اوپرا ونفرے

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

خواتین

ٹاک شوز کی ملکہ ، سماجی بہبود میں باکمال

اوپرا ونفرے ، ہمت کی روشن مثال

فاروق احمد انصاری

ٹاک شوز کی بے تاج ملکہ اوپرا ونفرے ایک انتہائی مفلس گھر میں پیدا ہوئیں۔  زندگی کی تلخیوں کے باوجود انہوں نے محنت کا سفر جاری رکھا۔ انہیں 2011ء میں اپنی سماجی خدمات کے اعتراف میں اعزازی آسکر سے بھی نوازا گیا۔ایک عرصے تک امریکا میں ٹاک شوز کی ملکہ رہیں اور انھوں نے فلم سازی کے ساتھ اداکاری بھی کی اور اب وہ ایک کیبل ٹی وی چینل چلاتی ہیں۔اس سال گولڈن گلوب کی تقریب میں نظامت کے فرائض انجام دیتے ہوئے سیتھ مائیرز نے معروف امریکی اداکارہ اوپرا ونفرے کی ممکنہ صدارتی مہم کے بارے میں یوں ہی مذاق میں ایک خیال ظاہر کیا تھا۔مگر جب ونفرے انٹرٹینمنٹ کی دنیا میں نمایاں خدمات کے لیے 'سیسل بی ڈی میلے میں ایوارڈ حاصل کرنے کے لیے سٹیج پر آئیں اور اس کے بعد انھوں نے جو تقریر کی وہ کوئی مذاق نہیں تھی۔امریکی میڈیا میں یہ خبریں گشت کر رہی ہیں کہ وہ اس خیال پر سرگرمی کے ساتھ غور کر رہی ہیں۔اوپرا ونفرے نے اپنی تقریر میں کہا،’’ میں یقینی طور پر یہ کہہ سکتی ہوں کہ اپنی حقیقت بیان کرنا ہم سب لوگوں کا سب سے طاقتور ہتھیار ہے۔‘‘اوپرا نے نے گھریلو ملازم، کھیتوں کے مزدور، فیکٹریوں میں کام کرنے والے، ڈاکٹر، سپاہی غرض کہ تمام شعبۂ زندگی سے تعلق رکھنے والی خواتین کو پیغام دیا جنہوںنے 'ناانصافی اورمظلومیت کے دن گزارے ہیں۔

ونفرے کا کہنا تھا کہ 'میں یہاں موجود تمام لڑکیوں سے کہنا چاہتی ہوں کہ افق پر ایک نیا دن نکلنے کو ہے۔ اور جب بالآخر نیا دن نکلے گا تو اس کا سبب بہت سی شاندار خواتین ہوں گی جن میں سے کئی یہاں آج رات اس کمرے میںموجود ہیں اوریہاں بعض بہت اچھے مرد بھی ہیں جو اس بات کی یقین دہانی کرانے کے لیے بر سر پیکار ہیں کہ وہ ہمیں ایک ایسے زمانے میں لے جائیں جہاں پھر سے کسی کو ’’می ٹو‘‘نہ کہنا پڑے۔ایک خبر کے مطابق اوپرا ونفرے نے اس تقریر کےبعد 2020 میں امریکا کا صدارتی انتخاب لڑنے پر غور شروع کر دیا ہے۔ ذرائع نے اس فیصلے کی تصدیق بھی کردی ہے۔

اوپرا کی کہانی

جب اوپرا ونفرے نے اپنے ٹی وی ہوسٹنگ کے کیریئر کا آغاز کرنا چاہا تو اس کے ’اوپرا ونفرے شو‘ کے ڈائریکٹر نے اسے صاف الفاظ میں کہہ دیا تھا کہ وہ ٹی وی پر نہیں آسکتی کیونکہ وہ بہت جذباتی عورت تھی اور بات بات پر اس کے آنسو نکل آتے تھے۔ لیکن جب اوپرا نے ٹی وی شو شروع کیا تو وہ دنیا کے تمام ٹی وی شوز میں مقبول ہو گیا اور وہ آج دنیا کی امیر ترین سیاہ فام مریکی عورت ہے۔ اوپر ا کی جذباتیت اور حساسیت اسے شہر ت کی بلندیوں پر لے گئی ۔ اس سے یہی پتہ چلتاہے کہ لوگوں کی باتوں پر دھیان نہ دو، اپنی کسی کمزوری یا خوبی کو نہ چھپائو بلکہ اس بات پر شکر کر کہ تمہیں قدرت نے کیسا بنایا ہے کیونکہ کبھی کبھی جن چیزوں کو ہم اپنی کمی سمجھتے ہیں وہ ہمیں باقیوں سے الگ کرتی ہیں اور اوپرا کی حساس فطرت ہی اس کی کامیابی کی کنجی بنی ۔

