آلو مہار

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مزار آلو مہار

آلومہار شریف سرزمین اولیاء ڈسکہ سے سیالکوٹ جاتے ہوئے چارپانچ میل کے فاصلے پر لہلہاتے کھیتوں کے درمیان واقع ہے جس کے ساتھ ہی مشہورنہر موترہ ہے اسی نہر کی وجہ سے اڈا موترہ ہے،بھیلو مہار اڈا پر اتر کر آلو مہار شریف جانا پڑتا ہے مغربی جانب نہر لوئر چناب واقع ہے یہ جگہ مشائخ آلو مہار کی وجہ سے شہرت رکھتی ہے ان مشائخ سید محمد جیون شاہ، سید محمد چنن شاہ نوری، سید محمد حسین شاہ اور سید فیض الحسن شاہ کے مزارات جنوب مغربی کونے میں واقع ہیں [1] وجہٴ تسمیہ یہ ہے کہ مہارجٹ برادری کی ایک ذات کا نام ہے، جبکہ آلو، واضح رہے کہ یہ آلو سبزی کے وزن پر نہیں بولا جاتا، بلکہ لو لگنے والی لو کے وزن پر آلو ہے، آلو اور بھیلو مہار ذات کے دو بھائی تھے جن کہ ناموں پر یہ دو گاؤں آلو مہار اور بھیلو مہار بسے ہوئے ہیں۔ ان دونوں گاؤں میں اب بھی زیادہ تر مہار ذات کے لوگ آباد ہیں۔ دونوں گاؤں ایک دوسرے کے آمنے سامنے سڑک کے دونوں طرف آباد ہیں۔ آلو مہار کو شریف وہاں ایک مشہور بزرگ " پیر فیض الحسن شاہ قادری "کے مزار کی وجہ سے کہا جاتا ہے۔[2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. تذکرہ مشائخ آلو مہار شریف، سعید احمد مجددی، صفحہ: 363، مطبوعہ: تنظیم الاسلام پبلیکیشنز گوجرانوالہ
  2. وائٹ گولڈ؟ | صفحہ 2 | اردو محفل فورم