دلائل الخیرات

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
دلائل الخيرات
دلائل الخيرات وشوارق الأنوار في ذكر الصلاة على النبي المختار
دلائل الخیرات

مصنف محمد بن سلیمان الجزولی
زبان عربی
ملک المغرب
سلسلہ علوم اسلاميہ
موضوع درود و سلام
ناشر دار الفقيه
تاریخ اشاعت 2005ء
نوع الطباعة تجليد
تعداد صفحات 152
ویب سائٹ
صفحۂ اول سترہویں صدی عیسوی کا نسخہ- والٹر آرٹ میوزیم.
پندرہوين صدی کے نسخہ میں مسجد نبوی اور حرم قدسی شریف

دلائل الخیرات درود پاک پر دنیا میں مشہور و مقبول ترین کتاب

تصنیف کی غایت[ترمیم]

دلائل الخیرات و شوارق الانوار فی ذکر الصلوٰۃ والسلام علی نبی المختار کی تصنیف کی غرض و غایت بھی خود مصنف نے کتاب کے مقدمہ میں بیان کردی ہے کہ فالغرض فی ہذا الکتاب ذکر الصلوٰۃ علی النبی ؐوفضائلہا اس کتاب کو تحریر کرنے کی غرض و غایت حضور نبی اکرم پر درود پاک اور اس کی فضیلت کو بیان کرنا ہے۔سیدنا محمد بن سلیمان الجزولی فاس میں قیام پزیر تھے۔ ایک مرتبہ ایسا ہوا کہ آپ وضو فرمانے کے لئے کنویں پر تشریف لے گئے۔ لیکن اس وقت وہاں کوئی ایسی چیز میسر نہ تھی جس کے ساتھ آپ کنویں سے پانی نکالتے۔ آپ اس حالت میں تھے کہ اب کیا کریں کہ اچانک ایک لڑکی جو ایک اونچی جگہ سے یہ منظر دیکھ رہی تھی اس نے آپ کا نام پوچھا۔ جواب سن کر اس لڑکی نے کہا کہ آپ وہی شخصیت ہیں جن کا ہر جگہ چرچا اور تعریف ہورہی ہے اور صرف اس بات سے پریشان ہیں کہ کنویں سے پانی کس طرح نکالا جائے۔ وبصقت فی البئر ففاض ماء ہا حتی ساح وجہ الارض تو اس لڑکی نے کنویں میں جیسے ہی اپنا لعاب ڈالا تو پانی کنویں سے ابل کر باہر زمین پر آگیا۔ سیدنا محمد بن سلیمان الجزولی جب وضو سے فارغ ہوئے تو اس لڑکی سے کہا کہ میں تجھے قسم دیتا ہوں کہ تو مجھے بتا کہ تجھے یہ مقام کیسے حاصل ہوا؟ جس کے جواب میں اس لڑکی نے کہا

  • بِکَثْرَۃِ الصَّلٰوۃِعَلٰی مَنْ کَانَ اِذَا مَشٰی فِی الْبَرِّ الْاَقْفَرِتَعَلَّقَتِ الْوُحُوْشُ بِاَذْیَالِہٖؐ
  • کہ یہ مقام مجھے اس شخصیت کبریٰ پر کثرت کے ساتھ درود پڑھنے کی وجہ سے حاصل ہوا ہے کہ جب آپ جنگل میں سے گزرتے تو وحشی جانور تک آپ اکے دامن خیروبرکت سے لپٹ جاتے۔ فحلف یمینا ان یولف کتابا فی الصلوٰۃ علی النبیؐآپ نے حلف اور قسم اٹھائی کہ وہ اب درود پاک پر ایک کتاب تحریر کریں گے۔ تب آپ نے دلائل الخیرات لکھی جس کے درود کے تمام الفا ظ کو اختصار کے لئے اسنادوں کو حذف کرکے احادیث سے جمع کیا پھر آپ نے اس لڑکی سے وہ صیغہ درود بھی حاصل کیا جس کا وہ ورد کیا کرتی تھی دلائل الخیرات شریف کی ساتویں حزب میں وہ درود پاک بھی موجود ہے جس کو آپ نے اس لڑکی سے حاصل کیا تھا۔ اسے صلوٰۃ البئر(بئر عربی میں کنویں کو کہتے ہیں) کے نام سے یاد کیا جاتا ہے[1]۔
  • دلائل الخیرات کے 425سالہ پرانہ نسخہ آج بھی کراچی میں زیارت کیلئے موجود ہے۔

کنویں والادرود پاک[ترمیم]

