساتھ، خاص طور پر پرانے مغربی امریکا کے ساتھ جڑی ہے۔

تاریخ[ترمیم]

جینز کی تاریخ پر نظر ڈالیں تو ہمارے سامنے 16 ویں صدی کی ہندوستانی برآمد سوتی کپڑا آتا ہے جسے ڈُگاری کہا جاتا تھا۔ بعد میں اسے نیل کے رنگ میں رنگ کر ممبئی کے ڈوگار قلعہ کے پاس فروخت کیا گیا تھا. ملاحوں نے اسے اپنے لیے سہل پایا اور اس سے بنی پتلونیں وہ پہننے لگے.

جینز کے كپڑے़ کا بننا 1600ء کے آغاز میں اطالیہ کے ایک قصبے ٹیورن کے قریب چييري میں کیا گیا تھا. اسے جینیوا کے ہاربر کے ذریعے فروخت کیا گیا تھا، جینیوا ایک آزاد جمہوریہ کا دارالحکومت تھا جس کی بحریہ بہت طاقتور تھی. اس كپڑے़ سے سب سے پہلے جینیوا کی بحریہ کے ملاحوں کی پتلونیں بنائی گئیں کیونکہ ملاحوں کو ایسی پتلون چاہیے تھی جسے خشک یا گیلے بھی پہنا جا سکے اور اس کے پہنچوں کو جہاز کے ڈیک کی صفائی کے وقت اوپر موڈا़ جاسکے۔ ان جينز کو سمندر کے پانی سے ایک بڑے़ جال میں باندھ کر دھویا جاتا تھا اور سمندر کے پانی ان کا رنگ اڑا़كر انہیں سفید کر دیتا تھا. جینز کا نام بہت سے لوگوں کے مطابق جینیوا کے نام پر پڑا़ ہے. جینز بنانے کیلئے خام مال فرانس کے نمس شہر سے آتا تھا جسے فرانسیسی میں دے نم کہتے تھے۔ اسی لیے اس کے كپڑے़ نام ڈینم پڑ گیا۔

بیرونی روابط[ترمیم]