عظیم وحدتی دور

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

طبیعی  علم الکائنات  میں  قدرت کو عظیم  یکجائی نظریئے  سے قیاس کرتے ہوئے عظیم وحدتی دور کائنات کی ابتدا میں ایک ایسا دور ہے جو پلانک دور کے بعد بگ بینگ کے  لگ بھگ پہلے  10 کی قوّت نما -43 سیکنڈ میں  شروع ہوا، جس میں درجہ حرارت  عظیم یکجائی نظریوں  کے مطابق بیان کردہ درجہ حرارت کے مماثل ہے۔ اگر عظیم یکجا توانائی کو 10 کی قوّت نما 15 GeV لیا جائے  تو  درجہ حرارت ١٠ کی قوّت نما ٢٧ کیلون  سے زیادہ آتا ہے۔ اس دور کے دوران  چار میں سے تین  بنیادی قوّتیں  - برقی مقناطیسی قوّت، مضبوط نیوکلیائی قوّت اورکمزور نیوکلیائی قوّت  - بطور برقی نیوکلیائی قوّت کے متحد تھیں۔ قوّت ثقل  برقی نیوکلیائی قوّت سے الگ ہوچکی تھی، طبیعیاتی خصائص جیسا کہ کمیت، بار، ذائقہ اور رنگی بار  بے معنی  تھے۔

عظیم وحدتی دور  کا خاتمہ تقریباً بگ بینگ کے پہلے سیکنڈ کے 10 کی قوّت نما -36 حصّے کے بعد ہو گیا تھا۔ اس وقت  تک کئی اہم واقعات وقوع پزیر ہوچکے تھے۔ مضبوط قوّت  بنیادی قوّتوں سے الگ ہوچکی تھی۔ درجہ حرارت اس حد فاصل سے گر گیا تھا جس میں ایکس اور وائی بوسون تخلیق ہوسکتے تھے  جبکہ باقی ایکس اور وائی بوسون انحطاط پزیر ہو گئے تھے۔ یہ ممکن ہے کہ اس انحطاطی عمل نے  بقائے باریون اعداد کی خلاف ورزی کی ہو اور مادّہ کی تعداد کو ضد مادّے کی تعداد سے تھوڑا زیادہ بنا دیا ہو (مزید دیکھیے باریونی تالیف)۔ یہ قیاس بھی کیا جاتا ہے کہ اس عبوری مرحلے نے کونیاتی افراط کو شروع کیا ہوگا جس نے افراطی دور کے اختتام پر کائنات کے ارتقا میں اپنا تسلط قائم کیا تھا۔  

مزید دیکھیے [ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  • آل ڈے، جوناتھن (2001ء)۔ کوارک، لیپٹون اور بگ بینگ۔ انسٹی ٹیوٹ آف فزکس پبلشنگ۔ISBN 0-7503-0806-0.