ونی منڈیلا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
مادر ملت
ونی منڈیلا
Winnie Mandela 190814.jpg
جنوبی افریقی پارلیمانی رکن
دفتر سنبھالا
مئی 2009ء
فرسٹ لیڈی آف ساؤتھ افریقہ
عہدہ سنبھالا
1994–1996
پیشرو مریکے ڈی کلارک
جانشین گراشا ماچیل
ڈپٹی منسٹر آف آرٹس، کلچر، سائنس اینڈ ٹیکنالوجی
عہدہ سنبھالا
1994–1996
جانشین پالو جوڈان (آرٹس اینڈ کلچر), ڈیریک ہانکم (سائنس اینڈ ٹیکنالوجی)
ذاتی تفصیلات
پیدائش نمزامو ونی فریڈ زانیوے مادیکیزیلا
26 ستمبر 1936 (1936-09-26) ‏(80)
پاںڈو لیںڈ، ٹراںسکئی، جنوبی افریقہ
شریک حیات نیلسن منڈیلا (1954–1996; طلاق شدہ ; 2 بچے)
اولاد زینانی منڈیلا (b. 1959)
زندزیوہ (b. 1960)
مادر علمی جنوبی افریقہ کی یونیورسٹی
پیشہ سماجی کارکن، سیاستدان

نمزامو وِنیفریڈ زانیوے مادیکیزیلا منڈیلا[1] (Nomzamo Winifred Zanyiwe Madikizela) عام طور پر وِنی منڈیلا، جنوبی افریقی اپارتھائیڈ مخالف رہنما، سماجی کارکن اور نیلسن منڈیلا کی طلاق شدہ بیوی ہیں۔

ونی نے 1958ء میں نیلسن منڈیلا سے شادی کی تھی۔ 1962ء میں نیلسن منڈیلا کی حراست کے بعد، ونی نے اپارتھائیڈ کے خلاف جنگ آزادی کو جاری پر رکھی۔ اس وجہ سے ونی منڈیلا جنوبی افریقی عوام کے درمیان بہت مقبول ہیں، ان کو پیار سے "اماما وے تھو" کہا جاتا ہے، جس کا مطلب مادر ملت ہے۔[2][3]

انہوں نے افریقی نیشنل کانگریس میں شامل کی تھی اور اس کی خاتون شاخ کی پہلی لیڈر بنی۔ انہوں نے اپنے بچوں کو پرورش دی تھی جبکہ اپارتھائیڈ حکومت نے ان کے شوہر روبن جزیرے پر قید میں رکھے۔ 1969ء سے 1970ء تک انہوں نے اپنی زندگی اپارتھائیڈ حکومت کے پریٹوریا جیل میں گزری۔[4]

حوالہ جات[ترمیم]

Incomplete-document-purple.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کرکے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