سنیل جوشی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
سنیل جوشی
جوشی 2013ء میں
ذاتی معلومات
مکمل نامسنیل بنداچاریہ جوشی
پیدائش6 جون 1970ء (عمر 53 سال)
گدگ، کرناٹک، بھارت
بلے بازیبائیں ہاتھ کا بلے باز
گیند بازیبائیں ہاتھ کا اسپن گیند باز
حیثیتآل راؤنڈر
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
پہلا ٹیسٹ (کیپ 202)6 جون 1996  بمقابلہ  انگلینڈ
آخری ٹیسٹ25 نومبر 2000  بمقابلہ  زمبابوے
پہلا ایک روزہ (کیپ 98)1 ستمبر 1996  بمقابلہ  زمبابوے
آخری ایک روزہ28 مارچ 2001  بمقابلہ  آسٹریلیا
ملکی کرکٹ
عرصہٹیمیں
1992–2011کرناٹک
2008رائل چیلنجرز بنگلور
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ ایک روزہ فرسٹ کلاس لسٹ اے
میچ 15 69 160 163
رنز بنائے 352 584 5,129 1,729
بیٹنگ اوسط 20.70 17.17 26.71 19.64
100s/50s 0/1 0/1 4/26 0/5
ٹاپ اسکور 92 61* 118 64
گیندیں کرائیں 3,451 3386 38,251 8,164
وکٹ 41 69 615 192
بالنگ اوسط 35.85 36.36 25.12 29.13
اننگز میں 5 وکٹ 1 1 31 2
میچ میں 10 وکٹ 0 0 5 0
بہترین بولنگ 5/142 5/6 7/29 5/6
کیچ/سٹمپ 7/– 19/– 88/– 46/–
ماخذ: ای ایس پی این کرک انفو، 30 نومبر 2015

سنیل بنداچاریہ جوشی (پیدائش: 6 جون 1970ء) ایک سابق بھارتی کرکٹ کھلاڑی اور بھارت کی قومی کرکٹ ٹیم کے موجودہ سلیکٹر ہیں۔ وہ ایک آل راؤنڈر کے طور پر کھیلے جس نے بائیں ہاتھ سے اسپن کی رفتار سلو کی اور بائیں ہاتھ سے بلے بازی کی۔ سنیل جوشی کو 4 مارچ 2020ء کو بھارتی قومی ٹیم کا چیف سلیکٹر مقرر کیا گیا تھا۔

ابتدائی زندگی[ترمیم]

جوشی ایک ہندو خاندان میں پیدا ہوئے [1] 6 جون 1970ء کو گدگ ، کرناٹک ، بھارت میں۔ وہ 40 میل (64 کلومیٹر) پریکٹس کے لیے ہر صبح ہبلی جاتے تھے اور پھر اسکول کے لیے وقت پر اپنے آبائی شہر گدگ واپس آتے تھے۔ کرکٹ کے لیے ان کی خواہش اور جنون بھی یہی تھا۔

مقامی کیریئر[ترمیم]

ریاستی سطح پر اس نے اپنے پورے کیریئر میں کرناٹک کے لیے کھیلا۔ رنجی ٹرافی کے 1995-96ء کے سیزن میں اس نے 500 رنز بنانے اور 50 وکٹیں حاصل کرنے کا شاندار دوہرا حاصل کیا۔ انھوں نے 2004ء کے سیزن کے دوران انگلینڈ میں بیڈفورڈ شائر کاؤنٹی کرکٹ کلب کے لیے بھی مختصر طور پر کھیلا۔ جوشی نے انڈین پریمیئر لیگ کے 2008ء اور 2009ء کے سیزن میں رائل چیلنجرز بنگلور کی نمائندگی کی اور 2010ء تک ان کا معاہدہ تھا۔ 21 جون 2012ء کو جوشی نے باضابطہ طور پر بین الاقوامی اور اول درجہ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا۔ [2]

بین الاقوامی کیریئر[ترمیم]

