مومنہ مستحسن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مومنہ مستحسن
معلومات شخصیت
پیدائش 5 ستمبر 1992 (27 سال)  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لاہور  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
فنی زندگی
آلات موسیقی صوت  ویکی ڈیٹا پر آلۂ موسیقی (P1303) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادر علمی لاہور گرائمر اسکول  ویکی ڈیٹا پر تعلیم از (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ گلو کارہ  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
100 خواتین (بی بی سی)  (2017)  ویکی ڈیٹا پر وصول کردہ اعزازات (P166) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  ویکی ڈیٹا پر باضابطہ ویب سائٹ (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحات  ویکی ڈیٹا پر آئی ایم ڈی بی - آئی ڈی (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

مومنہ مستحسن پاکستان کی ایک موسیقارہ، گلوکارہ، نغمہ نویس اور سماجی جہدکار ہیں۔ ان میدانوں میں شاندار کارکردگی کی بنا پر وہ پاکستان کی معروف و مقبول شخصیات میں شمار کی جاتی ہیں۔[1][2]

مومنہ مستحسن کا بچپن اسلام آباد اور نیو یارک میں گزرا اور ابتدائی تعلیم مکمل کرنے کے بعد اسٹونی بروک یونیورسٹی سے بایومیڈیکل انجنیئرنگ اینڈ اپلائڈ میتھمیٹکس میں دوہری ڈگری حاصل کی۔[3][4] فرحان سعید کے نغمہ "پی جاؤں" اور بعد ازاں بھارتی فلم ایک ولن (2014ء) کے نغمہ "آواری" سے انہیں شہرت ملی۔[5][6][7] سنہ 2016ء میں مومنہ نے کوک اسٹوڈیو میں راحت فتح علی خان کے ساتھ پہلا نغمہ گایا۔ اس نغمہ نے انہیں شہرت کی بلندیوں پر پہنچا دیا اور وہ پاکستان کی مشہور ترین چہروں میں شامل ہو گئیں۔[2][8] سنہ 2018ء کے وسط میں انہوں نے اپنا نغمہ "آیا ناں تو" پیش کیا جو محض چوبیس گھنٹوں میں یوٹیوب پر پانچویں مقام پر جا پہنچا۔[9]

گلوکاری کے ساتھ مومنہ اسٹیج شو میں بھی حصہ لیتی ہیں۔ نیز متعدد اہم سماجی امور مثلاً تعلیم، ذہنی صحت اور پاکستان میں خواتین کے کردار پر وہ عوام کو بیدار کرنے کی کوشش کرتی ہیں۔[10][11][6] وہ اقوام متحدہ برائے خواتین، پاکستان کی رکن بھی ہیں۔[12]

ابتدائی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

مومنہ مستحسن کی والدہ ہما مستحسن ڈاکٹر ہیں جبکہ ان کے والد کاظم مستحسن پاک فوج کے ریٹائرڈ بریگیڈیئر اور ستارہ امتیاز یافتہ ہیں۔[7] مومنہ کے بڑے بھائی ہاشم مستحسن بھی ڈاکٹر ہیں جبکہ چھوٹے بھائی حیدر مستحسن اقوام متحدہ کے محکمہ پاکستان میں کام کرتے ہیں۔[11]

مومنہ نے لاہور گرامر اسکول سے ابتدائی تعلیم مکمل کی اور اعلیٰ تعلیم کے لیے امریکا چلی گئیں جہاں انہوں نے سنہ 2016ء میں اسٹونی بروک یونیورسٹی سے بایومیڈیکل انجینئری اور اپلائیڈ میتھمیٹکس میں اعلیٰ سند حاصل کی۔[13]

مومنہ نے ابتداً وائلن بجانا سیکھا اور بغیر کسی مشق کے اپنے ہی اسکول کی ایک محفل میں گایا۔[3][1]

ذاتی زندگی[ترمیم]

ستمبر سنہ 2016ء میں مومنہ مستحسن نے ٹویٹر پر تصدیق کی کہ امریکی بینکار علی نقوی سے ان کی منگنی ہو چکی ہے۔[14] لیکن سنہ 2017ء کے اوائل ہی میں یہ رشتہ ٹوٹ گیا۔[15][16]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب فیرس اسماعیل (18 ستمبر 2016)۔ "New Yorker Momina Mustehsan takes South Asia by storm with 'Afreen'"۔ دی امریکن بازار۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 30 ستمبر 2016۔
  2. ^ ا ب طلحہٰ احمد (23 اگست 2016)۔ "Momina Mustehsan might completely transform the idea of stardom in Pakistan"۔ دی نیشن۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 30 اگست 2016۔
  3. ^ ا ب ندا رضا (19 جولائی 2016)۔ "Momina Mustehsan"۔ دی نیوز۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 24 جولائی 2016۔
  4. ایمان ضیاء (6 ستمبر 2017)۔ "So Basically, Momina Mustehsan Just Celebrated Her 10th Birthday"۔ مینگوباز۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 6 ستمبر 2017۔
  5. "Junoon completion of band's 20 years"۔ دی ایکسپریس ٹریبیون۔ 21 اگست 2011۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 جولائی 2016۔
  6. ^ ا ب "Top 9 Momina Mustehsan Songs You Need to Hear!"۔ Folder۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 28 مارچ 2018۔
  7. ^ ا ب "Momina Mustehsan on Rewind with Samina Peerzada – Inspiring Interview – Afreen Afreen – Episode 6"۔ 25 جنوری 2018۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  8. ارکا سینگپتا (17 جون 2016)۔ "'Coke Studio Pakistan' undergoes major revamp in Season 9; artiste line-up revealed"۔ انٹرنیشنل بزنس ٹائمز۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 جون 2016۔
  9. "Afreen singer Momina Mustehsan and Arjun Kanungo release single Aaya Na Tu"۔ فرسٹ پوسٹ۔ 20 جون 2018۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 جون 2018۔
  10. "Why Momina Mustehsan is on our radar"۔ ڈیلی ٹائمز۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 28 مارچ 2018۔
  11. ^ ا ب ""My style statement is homeless!" Momina Mustehsan talks about music, math and life in a Brunch exclusive"۔ ہندوستان ٹائمز۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 28 مارچ 2018۔
  12. مشال صدیقی (24 ستمبر 2018)۔ "Momina Mustehsan Joins Hands with UN to End Violence Against Women"۔ ایچ آئی پی۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 ستمبر 2018۔
  13. "Momina Mustehsan on Rewind with Samina Peerzada"۔ مورخہ 6 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  14. "Momina Mustehsan gets engaged to US based banker"۔ 25 ستمبر 2016۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 26 ستمبر 2016۔
  15. "افواہیں سچ ہوگئیں، مومنہ نے خود اعلان کردیا"۔ 14 فروری 2017۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 فروری 2017۔
  16. "After lashing out at Daily Pakistan, Momina Mustehsan confirms she's officially single"۔ ڈیلی پاکستان۔ حمزہ راؤ۔ 14 فروری 2017۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 فروری 2017۔