حشمت اللہ لودی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
پروفیسر حشمت اللہ لودھی
Hashmatullah Lodhi.JPG
پیدائش 2 جولائی 1929(1929-07-02)ء
لکھنؤ، یوپی، برطانوی ہندوستان
وفات مارچ 17، 2019(2019-30-17) (عمر  89 سال)
کراچی
قلمی نام حشمت اللہ لودی
پیشہ پروفیسر، مصنف، کوئز ماسٹر
زبان اردو، انگریزی
قومیت Flag of پاکستانپاکستانی
شہریت Flag of پاکستانپاکستانی
تعلیم ایم ایس سی (نباتیات)
اصناف تدریس، معلومات عامہ، خودنوشت
نمایاں کام آتا ہے یاد مجھکو
جدید اولمپک۔ منزل بہ منزل
خزینہ
اہم اعزازات لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ (پاکستان کوئز سوسائٹی انٹرنیشنل)
شریک حیات نزہت لودی (مصنفہ)
اولاد ڈاکٹر انیلا رضوان
ڈاکٹر سلمان حشمت لودی
پروفیسر ڈاکٹر سروش لودی
ڈاکٹر فرح حشمت
ڈاکٹر عمر حشمت لودی
ڈاکٹر صارم حشمت لودی
انجینئر اشعر لودی

پروفیسر حشمت اللہ لودی (پیدائش: 2 جولائی، 1929ء - وفات: 17 مارچ، 2019ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے نامور ماہر تعلیم، نباتیات کے پروفیسر، مصنف اور معلومات عامہ کے شعبے کی جانی پہچانی شخصیت تھے۔ وہ گورنمنٹ اسلامیہ سائنس کالج، ایس ایم گورنمنٹ سائنس کالج کے پرنسپل اور محکمہ تعلیم سندھ میں ایڈیشنل سیکریٹری بھی رہ چکے ہیں۔ ان کے بیٹے پروفیسر ڈاکٹر سروش لودی این ای ڈی یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کراچی کے موجودہ وائس چانسلر ہیں۔

حالات زندگی[ترمیم]

پروفیسر حشمت اللہ لودی 2 جولائی، 1929ء یوپی کے مشہور شہر لکھنؤ میں پیدا ہوئے۔ تقسیم ہند کے بعد کراچی منتقل ہو گئے اور نباتیات میں ایم ایس سی کی ڈگری امتیازی حیثیت میں حاصل کی۔ تعلیم حاصل کرنے کے بعد وہ تدریس کے شعبے سے وابستہ ہو گئے اور ترقی کی منازل طے کرتے ہوئے ایس ایم گورنمنٹ سائنس کالج اور گورنمنٹ اسلامیہ سائنس کالج کراچی کے پرنسپل کے عہدے پر بھی مقرر ہوئے۔ بعد ازاں محکمہ تعلیم حکومت سندھ کے ایڈیشنل سیکریٹری کے عہدے سے سبکدوش ہوئے۔ انہوں نے متعدد کتابیں تحریر کیں جن A Textbook of Botany (انٹرمیڈیٹ کلاسوں کے لیے)، خزینہ (سائنسی معلومات)، جدید اولمپک۔ منزل بہ منزل (معلومات عامہ)، عظیم موجدوں کی کہانیاں (معلومات عامہ)، کوئل کا انتقام (بچوں کے لیے)، Step Ahead Science I-IV (پرائمری کلاسوں کے لیے) اور خودنوشت سوانح عمری آتا ہے یاد مجھکو شامل ہیں۔[1]

حشمت اللہ لودی نے سائنس اور معلومات عامہ کے موضوعات پر ریڈیو اور ٹی وی کے متعدد پرگرامز بھی کیے جس کا مقصد نوجوانوں اور طلبہ میں معلومات عامہ کا فروغ تھا۔[1]

وابستگیاں[ترمیم]

کھیل[ترمیم]

  • ہندوستان کے صوبہ یوپی کی ہاکی ٹیم کے اہم رکن
  • کراچی اور سندھ کی ہاکی ٹیم کی متعدد بار نمائندگی

ریڈیو پرگرامز[ترمیم]

  • سائنس پاکستان (بچوں کے لیے)
  • بچوں کی دنیا (کوئز پروگرام)
  • سخن گسترانہ
  • Do You Know Pakistan (ریڈیو پاکستان کی ورلڈ سروس کے لیے)

ٹی وی پرگرامز[ترمیم]

  • توانائی کے سرچشمے (1978-79)
  • کیوں اور کیسے (1981)
  • آزمائش-کوئز مقابلہ (1986)
  • ارادے اور منزلیں (1988)
  • سنگ سنگ چلیں (1989)

تصانیف[ترمیم]

  • A Textbook of Botany (انٹرمیڈیٹ کلاسوں کے لیے)
  • خزینہ (سائنسی معلومات)
  • جدید اولمپک۔ منزل بہ منزل (معلومات عامہ)
  • عظیم موجدوں کی کہانیاں (معلومات عامہ)
  • کوئل کا انتقام (بچوں کے لیے)
  • Step Ahead Science I-IV (پرائمری کلاسوں کے لیے)
  • آتا ہے یاد مجھکو (خودنوشت سوانح عمری)

اعزازات[ترمیم]

2017ء میں پاکستان کوئز سوسائٹی انٹرنیشنل نے معلومات عامہ اور تعلیم کے فروغ کے لیے حشمت اللہ لودی کی خدمات کے صلے میں لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ سے نوازا۔[2]

وفات[ترمیم]

پروفیسر حشمت اللہ لودی طویل علالت کے بعد 17 مارچ 2019ء کو کراچی میں انتقال کر گئے۔[3] انہیں پہلوان گوٹھ کے قبرستان میں دفن کیا گیا۔[4]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پروفیسر حشمت اللہ لودی، آتا ہے یاد مجھکو، سید اینڈ سید (پبلشرز)، کراچی، پس ورق
  2. پروفیسر حشمت اللہ لودی کے لیے لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ، روزنامہ نوائے وقت کراچی، صفحہ 3، 17 دسمبر، 2017ء
  3. "Prof Hashmatullah Lodhi passes away"۔ ڈان۔ 19 مارچ، 2019۔ Check date values in: |date= (معاونت)
  4. "پروفیسر حشمت اللہ لودھی سپرد خاک نماز جنازہ میں وزیر اعلیٰ سندھ کی شرکت"۔ جنگ۔