فہرست حکمران مملکت آصفیہ (حیدر آباد)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ریاست کا پرچم

دہلی کی مغلیہ سلطنت کے زوال کے بعد مسلمانوں کی جو خود مختار ریاستيں بر صغیر میں قائم ہوئیں ان میں سب سے بڑی اور پائیدار حیدر آباد دکن کی مملکت آصفیہ تھی۔ اس مملکت کے بانی نظام الملک آصف جاہ تھے اور اسی نام کی نسبت سے اس کو مملکت آصفیہ یا آصف جاہی مملکت کہا جاتا ہے۔ آصف جاہی مملکت کے حکمرانوں نے بادشاہت کا کبھی دعویٰ نہیں کیا۔ وہ خود کو نظام کہلاتے تھے اور وہ جب تک آزاد رہے مغل بادشاہ کی بالادستی تسلیم کرتے رہے اور اسی کے نام کا خطبہ اور سکہ جاری رکھا اور مسند نشینی کے وقت اس سے فرمان حاصل کرتے تھے۔ اس لحاظ سے دکن کی مملکت آصفیہ دراصل مغلیہ سلطنت ہی تھی جو دہلی کے زوال کے بعد دکن میں منتقل ہو گئی تھی۔ اس کے دور میں مغلیہ نظام حکومت نے اور مغلیہ سلطنت کے تحت پرورش پانے والی تہذیب نے دکن میں رواج پایا۔

حکمران مملکت آصفیہ کی فہرست مندرجہ ذیل ہے:

تصویر لقب نام پیدايش دور حکومت وفات
Asaf Jah I.jpg نظام‌الملک آصف جاہ اول میر قمر الدین خان 20 اگست 1671ء 31 جولائی 1720 تا 1 جون 1748ء 1748
ناصرجنگ میر احمد علی خان 26 فروری 1712ء 1 جون 1748ء تا 16 دسمبر 1750ء 16 دسمبر ء1750
Dupleix meeting the Soudhabar of the Deccan.jpg مظفرجنگ میر حدایت محی الدین سعداللہ خان ؟ 16 دسمبر 1750ء تا 13 فروری 1751ء 13 فروری 1751ء
صلابت جنگ میر سعید محمد خان 24 نومبر 1718ء 13 فروری 1751ء تا 8 جولائی 1762ء 16 ستمبر 1763ء
نظام‌الملک آصف جاہ دوم میر نظام علی خان 7 مارچ 1734ء 8 جولائی 1762ء تا 6 اگست 1803ء 6 اگست 1803ء
سکندر جاہ ،آصف جاہ تریہم میر اکبر علی خان 11 نومبر 1768ء 6 اگست 1803ء تا 21 مئی 1829ء 21 مئی 1829ء
Nasir-ud-dawlah, Nizam of Hyderabad 1794-1857.jpg ناصر الدولہ ،آصف جاہ چارہم میر فرقندہ علی خان 25 اپریل 1794ء 21 مئی 1829ء تا 16 مئی 1857ء 16 مئی 1857ء
افضل الدولہ ،آصف جاہ پنجم میر تاھنیت علی خان 11 اکتوبر 1827ء 16 مئی 1857ء تا 26 فروری 1869ء 26 فروری 1869ء
Asaf Jah VI.jpg آصف جاہ شیشم میر محبوب علی خان 17 اگست 1866ء 26 فروری 1869ء تا 29 اگست 1911ء 29 اگست 1911ء
Mir osman ali khan.JPG آصف جاہ ہفتم میر عثمان علی خان 6 اپریل 1886ء 31 اگست 1911ء تا 1956ء 24 فروری 1967ء