طرحبند نویاتی اسلحہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

جوہری اسلحہ کا ڈیزائن یا طرحبند (انگریزی: Nuclear weapon design) ایک ایسا ڈیزائن ہے کہ جو کیمیائی عناصر کے طبیعیاتی خواص کو استعمال کرتے ہوئے انکو ایک ایسی ہندسیاتی ترتیب دیتا ہے کہ جو جوہری ہتھیار کا انفجار یا دھماکا پیدا کرنے کا باعث ہوتی ہے۔ جوہری اسلحہ اپنی تباہ کاری کی توانائی کے ماخذ کے لحاظ سے دو بنیادی اقسام کا ہوتا ہے۔

  • انشقاقی بم (fission bomb) : جو اپنی تباہ کاری کی صلاحیت انشقاق کے عمل سے حاصل کرتا ہے۔ اس میں کسی بھاری عنصر (مثلا؛ یورینیئم) کے مرکزے پر نیوٹرونوں کی بمباری کی جاتی ہے جس کے نتیجے میں وہ دو ہلکے مرکزوں میں تقسیم ہوجاتا ہے اور ساتھ ہی توانائی اور مزید نیوٹران یا تعدیلے بھی خارج ہوتے ہیں۔ یہ نئے نکلنے والے نیورون، مزید بھاری مرکزوں پر بارش کرکے اسی عمل کو دہراتے ہیں اور اس طرح ایک سلسلہ وار تعامل جاری ہوجاتا ہے جس کو مرکزی زنجیری تعامل (nuclear chain reaction) کہا جاتا ہے۔ اس طریقے پر بنائے جانے والے جوہری یا مرکزی اسلحہ کو ؛ ایٹم بم، جوہری بم، اے بم وغیرہ کے نام سے یاد کیا جاتا ہے۔ گو کہ یہ اصطلاح درست نہیں کیوں کہ انشقاق کی طرح ائتلاف (fusion) بھی ایک ایٹمی یا جوہری عمل ہی ہے لہذا اس کے ذریعے بنائے جانے والے ہتھیار بھی جوہری بم ہی کہلائے جانے چاہیں۔ (دیکھیے درج ذیل دوسری قسم)
  • ائتلافی بم (fusion bomb) : جو اپنی تباہ کاری کی صلاحیت ائتلاف کے عمل سے حاصل کرتے ہیں۔ اس میں کسی ہلکے عنصر (مثلا؛ ڈیوٹریئم اور لیتھیئم) کے مرکزے آپس میں مدغم ہوکر بھاری عنصر (مثلا؛ ھیلیئم) میں تبدیل ہوجاتے ہیں اور اس دوران کثیر تعداد میں توانائی خارج ہوتی ہے۔ اس طریقے پر بنائے جانے والے جوہری یا مرکزی اسلحہ کو؛ ہائیڈروجن بم یا ایچ بم کہا جاتا ہے۔

مذکورہ بالا دونوں اقسام میں تمیز خاصی مبہم سی ہے کیوں کہ آج کل کے جدید مرکزی ہتھیاروں میں یہ دونوں طریقہ کار بہم استعمال کیے جاتے ہیں: یعنی ایک چھوٹا انشقاقی بم کا دھماکا کرکے ہی ایک ائتلافی بم کو چلانے کے لیے درکار حرارت اور دباؤ پیدا کیے جاتے ہیں (دیکھیں ہائیڈروجن بم)