مندرجات کا رخ کریں

ابرار احمد (کرکٹ کھلاڑی)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
ابرار احمد ٹیسٹ کیپ نمبر 252
ذاتی معلومات
پیدائش (1998-10-16) 16 اکتوبر 1998 (عمر 25 برس)
بلے بازیدائیں ہاتھ کا بلے باز
گیند بازیلیگ بریک، گوگلی گیند باز
حیثیتگیند باز
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
پہلا ٹیسٹ (کیپ 252)9 دسمبر 2022  بمقابلہ  انگلینڈ
آخری ٹیسٹ2 جنوری 2023  بمقابلہ  نیوزی لینڈ
ملکی کرکٹ
عرصہٹیمیں
2017, 2019کراچی کنگز
2017کراچی وائٹس
2020–21سندھ
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ ٹوئنٹی20 فرسٹ کلاس
میچ 5 21 18
رنز بنائے 42 0 150
بیٹنگ اوسط 14.00 0 11.20
سنچریاں/ففٹیاں 0/0 0/0 0/0
ٹاپ اسکور 17 0 26
گیندیں کرائیں 1,431 474 5,402
وکٹیں 31 22 104
بولنگ اوسط 33.64 27.04 27.74
اننگز میں 5 وکٹ 2 0 6
میچ میں 10 وکٹ 1 0 3
بہترین بولنگ 7/114 3/14 7/114
کیچ/سٹمپ 1/– 4/– 10/–
ماخذ: ای ایس پی این کرک انفو، 9 فروری 2019ء

ابرار احمد (پیدائش:16 اکتوبر 1998ء) ایک پاکستانی کرکٹ کھلاڑی ہے۔ [1] جس نے 2017ء کی پاکستان سپر لیگ میں 10 فروری 2017ء کو کراچی کنگز کے لیے ٹوئنٹی 20 میں قدم رکھا تھا۔ اس نے اپنا اول درجہ ڈیبیو 20 نومبر 2020ء کو سندھ کے لیے 2020-21ء قائداعظم ٹرافی میں کیا۔ احمد کو دسمبر 2022 میں انگلستان کے خلاف ہوم سیریز کے لیے پاکستانی ٹیم میں بلایا گیا تھا۔ 9 دسمبر کو انھوں نے ملتان میں سیریز کے دوسرے ٹیسٹ میچ میں انگلستان کے خلاف اپنے ٹیسٹ کیریئر کا آغاز کیا، جہاں انھوں نے انگلینڈ کی پہلی اننگز میں 114 رنز کے عوض 7 اور دوسری میں 120 رنز کے عوض 4 وکٹیں لے کر اپنے پہلے ٹیسٹ میں 11 وکٹیں حاصل کیں۔[2][3][4]

ذاتی زندگی

[ترمیم]

ابرار احمد کراچی میں پیدا ہوئے وہ اپنے بہن بھائیوں میں سب سے چھوٹے ہیں چار بڑے بھائیوں میں ایک حافظ قرآن ہیں ، پورا قرآن حفظ کر چکے ہیں۔ان کا تعلق پشتون قبیلے سے ہے اور اس کا خاندان خیبر پختونخوا میں ضلع مانسہرہ کے مضافات میں واقع ایک چھوٹے سے گاؤں شنکیاری سے کراچی منتقل ہوا تھا۔ ابرار احمد کے والد کا تعلق شنکیاری سے ہے جبکہ ان کی والدہ لاہور سے تعلق رکھتی ہیں۔ ان کے والد ٹرانسپورٹ کا کام کرتے ہیں اور یہ فیملی کافی عرصے سے کراچی میں مقیم ہے۔ ابرار احمد کی پیدائش کراچی کی ہے انھوں نے کرکٹ اپنے علاقے جہانگیر روڈ کے گلی محلے کی ٹینس بال سے شروع کی۔

پہلے ٹیسٹ میں یادگار کھیل

[ترمیم]

آبرار احمد کو ایک ایسے وقت میں ٹیم۔کا حصہ بنایا گیا جب پاکستان انگلینڈ کے خلاف راولپنڈی کا پہلا ٹیسٹ آخری لمحات میں ہار گیا تھا اس لیے ساری نظریں سریز کے دوسرے ٹیسٹ پر جم گئی تھی جو ملتان میں تھا اس ٹیسٹ میں ابرار کو ٹیم کا حصہ بنایا گیا انھوں نے زیک کرولی کو بولڈ کرکے اپنی پہلی ٹیسٹ وکٹ حاصل کی جس کے لیے انھیں زیادہ انتظار نہیں کرنا پڑا انھوں نے اپنی گیندوں کا چادو جگانا جاری رکھا اور پہلے ہی دن انگلینڈ کی ٹیم کو تگنی کا ناچ نچایا اور 22 اوورز میں 114 رنز دے کر سات کھلاڑیوں کو پیویلین کی راہ دکھائی اس نے بین ڈکٹ،اولی پوپ،جو روٹ،بین اسٹوکس، ہیری بروک،اور ول جیکس کو کریز سے رخصت کیا۔ اس کی اس اعلی باولنگ سے انگلینڈ کی ٹیم 281 رنز پر محدود ہو گئی۔

مزید دیکھیے

[ترمیم]

حوالہ جات

[ترمیم]
  1. "Abrar Ahmed"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 10 فروری 2017 
  2. "Abrar Ahmed becomes Pakistan's Test cap no.252"۔ Pakistan Cricket Board۔ 10 January 2014۔ اخذ شدہ بتاریخ 09 دسمبر 2022 
  3. "Abrar Ahmed's 7-114 on Test debut helps Pakistan rein in England"۔ 9 December 2022 
  4. See England 2nd innings at https://sports.ndtv.com/cricket/pak-vs-eng-scorecard-live-cricket-score-england-in-pakistan-3-test-series-2022-2nd-test-pken12092022215941