جوشی نے 1996ء اور 2001ء کے درمیان ہندوستان کے لیے ٹیسٹ اور ایک روزہ بین الاقوامی دونوں کرکٹ کھیلی۔ ٹیم میں ان کا معمول کا کردار نچلے آرڈر سے رنز فراہم کرنا اور انیل کمبلے کی طرح کی حمایت کرنے کے لیے ثانوی اسپن بولر کے طور پر کام کرنا تھا۔ اس عرصے کے دوران قومی ٹیم میں ریگولر ہونے کے باوجود انھیں 1999 کے کرکٹ ورلڈ کپ کے لیے منتخب نہیں کیا گیا۔  ہندوستان کے لیے ان کی سب سے مشہور باؤلنگ کارکردگی 1999ء میں ایل جی کپ میں جنوبی افریقہ کے خلاف ون ڈے میچ میں سامنے آئی۔ اس نے 10–6–6–5 کے اعداد و شمار واپس کیے اور اس میچ میں ہندوستان کو فتح دلانے میں مدد کی۔ [3] تین سال بعد، اس کارکردگی کو وزڈن 100 میں اس تاریخ تک ساتویں بہترین ون ڈے بولنگ پرفارمنس کے طور پر درجہ دیا گیا۔[حوالہ درکار]

کوچنگ کیریئر[ترمیم]

جوشی نے کرکٹ کوچ کا عہدہ سنبھال لیا ہے۔ انھوں نے حیدرآباد کرکٹ ٹیم کی کوچنگ کی ہے [4] اور حال ہی میں جموں و کشمیر کرکٹ ٹیم کے کوچ ہیں۔ [5] یہاں تک کہ جوشی نے 2014/15ء میں رنجی ٹرافی کے ابتدائی راؤنڈز میں رانجی دیو ممبئی کرکٹ ٹیم کو شکست دے کر J&K کے ساتھ ابتدائی کامیابی کا مزہ چکھایا۔ اس سے پہلے، انھوں نے پلیٹ سے کوچ کے طور پر اپنے پہلے سیزن میں سپر لیگ رانجی ٹرافی کوارٹر فائنل میں داخل ہونے کے لیے اپنی ٹیم کی کوچنگ کی۔ حیدرآباد کی ٹیم وجے ہزارے ٹرافی کے دوسرے راؤنڈ میں ہے۔ دسمبر 2015ء میں جوشی کو مارچ 2016ء میں بھارت میں کھیلے جانے والے آئی سی سی ورلڈ ٹی ٹوئنٹی سے قبل عمان کرکٹ ٹیم کا اسپن بولنگ کوچ نامزد کیا گیا ۔ جولائی 2016ء میں جوشی کو آسام کرکٹ ٹیم کے اگلے دو رنجی ٹرافی سیزن کے ہیڈ کوچ کے طور پر نامزد کیا گیا۔ انھوں نے اپنے ریاستی ساتھی سنتھ کمار کی جگہ آسام کرکٹ ٹیم کا ہیڈ کوچ مقرر کیا ہے۔ اگست 2017ء میں جوشی کو بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم کے اسپن بولنگ کنسلٹنٹ کے طور پر نامزد کیا گیا تھا۔ جولائی 2019ء میں، انھیں مختصر مدت کی بنیاد پر ریاستہائے متحدہ کی قومی کرکٹ ٹیم کا اسپن بولنگ کوچ مقرر کیا گیا۔ [6] انھیں کنگز الیون پنجاب کا اسپن بولنگ کوچ مقرر کیا گیا تھا۔ بورڈ آف کنٹرول فار کرکٹ ان انڈیا نے 4 مارچ 2020ء کو ہندوستان کے سابق اسپنر سنیل جوشی کو ہندوستانی مردوں کی کرکٹ ٹیم کا نیا چیف سلیکٹر مقرر کرنے کا اعلان کیا۔ [7]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Kanak Mani Dixit (11 September 2012)۔ The Southasian Sensibility: A Himal Reader۔ SAGE Publications۔ صفحہ: 176۔ ISBN 978-8132116974۔ اخذ شدہ بتاریخ 13 اگست 2012 
  2. Sunil Joshi to retire. Thehindu.com (19 June 2012). Retrieved on 2016-06-17.
  3. 2nd Match: India v South Africa at Nairobi (Gym), 26 September 1999 | Cricket Scorecard | ESPN Cricinfo. Cricinfo.com. Retrieved on 17 June 2016.
  4. Sunil Joshi appointed Hyderabad coach. Espncricinfo.com (3 October 2011). Retrieved on 2016-06-17.
  5. Joshi replaces Bedi as J&K coach. Espncricinfo.com. Retrieved on 17 June 2016.
  6. "USA Cricket Announces New National Team Coaching Structure"۔ USA Cricket۔ اخذ شدہ بتاریخ 13 جولا‎ئی 2019 
  7. "BCCI Appoints Sunil Joshi As New Chief Selector Of Indian Men's Cricket Team"۔ BCCI