مندرجات کا رخ کریں

نیلوفر گورسوئے

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
نیلوفر گورسوئے
(ترکی میں: Nilüfer Bayar Gürsoy ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
 

معلومات شخصیت
پیدائش 1 جون 1921ء   ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بورصہ   ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 1 جولا‎ئی 2024ء (103 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
استنبول   ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت ترکیہ   ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد جلال بایار   ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مناصب
رکن قومی اسمبلی ترکیہ   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
برسر عہدہ
10 اکتوبر 1965  – 2 اکتوبر 1969 
رکن قومی اسمبلی ترکیہ   ویکی ڈیٹا پر (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
برسر عہدہ
14 اکتوبر 1973  – 12 ستمبر 1980 
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان   ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان ترکی   ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان ترکی ،  فرانسیسی ،  انگریزی ،  لاطینی زبان ،  قدیم یونانی   ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

نیلوفر گورسوئے (پیدائش: 1 جون 1921ء- 2 جولائی 2024ء[1])، ایک ترک خاتون ماہر فلکیات، سیاست دان اور یادداشت کی ماہر ہیں۔ انھوں نے 1965ء سے 1969ء اور 1973ء سے 1980ء تک پارلیمنٹ میں خدمات انجام دیں۔ وہ ترکی کے تیسرے صدر جلال بایار کی بیٹی تھیں۔[2]

تعلیم اور علمی زندگی[ترمیم]

نیلوفر بیار نے اپنی ابتدائی تعلیم گھر پر ہی حاصل کی۔ اس کے بعد اس نے اپنی سیکنڈری اور ہائی اسکول کی تعلیم کے لیے معارف کولیجی (بعد میں ٹی ای ڈی انقرہ کالج) میں تعلیم حاصل کی، 1939ء میں گریجویشن کیا۔ اسی سال، اس نے استنبول یونیورسٹی میں فلسفہ کی مزید تعلیم حاصل کی۔ ایک سال کے بعد اس نے اپنے خاندان کے انقرہ منتقل ہونے کی وجہ سے انقرہ یونیورسٹی کے اسکول آف لینگوئج اینڈ ہسٹری – جغرافیہ میں داخلہ لیا اور کلاسیکی فلولوجی کا مطالعہ کیا۔ اپنی گریجویشن کے بعد وہ 1949ء میں قدیم یونانی زبان کے شعبہ میں اسسٹنٹ مقرر ہوئیں۔ اس نے ڈاکٹریٹ تھیسس " یوریپائڈز کے سیاسی نظریات" پر کام کیا اور 1954ء میں ڈاکٹر آف فلالوجی کی ڈگری حاصل کی۔ اسے 1960ء کی بغاوت کے بعد یونیورسٹی سے برخاست کر دیا گیا تھا جب اس کے والد صدر سیلال بیار اور اس کے شوہر احمد احسان گورسوئے، ڈیموکریٹ پارٹی سے تعلق رکھنے والے کوتاہیا کے نائب، کئی دوسرے سرکاری اہلکاروں اور سیاست دانوں کے ساتھ مل کر جنتا نے گرفتار کر لیے تھے۔ , اور استنبول کے ساحل پر واقع ایک چھوٹے سے جزیرے یاسادا کو سپریم کورٹ آف جسٹس کے سامنے مقدمہ چلانے کے لیے بھیجا گیا۔ اس کی ملازمت اس وقت ختم کر دی گئی جب وہ ایسوسی ایٹ پروفیسر بننے کی تیاری کر رہی تھیں۔ بعد میں اس نے یونیورسٹی کے خلاف مقدمہ دائر کر دیا۔ مقدمہ جیتنے کے باوجود وہ تعلیمی زندگی میں واپس نہیں آئی۔[3]

سیاست دان کیریئر[ترمیم]

اس نے اپنے فعال سیاسی کیریئر کا آغاز 1961ء میں قائم جسٹس پارٹیمیں شمولیت سے کیا، ڈیموکریٹ پارٹی کی اولاد جس پر 1960ء کی بغاوت کے بعد پابندی لگا دی گئی تھی۔ وہ 1965ء کے عام انتخابات میں جسٹس پارٹی سے برسا کے نائب کے لیے انتخاب لڑیں اور 1969ء تک 13ویں پارلیمنٹ میں خدمات انجام دیتے ہوئے ترکی کی گرینڈ نیشنل اسمبلی میں داخل ہوئیں۔[4]

ذاتی زندگی[ترمیم]

نیلوفر گورسوئے جون 1921ء کو بورصہ میں پیدا ہوئیں۔[5] اس کے دو بھائی تھے، ریفی اور ترگت۔ اس کے والد اتاترک کے ساتھی تھے۔[4][5][6] اس نے معالج اور سیاست دان احمد احسان گورسوئے سے شادی کی اور ان کی 3 بیٹیاں تھیں جو سبھی ماہر تعلیم بن گئیں۔ گورسوئے استنبول کے ضلع کڈیکوئی میں رہتی ہے۔ وہ سیلال بیار فاؤنڈیشن کی چیئرپرسن کے طور پر کام کرتی ہیں۔ 2015ء میں اس نے 20,000 کے قریب کتابوں کا ایک مجموعہ عطیہ کیا جس میں ان کے والد کی کتابیں بھی شامل تھیں، استنبول میں کڈیکوئی میونسپلٹی کی لائبریری آف ہسٹری، لٹریچر اور آرٹس کو عطیہ کیں۔

وفات[ترمیم]

گورسوئے کا انتقال 2 جولائی 2024 کو 103 سال کی عمر میں ہوا۔[7][8]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. https://ankahaber.net/haber/detay/celal_bayarin_kizi_eski_adalet_partisi_milletvekili_nilufer_gursoy_hayatini_kaybetti_186082  مفقود أو فارغ |title= (معاونت)
  2. https://translex.ege.edu.tr/tr-6521/nilufer_gursoy.html  مفقود أو فارغ |title= (معاونت)
  3. ^ ا ب
  4. ^ ا ب
  5. Celal Bayar’ın kızı, eski Adalet Partisi Milletvekili Nilüfer Gürsoy hayatını kaybetti
  6. https://www.sozcu.com.tr/celal-bayar-in-kizi-nilufer-gursoy-hayatini-kaybetti-p62688  مفقود أو فارغ |title= (معاونت)