اکاخیل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

اکاخیل (پشتو: اکاخیل، آقاخیل) پشتون قبیلےگلزئی کا ایک ذیلی قبیلہ ہے۔ 20ویں صدی کے اوائل میں، عام طور یہ قبیلہ پر پستورل کے حصہ کے طور پر تسلیم کیا جاتا تھا. اکا خیل پشتون قبیلے گلزئی کا سب سے بڑا ذیلی قبیلہ ہے۔ اس قبیلے کی آبادی بنیادی طور پر پاکستان اور افغانستان میں رہتی ہے پاکستان کے جنوبی مغربی صوبہ (صوبہ سرحد)

میں کثیر تعداد میں آباد ہیں جن میں قبائلی علاقہ جات بھی شامل ہیں اور افغانستان  میں
صوبہ پکتیا اور صوبہ پکتیکا میں زیادہ تعداد میں آباد ہیں 

اس کے علاوہ صوبہ زابل میں بھی اس قبیلے کے خاطر خواہ افراد آباد ہیں قندوز کے دشت ارچی اور دیگر مضافات میں بھی اکاخیل قبیلہ کے ذیلی شاخ سلیم خیل کے کا فی افراد رھائش پزیر ہیں کراچی سے تعلق رکھنے والی مشہور شخصیت جنت گل خان کے آبا و اجداد بھی قندوز سے نقل مکانی کرکے کراچی میں رھائش اختیار کی ہے افغانستان کے صدارتی ترجمان دوا خان مینہ پال کا تعلق بھی اکا خیل قبیلہ سے ہے

اکاخیل قبیلہ کے بہت سی شاخیں ہیں 

بڑی شاخیں درج ﺫیل ہیں سلیم خیل لودک زئی سلیمان زئی شرسنی واضح رھے کہ شرسنئ اپنے آپ کو شیرانی بھی کہتے ہیں مردوزی لودگ زی اور شپیزری جو اپنے آپ کو دولت خیل بھی کہتے ہیں شپیزری شاخ کے اکثریت صدیوں سے بلوچستان کے بوستان اور کچلاغ ( کوچی راغہ) میں آباد ہیں اس قبیلہ کے افراد زوند کے تحصیل سمبازہ میں بھی آباد ہیں جو اکا خیل کے بجائے اپنے آپ کو سلیمان خیل ظاھرہ کرتے ہیں جن کا سر کردہ ملک درانئ اکاخیل ہے اور جو اکاخیل قبیلہ کے سربراہ ولی محمد عرف ولیگئ کا بھتیجا ہے