عظمت رانا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
عظمت رانا ٹیسٹ کیپ نمبر 85
Azmat rana.jpeg
ذاتی معلومات
پیدائش3 نومبر 1951(1951-11-03)
لاہور, پنجاب، پاکستان
وفات30 مئی 2015(2015-50-30) (عمر  63 سال)
لاہور, پنجاب، پاکستان
بلے بازیبائیں ہاتھ کا بلے باز
گیند بازیدائیں ہاتھ کا آف بریک باؤلر
تعلقاتشفقت رانا (بھائی)
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ ایک روزہ
میچ 1 2
رنز بنائے 49 42
بیٹنگ اوسط 49.00 42.00
100s/50s -/- -/-
ٹاپ اسکور 49 22*
گیندیں کرائیں - -
وکٹ - -
بولنگ اوسط - -
اننگز میں 5 وکٹ - -
میچ میں 10 وکٹ - n/a
بہترین بولنگ - -
کیچ/سٹمپ -/- -/-
ماخذ: [1]، 4 February 2006

عظمت رانا (پیدائش : 3 نومبر 1951ءلاہور،پنجاب)| وفات:30 مئی 2015ء) سابق پاکستانی کرکٹر ہیں جنہوں نے1980ء میں 2 ٹیسٹ اور 1 ایک روزہ میچز میں شرکت کی۔ وہ سیدھے ہاتھ کے بلے باز اور سیدھے ہاتھ سے ہی گیند کرنے والے آف بریک باولر تھے انہوں نے پاکستان کے ساتھ بہاولپور،مسلم کمرشل بینک،پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائنز اور پنجاب کی طرف سے کرکٹ کھیل چکے ہیں ان کے ایک بھائی شفقت رانا بھی ٹیسٹ کرکٹر تھے جبکہ ایک بھائی شکور رانا معروف ٹیسٹ ایمپائر تھے جن کا انگلش کپتان مائیک گیٹنگ کے ساتھ ایک قضیہ بہت مشہور ہوا تھا ان کے ایک بھائی سلطان رانا بھی فرسٹ کلاس کھیل چکے ہیں اور دو بھتیجوں مقصود رانا اور منصور رانا نے کرکٹ میں اپنے خاندان کی روایت کو اگے بڑھایا ہے۔

ٹیسٹ کرکٹ کیرئیر[ترمیم]

عظمت رانا 81-1980ء کی سیریز میں آسٹریلیا کے خلاف ہوم گراونڈ پر ٹیم کا حصہ بنایا گیا آسٹریلیا نے پہلے بیٹنگ لرتے ہوئے ایلن۔بارڈر کے 150 کپتان گریگ چیپل 56 اور جولین وائینر کے 53 کی بدولت 7 وکٹوں پر 407 رنز بنا کر اننگ ڈکلیئر کردی تھی۔ پاکستان کی طرف سے عمران خان نے 86 رنز دے کر 2 کھلاڑیوں کو اپنا نشانہ بنایا۔ اقبال قاسم نے 90 رنز دے کر 4 کھلاڑیوں کو آئوٹ کیا تھا۔ جواب میں پاکستان کی ٹیم نے بھی 9 کھلاڑیوں کے آئوٹ ہونے پر 420 رنز بنائے۔ ماجد خان 110، مدثر نذر 59، عمران خان 56 اور وسیم راجہ نے 55 رنز بنائے۔ رے برائٹ 172/5 اور ڈینس للی 114/3 کے ساتھ نمایاں بولر تھے۔ عظمت رانا نے اپنے پہلے ٹیسٹ کی پہلی اننگ میں 49 رنز بنائے۔ اس دوران انہوں نے 54 گیندوں کو 102 منٹ میں کھیلا اور 8 چوکے بھی رسید کئے۔

ون ڈے کیرئیر[ترمیم]

عظمت رانا نے 1978ء میں بھارت کے خلاف سیالکوٹ کے میدان پر اپنا پہلا ایک روزہ میچ کھیلا جس میں انہوں 22 ناٹ آوٹ بنائے جبکہ اسی سیریز کے دوسرے میچ میں ساہیوال کے مقام ان کا سکور 20 رہا یہ عظمت رانا کا آخری ون ڈے میچ بھی تھا۔

اعداد و شمار[ترمیم]

عظمت رانا نے ایک ٹیسٹ میں ایک اننگ کھیل کر 49 رنز کا مجموعہ ترتیب دیا انہیں 49.00 کی اوسط حاصل ہوئی اس طرح عظمت رانا نے 2 ایک روزہ میچز کی 2 اننگز میں ایک مرتبہ ناٹ آئوٹ رہ کر 42 رنز سکور کئے 22 باقابل شکست رنز ان کا اس طرز کرکٹ میں سب سے زیادہ انفرادی سکور بھی تھا انہیں 42.00 کی اوسط حاصل ہوئی جبکہ 94 فرسٹ کلاس میچوں کی 144 اننگز میں 18 مرتبہ بغیر آئوٹ ہوئے عظمت رانا نے 6001 رنز 37.51 کی اوسط سے بنائے۔ 206 ناقابل شکست رنز ان کا کسی ایک اننگ کا سب سے زیادہ سکور تھا۔ 16 سنچریاں اور 30 نصف سنچریاں اور 76 کیچز بھی اس طرز کرکٹ میں اس کے ریکارڈ میں شامل ہیں۔

حوالہ جات[ترمیم]