اوپرا ونفرے شو

اوپراا ونفرے شو،  جسے اکثر اوپرا ہی کہا جاتا تھا۔ یہ ایک سنجید ہ نوعیت کا امریکی ٹاک شو تھا  جو 8 ستمبر، 1986 سے 25 مئی، 2011 تک شکاگو، ایلینائے میں 25 سیز ن یعنی 25 سال  تک آن ایئر گیا جو امریکی ٹیلی وژن کی تاریخ میں سب سے زیادہ دیکھا جانے والا شو تھا۔ جس میں امریکا کی نامور شخصیات نے شرکت کی اور اوپرا کو انٹرویو دیے۔ اوپر ا اپنے شو کا سب سے بدترین انٹرویو الزبتھ ٹیلرکا قرار دیتی ہیں۔ انٹرویو سے قبل الزبیتھ ٹیلر نے ونفرے سے کہا کہ وہ اس سے ذاتی نوعیت کے سوالات نہیں پوچھیں گی ، جس کی ونفرے نے پروا نہیں کی اور الزبیتھ ٹیلر کی 7 شادیوں اور ان سے جڑے واقعات کے بارے میں پوچھتی رہی جس پر ٹیلر ناراض بھی بہت ہوئی لیکن 1992میں ٹیلر نے ونفرے سے ذاتی حیثیت میں معذرت بھی کرلی تھی ۔

10 فروری 1993 کو ونفرے نے مائیکل جیکسن کا انٹرویو کیا جو ٹیلی وژن کی تاریخ کا سب سے زیادہ دیکھا جانے والا انٹرویو تھاکیونکہ مائیکل جیکسن نے 14 سال سے انٹرویو نہیں دیا تھا۔ اس وقت مائیکل جیکسن کا اسٹوڈیو البم ’’ ڈینجرس ‘‘ ریلیز ہوا تھا اور ٹاپ ٹین چارٹ پر تھا۔ یہ انٹرویو مائیکل جیکسن کے نیورلینڈ رینچ سے براہ راست نشر ہوا اور اسے اس وقت 90 ملین لوگوں نے دیکھا۔اوپرا ونفرے شو میں سب سے زیادہ نظر آنے والی شخصیت ونفرے کی دوست گیل کنگ تھی جس نے 141بار شرکت کی ۔ اس کے بعد سیلین ڈیان کی تھی جو صرف 28 بار اس شو میں شریک ہوئی۔ اس کے علاوہ  اس شومیںا مریکی صدر باراک اوباما، ان کی اہلیہ مشیل اوبامااورجارج بش بھی شریک ہو چکے ہیں اور شاید ہی کوئی سیلیبریٹی ہو جو اس شوکا حصہ نہ بنی ہو۔ اوپرا ونفرے شو کا آخری شو دودن پر مشتمل تھا جس میں میڈونا اور بیانسی جیسی فنکارہ شامل ہوئيں۔جن مداحوں نے اوپرا کو آخری شو ریکارڈ کرتے دیکھا ہے ان کا کہنا ہے کہ آخری بار الوداع کہتے ہوئے ان کی آنکھوں میں آنسو تھے۔