اللھم صل علی سیدنا و مولانا محمد و علی آل سیدنا و مولانا محمد صلوٰۃ دائمۃ مقبولۃ تودی بہا عنا حقہ العظیم دلائل الخیرات شریف وہ عظیم کتاب ہے جو دنیا کے کونے کونے میں پڑھی جاتی ہے۔ تمام معروف سلاسل طریقت کے شیوخ خود بھی اس کا ورد کرتے ہیں اور اپنے مریدین کو بھی پڑھنے کی تلقین کرتے ہیں ۔بارگاہ نبوی امیں اس وظیفہ درود و سلام کی قبولیت کا اندازا اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ سرکار مدینہانے بعض خوش بختوں کو اس کتاب کی خود اجازت فرمائی۔جیسے محمد مغربی تلمسانی اور محمد اندلسی[2] حضرت سیدی الصدیق الفلالی امی ولی اﷲہو گزرے ہیں۔ آپ کو مکمل دلائل الخیرات حفظ تھی اور فرمایا کرتے تھے کہ ان النبی صلی اﷲ علیہ وآلہ وسلم علمہ ایاہ مناما رسول اﷲانے انہیں خواب میں دلائل الخیرات شریف پڑھائی تھی یہ وہ عظیم کتاب ہے کہ جس کے ذریعے لوگوں کو برکت اور نور نصیب ہوتا ہے۔ کشف الظنون میں ہے ( و ہذا الکتاب آیۃ من آیات اﷲ فی الصلاۃ علی النبی علیہ الصلاۃ والسلام ) یہ کتاب حضور نبی کریم کی بارگاہ میں درود و سلام پر مشتمل ہے اور اللہ کی نشانیوں میں سے ایک نشانی ہے مشرق و مغرب اور خاص طور پر بلاد روم میں باقاعدگی سے پڑھی جاتی ہے[3]۔

  • حضرت علامہ مہدی الفاسی فرماتے ہیں کہ نبی اکرم اکی ذات گرامی پر کثرت درود شریف پیش کرنے کی وجہ سے آپ کی قبر مبارکہ سے کستوری کی خوشبو آتی ہے۔ شہر مراکش کے قدیم حصے میں آپ کا مزار مبارک مشہور و معروف ہے اور لوگ دور دور سے آپ کے مزار مبارک کی زیارت کے لئے حاضر ہوتے ہیں اور مراکش کے ساتھ مشہور و اہم اولیائے کرام میں آپ کا شمار ہوتا ہے۔

دلائل الخیرات کی شروحات[ترمیم]

  • (1)مطالع المسبرات، بجلاء دلائل الخیرات محمد المہدی بن أحمد بن علی بن یوسف الفاسی
  • (2)استجلاب المسرات فی شرح دلائل الخیرات الفاضل الازمیری۔
  • (3)بہجۃ المسرات بکشف دلائل الخیرات - تألیف حسن العلوی لبکری
  • (4) تفریج الکرب والمہمات بشرح دلائل الخیرات - للشیخ عبد المعطی بن سالم بن عمر بن الشبلی السملاوی الأزہری المصری
  • (5) منبع السعادات شرح دلائل الخیرات - تألیف محمد الشہیر
  • (6)تیسیر الدلالات لشرح دلائل الخیرات - تألیف محمد شاکر بن صنع اللہ الأنقروی الرومی
  • (7)منتج البرکات علی دلائل الخیرات - للریحانی محمد ابن إسماعیل الرومی
  • (8).المنح الإلہیات فی شرح دلائل الخیرات - لسلیمان ابن عمر المعروف بالجمل[4]

دلائل الخیرات کی ترتیب[ترمیم]

دلائل الخیرات اس طریقہ سے ترتیب دی گئی ہے:

  • (1) دیباچہ
  • (2) وجۂ تالیف
  • (3) ایک فصل ، فضائل درود شریف میں(فصل فی فضل صلوۃ علی النبی )
  • (4) رسول کریم اکے اسماءِ مبارکہ(اسماء النبی)
  • (5) روضۂ مطہرہ کے بارے میں (صفۃ الروضۃ المبارکہ)
  • (6) دعاء بعد اسمائے شریفہ
  • (7) حزب اول ( یہ فصل نبی اکرم کی ذات اقدس پر درود بھیجنے کی کیفیت کے بیان میں ہے)
  • (8) حزب دوم
  • (9) حزب سوم
  • (10) حزب چہارم
  • (11) حزب پنجم
  • (12) حزب ششم
  • (13) حزب ہفتم

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. یوسف النبہانی-جامع کرامات الاولیاء - ج1 ص 165-166
  2. الدلالات الواضحات نبہانی
  3. کشف الظنون از حاجی خلیفہ
  4. ایضاح المکنون اسماعیل بن محمد البابانی