یان ہوئی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
یان ہوئی
Half Portraits of the Great Sage and Virtuous Men of Old - Yan Hui Ziyuan (顏回 子淵).jpg 

معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 521 ق م  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
کائی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
تاریخ وفات سنہ 490 ق م  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
شہریت ریاست لو  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
والد یان وویو  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں والد (P22) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
استاذ کنفیوشس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں استاد (P1066) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ فلسفی[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر

یان ہوئی (ت 521–481 ق م) کنفیوشس کے محبوب شاگردوں میں سے ایک تھے۔ وہ کنفیوشس مت کی قابل احترام شخصیات میں سے ایک ہیں۔ کنفیوشسی معبدوں میں انہیں چار حکما میں سے ایک کے طور پر پوجا جاتا ہے۔

سوانح[ترمیم]

یان ہوئی کا تعلق ریاست لو سے تھا۔ ان کے والد یان یووو (یان لو) کنفیوشس کے ابتدائی شاگردوں میں سے تھے۔[2] یان ہوئی عمر میں کنفیوشس سے اغلباً 30 سال چھوٹے تھے اور کم عمری میں استاد کے شاگرد بنے۔[3]

یان ہوئی کنفیوشس کے محبوب شاگرد تھے۔[4] کنفیوشس کا مشاہدہ تھا کہ”یان ہوئی جب سے مجھے ملا ہے، شاگردین میرے قریب آتے گئے۔“[3][5][6] ہمیں ایک مرتبہ بتایا گیا، جب وہ یان ہوئی، زیلو اور زی گونگ کے ہمراہ نانگ پہاڑی پر موجود تھے، کنفیوشس نے اُن سب سے پوچھا کہ اپنے مختلف نصب العین بتائیں اور وہ ان میں سے کسی کو منتخب کرنا چاہتے ہیں۔ زیلو نے آغاز کیا اور جب انہوں نے مکمل کر لیا تو استاد نے کہا، ”یہ تمہاری بہادری کی نشانی ہے۔“ زی گونگ کی باری آئی اور ان کے لیے استاد نے فرمایا، ”یہ تمہاری ذی شعور خطابت کی دلالت ہےـ“ آخر میں یان ہوئی کی باری آئی اور یان نے کہا، ”میں ایک عاقل بادشاہ اور حکیم حکمران کو تلاش کرنا چاہوں گا جس کا میں ساتھ دے سکتا ہوں۔۔۔۔۔۔۔۔“ استاد نے اقرار کرتے ہوئے کہا، ”کیا زبردست نیکی ہے!“[7]

وفات[ترمیم]

جب یان ہوئی انتیس برس کے تھے تو ان کے تمام بال سفید ہو گئے۔ وہ کم عمری میں انتقال کر گئے۔[7]

یان ہوئی کی وفات کے بعد، کنفیوشس نے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے فرمایا، ”بہشت مجھے محروم کر چکی ہے! بہشت مجھے محروم کر چکی ہے!“۔ جب دیگر شاگردوں نے پوچھا کہ کنفیوشس ”حد سے زیادہ غم“ کیوں کر رہے ہیں، تو انہوں نے جواب دیا: ”کیا میں حد سے زیادہ غم کا اظہار کر رہا ہوں، اگر میں اس آدمی کے لیے غم نہ کروں تو بھلا کس کے لیے کروں؟“۔ [8] حتیٰ کہ کئی سالوں بعد بھی کنفیوشس کہتے رہے کہ کوئی بھی شاگرد یان ہوئی کی جگہ نہیں لے سکتا۔[9]

مزارات[ترمیم]

فوشینگ ہال، قوفو میں معبد یان ہوئی کی کلیدی جائے حرمت

یان ہوئی قوفو میں واقع معبد یان ہوئی میں پوجے جاتے ہیں۔

یان ہوئی کے مقبرے کے اردگرد کئی ان کی نسل کی سو قبور ہیں، جو یان خاندانی قبرستان کہلاتا ہے۔ مقبرہ اچھی طرح محفوظ ہے۔[10]

حوالہ جات[ترمیم]

ملاحظات[ترمیم]

  1. اجازت نامہ: CC0
  2. Confucius 1997، صفحہ۔ 201.
  3. ^ ا ب Chin 2007، صفحہ۔ 75.
  4. Confucius & Slingerland 2003، صفحہ۔ 11
  5. "Kongzi Jiayu"۔ Ctext۔
  6. "Shiji"۔ Ctext۔
  7. ^ ا ب Confucius & Legge، صفحہ۔ 113
  8. Confucius & Slingerland 2003، صفحہ۔ 114
  9. Chin 2007، صفحہ۔ 74
  10. "A Regular Report on the Implementation of the Convention Concerning the Protection of World Cultural and Natural Heritage. Part II: Preservation Status of the Specific World Heritage. Treaty signatory state: The People's Republic of China. Name of property: Confucius Temple, Confucius Forest and Confucius Mansion in Qufu" (PDF)۔ Whc.unesco.org۔ صفحہ 63۔ اخذ شدہ بتاریخ 2016-05-20۔

کتابیات[ترمیم]