برہان الملک سعادت علی خان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
برہان الملک سعادت علی خان
Saadat Ali Khan I.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1680  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
نیشاپور  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 19 مارچ 1739 (58–59 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
دہلی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
رہائش فیض آباد  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں رہائش (P551) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of Awadh.svg سلطنت اودھ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
مناصب
نواب اودھ   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منصب (P39) ویکی ڈیٹا پر
دفتر میں
1722  – 19 مارچ 1739 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png  
صفدر جنگ  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
دیگر معلومات
پیشہ ارستقراطی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
عسکری خدمات

بانی سلطنت اودھ ب رہان الملک، نام محمد امین،آبائی وطن نیشا پور(خراسان) مسلکاً شعیہ آپ ایرانی موسوی سید تھے آپ زید بن موسیٰ کاظم ع کی  نسل ہیں زید بن موسیٰ کاظم کے روایت کے مطابق چار بیٹے یا دس بیٹے تھے ان کی اولاد کی تعداد واضح نہیں زید نے بنو عباس کے خلاف بغاوتوں میں حصہ لیا دوران بغاوت ان کے رویے بہت ظالمانہ اور بے نظیر تھے، جیسے لوگوں کے لوٹ مارنے کے بعد انہوں نے بنی عباس اور ان کے پیروکاروں کو جلانے کے حکم دیا اور جب ان میں سے ایک کو لے جایا گیا تو اس نے حکم دیا تکہ وہ آگ میں جلائیں اور اسی طرح یہ زید نار بن گیا اصل نام زید ہے اس وجہ سے امام رضا آپ کے لیے پریشان تھے اور آپ کو ظلم سے منع کیا کرتے تھے آپ کی نسل مغربی عراق اور ایران  بصرہ میں ہے ایسا  نہیں کی ان کی نسل ختم ہو گئی آپ کے نام کی ایران میں اسٹیٹ بھی تھی چونکہ آپ کی زندگی جد و جہد کرتی گزری شجرہ زیادہ سعادت نے اس وقت بنانا شروع کیا جب لوگ سید ہونا شروع ہوئے کچھ کو شجرے پورے یاد کچھ ایسے تھے جو اس وقت کی علاقائی مشہور سید تھے زید النار کی آخری آرام گاہ نیشاپور کے قصبے قائن میں ہے اور آپ کی اولاد نیشاپور میں بھی آباد ہے جہاں سے سعادت خان ہیں ان کے شجرے میں ناموں کی تربیت خراب ضرور ہے مگر شجرہ بالکل غلط نہیں ہے لیکن ان کا درست شجرہ ایران میں ہے جو میری پہنچ سے دور ہے ایران میں ان کو اصلی سید کی نسل میں ہی گردانہ جاتا تھا جب مغل ایران مدد کے لیے آئے تو سعادت خان کی طرف ٹھرے اور اپنے ساتھ لے آئے اور توپ خانے کا داروغا لگایا۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

ماقبل 
--
مغل صوبیدار اگرہ
15 اکتوبر 1720ء9 ستمبر 1722ء
مابعد 
--
ماقبل 
--
مغل صوبیدار اودھ
1732ء9 ستمبر 1722ء
مابعد 
--
ماقبل 
نیا عہدہ
نواب اودھ
1732ء19 مارچ 1739ء
مابعد 
صفدر جنگ

حوالہ جات[ترمیم]