حسن عابد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
حسن عابد
پیدائش سید حسن عابد زیدی
17 مئی 1935(1935-05-17)ء
سیتاپور، اتر پردیش، برطانوی ہندوستان
وفات مئی 6، 2007(2007-05-06)ء
کراچی،پاکستان
آخری آرام گاہ سخی حسن قبرستان، کراچی
قلمی نام حسن عابد
پیشہ ادیب، شاعر
زبان اردو
نسل مہاجر
شہریت Flag of پاکستانپاکستانی
اصناف غزل، نظم
نمایاں کام سوچ نگر
رنگ لایا ہے جنوں
آشنائیاں
"اِنام"
"اِک دِیا جلانا ہے"

حسن عابد (پیدائش: 17 مئی، 1935ء - وفات: 6 مئی، 2007ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے اردو کے ممتاز شاعر اور ادیب تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

حسن عابد 17 مئی، 1935ء کو سیتاپور، اتر پردیش، برطانوی ہندوستان میں پیدا ہوئے۔ ان کا اصل نا م سید حسن عابد زیدی تھا۔ تقسیم ہند کے کچھ عرصے بعد وہ پاکستان منتقل ہو گئے جہاں انہوں نے تدریس کے شعبے سے وابستگی اختیار کی۔ 1989ء میں انہوں نے واحد بشیر اور فقیر محمد لاشاری کے ساتھ مل کر اردو کا مشہور علمی و ادبی کتابی سلسلہ ارتقا شروع کیا جو اردو کی ترقی پسند تحریک کا نمائندہ تھا۔ ان کے شعری مجموں میں سوچ نگر، رنگ لایا ہے جنوں، آشنائیاں ،اِنام اور اِک دِیا جلانا ہے کے نام شامل ہیں۔ اس کے علاوہ ان کی شعری کلیات روز و شب کے نام سے شائع ہوچکی ہے۔[1]

تصانیف[ترمیم]

  • سوچ نگر( شاعری)
  • رنگ لایا ہے جنوں (شاعری)
  • آشنائیاں (شاعری)
  • روز و شب (کلیات)
  • آنام ( شاعری)
  • اِک  دِیا جلانا ہے (شاعری)

نمونۂ کلام[ترمیم]

اشعار

ہوا کرتی ہے اپنا کام اور شمعیں بُجھاتی ہےہم اپنا کام کرتے ہیں، نئی شمعیں جلاتے ہیں

وفات[ترمیم]

حسن عابد 6 مئی، 2007ء کو کراچی، پاکستان میں وفات پاگئے۔ وہ کراچی میں سخی حسن کے قبرستان میں آسودۂ خاک ہیں۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب ص 986، پاکستان کرونیکل، عقیل عباس جعفری، ورثہ / فضلی سنز، کراچی، 2010ء