شہرام سرمدی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
شہرام سرمدی
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1975 (عمر 43–44 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
پیشہ شاعر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر

شہرام سرمدی (پیدائش: 20 اکتوبر 1975ء) اردو زبان کے شاعر ہیں۔ شہرام تہران میں واقع بھارتی سفارت خانہ سے بھی منسلک ہیں۔[1]

نمونہ ٔ شاعری[ترمیم]

شہرام کا مشہور شعر یہ ہے:

بنام عشق اک احسان سا ابھی تک ہےوہ سادہ لوح ہمیں چاہتا ابھی تک ہے
بنام عشق اک احسان سا ابھی تک ہے وہ سادہ لوح ہمیں چاہتا ابھی تک ہے

مشہور غزل:

بدل جائے گا سب کچھ یہ تماشا بھی نہیں ہوگا نظر آئے گا وہ منظر جو سوچا بھی نہیں ہوگا
ہر اک لمحہ کسی شے کی کمی محسوس بھی ہوگیکہیں بھی دور تک کوئی خلا سا بھی نہیں ہوگا
وہ آنکھیں بھی نہیں ہوں گی کہیں جو ان کہی باتیں ہوا میں سبز آنچل کا وہ لہرا بھی نہیں ہوگا
سمٹ جائے گی دنیا ساعت امروز میں اک دن شمار زیست میں دیروز و فردا بھی نہیں ہوگا
مگر قد روز و شب کا دیکھ کر حیران سب ہوں گے مدار اپنا زمیں نے گرچہ بدلا بھی نہیں ہوگا
عجب ویرانیاں آباد ہوں گی قریہ در قریہ شجر شاخوں پہ چڑیوں کا بسیرا بھی نہیں ہوگا

مزید دیکھیے[ترمیم]

  • "Shahram Sarmadi - Profile & Biography - Rekhta"۔ ریختہ (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