نینڈرتھل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
اضغط هنا للاطلاع على كيفية قراءة التصنيف

نینڈرتھل

Neanderthal
دور: MiddleLate Pleistocene 0.25–0.028 ما
Neanderthal skull at لا شاپیل-آ-سینس
Neanderthal skull at لا شاپیل-آ-سینس

90px
Mounted Neanderthal skeleton at American Museum of Natural History
اسمیاتی درجہ نوع[1]  ویکی ڈیٹا پر صنف بندی درجہ (P105) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت بندی
مملکت: جانور
جماعت: ممالیہ
طبقہ: حیوانات رئیسہ
خاندان: Hominidae
جنس: ہومو
نوع: H. neanderthalensis
سائنسی نام
Homo neanderthalensis[1]

  ویکی ڈیٹا پر صنف بندی نام (P225) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
William King ، 1864  ویکی ڈیٹا پر صنف بندی نام (P225) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

Range of Homo neanderthalensis۔ Eastern and northern ranges may extend to include Okladnikov in Altai and Mamotnaia in Ural
Range of Homo neanderthalensis۔ Eastern and northern ranges may extend to include Okladnikov in Altai and Mamotnaia in Ural

مرادفات
Homo mousteriensis[2]
Homo sapiens neanderthalensis
Palaeoanthropus neanderthalensis[3]
[[file:|16x16px|link=|alt=]]  ویکی ڈیٹا پر کومنز نگارخانہ (P935) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

نینڈرتھل دولاکھ سال پہلے یورپ کے سرد ماحول میں آباد انسان تھے جو گزشتہ 30 ہزار سال سے 40 ہزار سال کے درمیان میں پمعدوم ہو گیا۔ یہ نوع موجودہ انسان سے حد درجہ مماثلت رکھتا تھا اور اس کے اور موجودہ انسان کے ڈی ان اے میں محض 0.12 فیصد کا فرق موجود تھا۔ آج ان کے باقیات میں ان کی ہڈیاں اور ان کے استعمال کیے گئے پتھروں کے سادہ اوزار ہی دستیاب ہیں۔2008 کے ایک مطالعے سے یہ بات معلوم ہوئی کے اس نوع اور موجودہ انسان میں جنسی اختلاط نہی ہوا۔ جبکہ ایک دوسری تحقیق کا کہنا تھا کہ نیڈرتھال کی خصوصیات موجودہ انسانی ڈی این اے میں بھی موجود ہیں ان کے مطابق زیادہ تر غیر آفریقی نسلوں اور کچھ آفریقی ڈی این اے میں اس کے اشارے ملتے ہیں اور یہ اختلاط کوئی 50 سے 60 ہزار سال قبل شروع ہوئی تھی۔ 1848ء میں جبرالٹر فوجی چوکی پر نیڈرتھال کی کھوپڑی ملی تھی، جسے دیکھ کر پت چلتا ہے کہ یہ انسانی کھوپڑی ہی ہے مگر اس کھوپڑی میں ایک بندر کی بھی تمام خصوصیات موجود تهی۔ یہ کھوپڑی پیشانی سے لے کر سامنے چہرے کی ساخت تک حیران کن مماثلت لیے ہوئے تهی۔۔[4][5] سائنسدانوں کو ایسے ثبوت بھی ملے ہیں جس سے کہا جا سکتا ہے کہ یہ جنس اپنے مردوں کو دفناتی تھی۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ مصنف: Francisco J. Ayala — عنوان : Genera of the human lineage — جلد: 100 — صفحہ: 7688 — شمارہ: 13 — شائع شدہ از: Proceedings of the National Academy of Sciences of the United States of America — https://dx.doi.org/10.1073/PNAS.0832372100https://pubmed.ncbi.nlm.nih.gov/12794185https://www.ncbi.nlm.nih.gov/pmc/articles/PMC164648
  2. Dictionary of Anthropology—Charles Winick – Google Books۔ Books.google.ca (1956-12-18)۔ Retrieved on 2014-05-24.
  3. Bibliography of Fossil Vertebrates 1954–1958 – C.L. Camp, H.J. Allison, and R.H. Nichols – Google Books۔ Books.google.ca. Retrieved on 2014-05-24.
  4. نیڈر تھال۔ اردو سائنس بلاگ
  5. نیڈرتھال۔ بی بی سی

بیرونی روابط[ترمیم]

  • Kreger، C. David۔ "Homo neanderthalensis"۔ ArchaeologyInfo.com۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 مئی 2009۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  • O'Neil، Dennis۔ "Evolution of Modern Humans: Neandertals"۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 23 مئی 2009۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  • "Homo neanderthalensis"۔ The Smithsonian Institution۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  • "Neanderthal DNA"۔ International Society of Genetic Genealogy۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت): Includes Neanderthal mtDNA sequences
  • Panoramio—'IMG_6922 The Neandertal foot prints' (photo of ~25K years old fossilized footprints discovered in 1970 on volcanic layers near Demirkopru Dam Reservoir, مانیسا، ترکی)
  • Neanderthal hybridization and Haldane's rule
  • نینڈرتهال ڈاکومنٹری ویڈیو