مندرجات کا رخ کریں

نور طاہر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
نور طاہر
(عربی میں: نور طاهر ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
معلومات شخصیت
پیدائش 2 دسمبر 1999ء (25 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عمان   ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت اردن   ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ ادکارہ   ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان عربی   ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان عربی ،  انگریزی   ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

نور طاہر (پیدائش 2 نومبر 1999ء) اردن کی ایک خاتون اداکارہ اور ماڈل ہے [1] وہ فلسطینی نژاد ہیں۔ وہ نیٹ فلکس کے ایک منی سیریز میں لایان مراد فاتھی کے کردار کے لیے مشہور ہیں۔ [2] [3] [4]

ابتدائی سوانح عمری[ترمیم]

نور طاہر 2 نومبر 1999ء کو عمان، اردن میں فلسطینی والدین کے ہاں پیدا ہوئیں۔ اس کی ایک چھوٹی بہن کرم طاہر ہے، جو ایک اداکارہ بھی ہے اور فلم فرح میں بھی کام کر چکی ہے۔ نور نے کلاسیکی طور پر بیلے کی تربیت حاصل کی ہے۔ [5] ان کی اداکاری کا کیریئر چار سال کی عمر میں شروع ہوا۔ وہ فلم انڈسٹری میں ان کی پرفارمنگ آرٹس ٹیچر سے متعارف ہوئیں، جو اس وقت کاسٹنگ ڈائریکٹر بھی تھیں۔ [6]

کیریئر[ترمیم]

طاہر نے چھ سال کی عمر سے ہی فلموں میں کام کیا، جن میں روون جوفے کی دی شوٹنگ آف تھامس ہرنڈل اور سائرس نوراستہ کی دی سٹوننگ آف سورایا ایم دونوں شامل ہیں 2008ء میں [7] اتنی چھوٹی عمر میں فلموں میں نمودار ہونے کے بعد، طاہر نے 2019ء کی فلم میں ایک اور اداکاری کا کردار قبول کرنے تک وقفہ لیا۔ اس کا سب سے قابل ذکر کردار 2021ء کی نیٹ فلکس منی سیریز ، الروابی اسکول فار گرلز میں تھا، جس کا پریمیئر 190 ممالک میں 32 زبانوں میں ہوا۔ [8] دسمبر 2023ء میں، طاہر کو اسکرین ڈیلی نے "کل کا عرب ستارہ" کے طور پر درج کیا تھا۔ [7] ہارپر بازار عربیہ کو دیے گئے ایک انٹرویو میں، [9] طاہر کا کہنا ہے کہ فلمی صنعت میں وہ ایک شخص جس کی وہ واقعتاً تلاش کر رہی ہیں وہ الروبی اسکول فار گرلز راکین سعد سے ان کی ساتھی اداکارہ ہے۔

ذاتی زندگی[ترمیم]

مارچ 2022ء میں، طاہر نے اپنے انسٹاگرام پیج کے ذریعے انکشاف کیا کہ وہ اچانک دورے کی وجہ سے ہونے والی مرگی سے نمٹ چکی ہیں۔ اس کا دماغ کا آپریشن ہوا اور وہ چھ دن تک ہسپتال میں داخل رہی۔ طاہر نے اس بات پر زور دیا کہ ان دورے کے ساتھ رہنا مشکل تھا، کیونکہ یہ "معمول کے نہیں، بلکہ تکلیف دہ ہیں اور ان سے صحت یابی قدرتی طور پر نہیں آتی۔" طاہر اس بیماری کے بارے میں عوامی آگاہی پھیلانا چاہتی تھی اور اس نے اپنے پیروکاروں کا تعاون ظاہر کرنے پر شکریہ ادا کیا۔ [10]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Ghalia Taman (2023-04-04)۔ "Rising Star & Talented Model: Meet The Many Faces Of Noor Taher"۔ Scoop Empire (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 14 مئی 2023 
  2. "Everything to know about Netflix's new Arabic series"۔ Emirates Woman۔ 16 August 2021۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 اگست 2021 
  3. "AlRawabi School for Girls | Netflix Official Site"۔ Netflix۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 اگست 2021 
  4. "Who's Who: Noor Taher, managing editor at Amazon Alexa"۔ Arab News (بزبان انگریزی)۔ 2022-11-02۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 فروری 2023 
  5. I’ve just stalked the entire cast of AlRawabi School for Girls on social media – can we be best friends? Cosmopolitan. 29 August 2021. Retrieved 6 December 2022
  6. "Ajyal Spotlight: Andria Tayeh & Noor Taher LIVE | لقاءات أجيال : أندريا طايع و نور طاهر" – YouTube سے 
  7. ^ ا ب Tim Dams2023-12-01T10:25:00+00:00۔ "Arab Stars of Tomorrow 2023: Noor Taher, actor (Jordan)"۔ Screen (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 دسمبر 2023 
  8. "'School is My Nightmare': AlRawabi School for Girls is Netflix's Latest Must-Watch Arabic Original | Egyptian Streets" (بزبان انگریزی)۔ 15 August 2021۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 اگست 2021 
  9. Yasine Hariss (15 May 2022)۔ "What's Next? Al Rawabi School for Girls' Noor Taher on Friendship, Future Aspirations and Bringing Layan To Life…"۔ Harper's Bazaar Arabia 
  10. https://www.layalina.com/%D9%86%D9%88%D8%B1-%D8%B7%D8%A7%D9%87%D8%B1-%D8%A8%D8%B7%D9%84%D8%A9-%D9%85%D8%B3%D9%84%D8%B3%D9%84-%D9%85%D8%AF%D8%B1%D8%B3%D8%A9-%D8%A7%D9%84%D8%B1%D9%88%D8%A7%D8%A8%D9%8A-%D8%AA%D9%8F%D9%82%D9%84%D9%82-%D9%85%D8%AA%D8%A7%D8%A8%D8%B9%D9%8A%D9%87%D8%A7-%D9%88%D8%AA%D9%83%D8%B4%D9%81-%D8%B9%D9%86-%D9%85%D8%B1%D8%B6%D9%87%D8%A7-477220.html