اوپرا کی سماجی خدمات

اوپرا اب تک 3 بلین ڈالر سے زائد رقم سماجی بہبود کے سلسلے میں تعلیمی اداروں بشمول چارٹر اسکولوں، افریقی۔امریکی طلبہء کی بہبود اور جنوبی افریقہ میں قائم اوپرا ونفرے لیڈرشپ اکیڈمی اور دیگر پروجیکٹس پر خرچ کر چکی ہیں۔1998 میںاوپرا ز اینجل نیٹ ورک قائم کیا اور اپنے ویوورزکی زندگی بدلنے کیلئے3.5 ملین ڈالر جمع کرنے کی اپیل کی۔ جس پر بہت سے صاحب حیثیت افراد نے عطیات دیے۔ اس فنڈ کی مدد سے اوپرا نے 2000 ء میں 15000 رضاکاروں کے ذریعے 150 مستحقین کے گھر بنوائےاور فی گھر 25ہزار ڈالر وظیفہ مقرر کیا گیا۔ عطیات کو روکنے سے قبل ونفرے کو 80ملین ڈالر سے زائد رقم مل چکی تھی اور یہ زائد رقم کیٹرینا اور ریٹا نامی طوفانوں کی وجہ سے متاثر ہونے والے لوگو ں کےکام آئی۔ یہ نیٹ ورک 13 ممالک کے 60 سے زائد اسکولوں کو چلارہاہے جہاں کتابیں اور یونیفارم مفت فراہم کیا جاتاہے۔ اب یہ اینجل نیٹ ورک اوپرا ونفرے چیریٹیبل فائونڈیشن کے زیر اہتمام چل رہا ہے۔اس کے علاوہ بھی اوپرا کی کئی سماجی اور انسانی فلاح کی خدمات ہیں جسے اس مختصر مضمون کے ذریعے احاطہ تحریر میں لانا مشکل امر ہے۔

اوپرا ونفرے
Winfrey at the 2013 Women in the World Conference.
Winfrey at the 2013 Women in the World Conference.

معلومات شخصیت
پیدائشی نام (انگریزی میں: Orpah Gail Winfrey)[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیدائشی نام (P1477) ویکی ڈیٹا پر
پیدائش 29 جنوری 1954ء (عمر 65 سال)
کوسیاسکو، مسیسپی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
رہائش Montecito, California, U.S.
شہریت Flag of the United States (1795-1818).svg ریاستہائے متحدہ امریکا  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
نسل امریکی افریقی[2]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں نسل (P172) ویکی ڈیٹا پر
بالوں کا رنگ سیاہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں بالوں کا رنگ (P1884) ویکی ڈیٹا پر
جماعت ڈیموکریٹک پارٹی
ساتھی Stedman Graham (1986–present)
عملی زندگی
مادر علمی ٹینیسی اسٹیٹ یونیورسٹی
پیشہ
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[3]،  وہسپانوی،  وعربی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر
مؤثر شخصیات مایا انجیلو،  وبارک اوباما،  وڈیانا راس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مؤثر (P737) ویکی ڈیٹا پر
تنخواہ $75 ملین (2013)
اعزازات
Presidential Medal of Freedom (ribbon).png صدارتی تمغا آزادی (2013)
پرائم ٹائم ایمی ایوارڈ  (2000)
پی باڈی اعزاز  (1995)
ہوریٹیو ایلگر اعزاز (1993)[4]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وصول کردہ اعزازات (P166) ویکی ڈیٹا پر
دستخط
اوپرا ونفرے
ویب سائٹ
ویب سائٹ www.oprah.com
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحات  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں آئی ایم ڈی بی - آئی ڈی (P345) ویکی ڈیٹا پر

اوپرا ونفرے (انگریزی: Oprah Winfrey) ریاستہائے متحدہ امریکا کی ایک فلمی اداکارہ ہے۔[5]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. https://www.achievement.org/achiever/oprah-winfrey/#interview — اقتباس: "Winfrey has said in interviews that 'my name had been chosen from the Bible. My Aunt Ida had chosen the name, but nobody really knew how to spell it, so it went down as "Orpah" on my birth certificate, but people didn't know how to pronounce it, so they put the "P" before the "R" in every place else other than the birth certificate. On the birth certificate it is Orpah, but then it got translated to Oprah, so here we are.'"
  2. https://nmaahc.si.edu/blog/oprah-winfrey-media-mogul-and-philanthropist
  3. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb13529332g — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  4. Member Profile – Horatio Alger Association — اخذ شدہ بتاریخ: 12 اپریل 2018
  5. انگریزی ویکیپیڈیا کے مشارکین۔ "Oprah Winfrey"۔