میری الزبتھ بریڈن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
میری الزبتھ بریڈن
 

معلومات شخصیت
پیدائش 4 اکتوبر 1835ء[1][2][3][4]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لندن[5][4][6]  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 4 فروری 1915ء (80 سال)[7][1][2][3][4][8]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رچمنڈ[4]  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت متحدہ مملکت برطانیہ عظمی و آئر لینڈ
مملکت متحدہ[9]  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شریک حیات جان میکسویل  ویکی ڈیٹا پر (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ مصنفہ[10][9]،  ناول نگار،  ڈراما نگار،  مدیرہ[4]،  ادکارہ  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[11][12][13]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  ویکی ڈیٹا پر (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

میری الزبتھ بریڈن (انگریزی: Mary Elizabeth Braddon) (4 اکتوبر 1835 – 4 فروری 1915) وکٹوریائی دور کی ایک انگریز مقبول ناول نگار تھی۔ [14] وہ اپنے 1862ء کے سنسنی خیز ناول لیڈی آڈلی سیکریٹ کے لیے مشہور ہیں، جسے کئی بار ڈرامائی اور فلمایا بھی گیا ہے۔

سوانح عمری[ترمیم]

سوہو، لندن میں پیدا ہوئی، میری الزبتھ بریڈن نجی طور پر تعلیم یافتہ تھیں۔ اس کی والدہ فینی نے اپنے والد ہنری سے 1840ء میں اس کی بے وفائیوں کی وجہ سے علیحدگی اختیار کر لی، جب میری الزبتھ بریڈن پانچ سال کی تھیں۔ جب میری الزبتھ بریڈن دس سال کی تھی، اس کا بھائی ایڈورڈ بریڈن ہندوستان کمپنی راج اور بعد میں آسٹریلیا چلا گیا، جہاں وہ تسمانیا کا پریمیئر بن گیا۔ میری الزبتھ بریڈن نے تین سال تک بطور اداکارہ کام کیا، جب اس کی دوستی کلارا اور ایڈیلیڈ بڈل سے ہوئی۔ وہ صرف معمولی کردار ادا کر رہے تھے، لیکن میری الزبتھ بریڈن اپنی اور اپنی ماں کی کفالت کرنے کے قابل تھی۔ ایڈیلیڈ نے نوٹ کیا کہ میری الزبتھ بریڈن کی اداکاری میں دلچسپی ختم ہو گئی جب اس نے ناول لکھنا شروع کیا۔ [15]

میری الزبتھ بریڈن اپریل 1861ء میں رسالوں کے ناشر جان میکسویل (1824ء-1895ء) سے ملاقات ہوئی اور 1861ء میں اس کے ساتھ چلی گئی۔ تاہم میکسویل نے پہلے ہی میری این کرولی سے شادی کی تھی، جن سے اس کے پانچ بچے تھے۔ جب میکسویل اور میری الزبتھ بریڈن میاں بیوی کے طور پر رہ رہے تھے، کرولی اپنے خاندان کے ساتھ رہ رہی تھی۔ 1864ء میں میکسویل نے اخبارات کو یہ بتا کر اپنے تعلقات کو جائز بنانے کی کوشش کی کہ وہ قانونی طور پر شادی شدہ ہیں۔ "تاہم، رچرڈ برنسلے نولز نے ان کاغذات کو لکھا، انھیں مطلع کیا کہ ان کی بھابھی اور میکسویل کی سچی بیوی اب بھی زندہ ہے، اس طرح میری الزبتھ بریڈن کی 'بیوی' کی حیثیت کو سامنے لایا گیا ہے"۔ [16] میری الزبتھ بریڈن نے 1874ء تک اپنے بچوں کی سوتیلی ماں کے طور پر کام کیا، جب میکسویل کی بیوی کا انتقال ہو گیا اور وہ فلیٹ اسٹریٹ کے سینٹ برائیڈ چرچ میں شادی کرنے میں کامیاب ہو گئے۔ میری الزبتھ بریڈن کے چھ بچے تھے: جیرالڈ، فینی، فرانسس، ولیم، وینفریڈ روزالی اور ایڈورڈ ہیری ہیرنگٹن۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb11893737j — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — مصنف: فرانس کا قومی کتب خانہ — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  2. ^ ا ب فائنڈ اے گریو میموریل شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/memorial/6884176 — بنام: Mary Elizabeth Braddon — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  3. ^ ا ب Internet Speculative Fiction Database author ID: https://www.isfdb.org/cgi-bin/ea.cgi?78925 — بنام: Mary Elizabeth Braddon — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  4. ^ ا ب پ ت ٹ https://www.wechanged.ugent.be/wechanged-database/
  5. عنوان : Braddon, Mary Elizabeth — شائع شدہ از: دائرۃ المعارف بریطانیکا 1911ء
  6. https://www.wechanged.ugent.be/wechanged-database/ — عنوان : Браддон, Мэри-Елисавета
  7. ربط : https://d-nb.info/gnd/118659731  — اخذ شدہ بتاریخ: 28 اپریل 2014 — اجازت نامہ: CC0
  8. https://www.wechanged.ugent.be/wechanged-database/ — عنوان : A Historical Dictionary of British Women — اشاعت دوم — ناشر: روٹلیجISBN 978-1-85743-228-2
  9. ^ ا ب جی این ڈی آئی ڈی: https://d-nb.info/gnd/118659731 — اخذ شدہ بتاریخ: 28 جولا‎ئی 2022
  10. مکمل کام یہاں دستیاب ہے: https://www.bartleby.com/lit-hub/library — عنوان : Library of the World's Best Literature
  11. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb11893737j — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — مصنف: فرانس کا قومی کتب خانہ — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  12. این کے سی آر - اے یو ٹی شناخت کنندہ: https://aleph.nkp.cz/F/?func=find-c&local_base=aut&ccl_term=ica=jn20020102050 — اخذ شدہ بتاریخ: 1 مارچ 2022
  13. کونر آئی ڈی: https://plus.cobiss.net/cobiss/si/sl/conor/183795299
  14. لوا خطا ماڈیول:Citation/CS1/Utilities میں 38 سطر پر: bad argument #1 to 'ipairs' (table expected, got nil)۔
  15. Kay Boardman، Shirley Jones (2004)۔ Popular Victorian Women Writers۔ Manchester University Press۔ صفحہ: 189–190۔ ISBN 978-0-7190-6450-0 
  16. "Biography"۔ Mary Elizabeth Braddon (بزبان انگریزی)۔ 2014-07-02۔ اخذ شدہ بتاریخ 05 اگست 2022