حکیم نصرت حسین مالٹا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
سید حکیم نصرت حسین مالٹا ؒ
وفات 1918ء
رہائش کوڑہ جہان آباد ، ضلع فتح پور، اتر پردیش، بھارت

نام و خاندان[ترمیم]

آپ کا اسم گرامی "نصرت حسین" ہے، آپ "نصرت حسین کوروی" کے نام سے بھی جانے جاتے ہیں، لیکن آپ "حکیم نصرت حسین مالٹا" کے نام سے زیادہ مشہور ہیں. آپ کا شجرہ نسب کوڑہ جہان آباد کے بزرگ سید مخدوم قطب الدین سالار بندگی بڈھ سے ہوتا ہوا حضرت امام حسین سے جا ملتا ہے،

حالات[ترمیم]

حکیم صاحب موصوف نہایت سلیم الطبع، ذکی القرحہ مستقیم الاوقات تھے۔ انہوں نے علم حدیث وغیرہ دارالعلوم دیوبند سے تکمیل کے بعد لکھنؤ وغیرہ میں طب کی تکمیل کی، دستار بندی دارالعلوم دیوبند میں ہوئ، مولانا شبیر احمد عثمانی صاحب کے ساتھ دورہ میں شریک تھے، حضرت شیخ الہند محمود حسن دیوبندی ؒؒ سے بیعت تھے.

تحریک ریشمی رومال[ترمیم]

  • 1917ء میں تحریک ریشمی رومال کا راز فاش ہونے کی وجہ سے پورے ملک سے 223 جنگ آزادی تحریک کے قائدین کو بیک وقت گرفتار کرکے جیلوں میں ڈال دیا گیا اور خود حضرت شیخ الہند محمود حسن دیوبندی ؒ کو ان کے چار شاگردوں و ان کے قابل رشک تحریک کے سرگرم اراکین مولانا حسین احمد مدنی ؒ ، مولانا وحید احمد مدنیؒ ، مولانا عزیزگل پیشاوری ؒ اور حکیم نصرت حسین صاحبؒ[1] کے ساتھ گرفتار کر کے یورپ کے ایک ٹاپو مالٹا کے انتہائی سردقید خانے میں لے جا کر ڈال دیا گیا، اسی مالٹا کی جیل کے قید میں ہی حکیم نصرت حسین صاحبؒ کا انتقال ہو گیا.

حوالہ جات[ترمیم]

  1. https://archive.org/details/SafarNamaAseer-e-MaltaByShaykhSyedHusainAhmadMadnir.a