الیگزنڈر گراہم بیل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
الیگزنڈر گراہم بیل
(انگریزی میں: Alexander Graham Bellخاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
Alexander Graham Bell.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائش 3 مارچ 1847[1][2][3][4][5]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
ایڈنبرگ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 2 اگست 1922 (75 سال)[6][2]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
وجۂ وفات ذیابیطس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وجۂ وفات (P509) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of the United Kingdom.svg مملکت متحدہ (1847–1882)
Flag of the United States.svg ریاستہائے متحدہ امریکا (1882–1922)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
رکن امریکن فلوسوفیکل سوسائٹی،قومی اکادمی برائے سائنس،امریکی اکادمی برائے سائنس و فنون،فی بیٹا کاپا سوسائٹی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں رکن (P463) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ ایڈنبرگ
یونیورسٹی کالج لندن  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ طبیعیات دان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[7]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر
ملازمت سمتھسونین انسٹی ٹیوشن  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں نوکری (P108) ویکی ڈیٹا پر
اعزازات
ایڈیسن میڈل (1914)
ہیگس میڈل (برائے:Invention of the telephone) (1913)
تمغا البرٹ (1902)
تمغا جون فریٹز  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وصول کردہ اعزازات (P166) ویکی ڈیٹا پر
دستخط
Alexander Graham Bell (signature).svg 
ویب سائٹ
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں آئی ایم ڈی  بی - آئی ڈی (P345) ویکی ڈیٹا پر

ٹیلے فون کا موجد۔ ایڈنبرا ’’ سکاٹ لینڈ ‘‘ میں پیدا ہوا۔ ایڈنبرا اور لندن میں تعلیم پائی۔ 1871ء میں بوسٹن امریکا آیا۔ اس کے والد اور دادا نے اپنی زندگی انسانی آواز کے مطالعے اور گونگے بہروں کی تعلیم کے لیے وقف کردی تھی۔ بیل نے بھی باپ دادا کا پیشہ اختیار کیا۔ اس کی شہرت اگرچہ ٹیلیفون کی وجہ سے ہوئی۔ مگر اس کا اپنا شوق زندگی بھر بہروں کی مدد کرتا رہا۔ اس نے شادی بھی ایک مادرزاد بہری لڑکی سے کی۔ بہروں کا ایکاسکول کھولا اور بہروں کی تعلیم دینے والے مدرسین کے لیے الگاسکول قائم کیا۔ ان کاموں کے ساتھ ساتھ ٹیلیفون ایجاد کرنے کی کوشش بھی کرتا رہا۔ آخر مارچ 1876ء میں وہ اپنی اس کوشش میں کامیاب ہو گیا۔ اس نے آواز کی شدت اور کیفیت کو جانچنے کا آلہ ’’ آواز پیما‘‘ بھی ایجاد کیا۔ 1880ء میں حکومت فرانس کی طرف سے اُسے ٹیلیفون ایجاد کرنے پر پچاس ہزار فرانک انعام دیا گیا۔ یہ رقم اس نے صنعتی تحقیق کی لیبارٹری کو عطا کردی۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. اجازت نامہ: سی سی زیرو
  2. ^ 2.0 2.1 http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb13746617f — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  3. ایس این اے سی آرک آئی ڈی: http://snaccooperative.org/ark:/99166/w6wm1fs5 — بنام: Alexander Graham Bell — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  4. قبر ڈھونڈیں شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/cgi-bin/fg.cgi?page=gr&GRid=2125 — بنام: Alexander Graham Bell — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  5. American National Biography ID: https://doi.org/10.1093/anb/9780198606697.article.1300115 — بنام: Alexander Graham Bell — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  6. آئی ایم ڈی بی - آئی ڈی: https://tools.wmflabs.org/wikidata-externalid-url/?p=345&url_prefix=http://www.imdb.com/&id=nm1745080 — اخذ شدہ بتاریخ: 15 اکتوبر 2015
  7. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb13746617f — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ

بیرونی روابط[ترمیم]