شوکت علی (گلوکار)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
شوکت علی خان
شوکت علی خان
ذاتی معلومات
پیدائش3 مئی 1944(1944-05-03)پنجاب، پاکستان
وفاتاپریل 2، 2021(2021-40-02) (عمر  76 سال)[1]لاہور، پاکستان
اصنافلوک موسیقی
پیشےگلوکار
سالہائے فعالیت1960-2021

شوکت علی (انگریزی: Shaukat Ali) (ولادت: 3 مئی 1944ء - وفات: 2 اپریل 2021ء) جن کو شوکت علی خان کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، پاکستان کے ایک لوک گلوکار تھے۔[2][3] 1990ء میں صدر پاکستان نے انہیں تمغائے حسن کارکردگی سے نوازا۔[4]

ابتدائی زندگی اور کیریئر[ترمیم]

شوکت علی ضلع گجرات (جو اب نئے ضلع منڈی بہاء الدین پنجاب، پاکستان میں آتا ہے) ملکوال میں فنکاروں کے ایک خاندان میں 3 مئی 1944ء کو پیدا ہوئے۔ شوکت علی نے 1960ء کی دہائی میں، جب کالج میں تھے، تب سے گانا شروع کیا۔ جب بھی شوکت علی کو مدد کی ضرورت پڑی تو انہوں نے اپنے بڑے بھائی عنایت علی خان سے مدد لی۔ شوکت علی کو پاکستانی فلمی دنیا میں ایک مشہور میوزک ڈائریکٹر ایم اشرف نے اپنی پنجابی فلم تیس مار خان (1963ء) میں ایک پس پردہ گلوکار کے طور پر متعارف کرایا تھا۔[4]

شوکت علی نے 1960ء کی دہائی کے آخر سے، غزل اور پنجابی لوک گیت پیش کیے۔[4] ایک لوک گلوکار کی حیثیت سے، شوکت علی نہ صرف پنجاب، پاکستان بلکہ پنجاب، بھارت میں بھی مشہور ہیں۔ شوکت علی نے برطانیہ، کینیڈا اور امریکہ سفر کیا اور وہاں پر کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔[4]

شوکت علی پاکستانی گلوکار عمران شوکت علی، امیر شوکت علی اور محسن شوکت علی کے والد ہیں۔[5][3]

ایوارڈ اور پہچان[ترمیم]

مشہور گیت[ترمیم]

  • سیف الملوک (میاں محمد بخش)
  • ہیر وارث شاہ (وارث شاہ)
  • ساتھیو ! مجاہدو ! جاگ اٹھا ہے سارا وطن
  • توں وی حق دا ولی
  • ساڈے یار نے بنھ لیے سہرے
  • تیری میری ایہ ازلاں دی یاری
  • کیوں دور دور رہندے او
  • کدی تے ہَس بول وے
  • چھلا
  • جگا
  • ماݨ
  • جنت دا پڑچھاواں

وفات[ترمیم]

2 اپریل 2021ء کو بعمر 77 برس لاہور میں بعارضہ جگر وفات پاگئے۔[7][8][9]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Gabol، Imran (2021-04-02). "Folk singer Shaukat Ali passes away in Lahore". Images (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 02 اپریل 2021. 
  2. Cesare Baccheschi (21 July 2013). "Musical heritage: Shaukat Ali honoured with Pride of Punjab award". The Express Tribune (newspaper). اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2018. 
  3. ^ ا ب Adnan Lodhi (1 July 2017). "Folk singer Shaukat Ali's music immortalized in new documentary". The Express Tribune (newspaper). اخذ شدہ بتاریخ 19 جون 2018. 
  4. ^ ا ب پ ت Amjad Parvez (6 October 2017). "Shaukat Ali the indisputable Punjabi folk singer". Daily Times (newspaper). اخذ شدہ بتاریخ 11 جولا‎ئی 2019. 
  5. "Western culture 'affecting' Indians, Pakistanis". The. Chandigarh, India: Tribune News Service. 12 December 2004. اخذ شدہ بتاریخ 16 نومبر 2017. 
  6. Amjad Parvez (6 October 2017). "Shaukat Ali the indisputable Punjabi folk singer". Daily Times (newspaper). اخذ شدہ بتاریخ 11 جولا‎ئی 2019. 
  7. "Folk singer Shaukat Ali passes away". www.geo.tv (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 02 اپریل 2021. 
  8. Gabol، Imran (2021-04-02). "Folk singer Shaukat Ali passes away in Lahore". Images (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 02 اپریل 2021. 
  9. "Punjabi folk singer Shaukat Ali no more". www.thenews.com.pk (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 02 اپریل 2021.