ہمیش بینیٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ہمیش بینیٹ
ذاتی معلومات
مکمل نامہمیش کائل بینیٹ
پیدائشاومارو، نیوزی لینڈ
قد1.91 میٹر (6 فٹ 3 انچ)
بلے بازیبائیں ہاتھ کا بلے باز
گیند بازیدائیں ہاتھ کا میڈیم فاسٹ گیند باز
حیثیتگیند باز
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
واحد ٹیسٹ (کیپ 247)4 نومبر 2010  بمقابلہ  بھارت
پہلا ایک روزہ (کیپ 163)14 اکتوبر 2010  بمقابلہ  بنگلہ دیش
آخری ایک روزہ11 فروری 2020  بمقابلہ  بھارت
پہلا ٹی20 (کیپ 83)24 جنوری 2020  بمقابلہ  بھارت
آخری ٹی208 ستمبر 2021  بمقابلہ  بنگلہ دیش
ملکی کرکٹ
عرصہٹیمیں
2005/06–2015/16 کینٹربری
2016/17–2022 ویلنگٹن
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ ایک روزہ فرسٹ کلاس لسٹ اے
میچ 1 19 79 107
رنز بنائے 4 10 446 90
بیٹنگ اوسط 4.00 5.00 9.69 6.42
100s/50s 0/0 0/0 0/0 0/0
ٹاپ اسکور 4 4* 30* 20*
گیندیں کرائیں 90 892 13,151 4,628
وکٹ 0 33 261 156
بالنگ اوسط 24.84 28.49 25.73
اننگز میں 5 وکٹ 0 8 1
میچ میں 10 وکٹ 0 1 0
بہترین بولنگ 4/16 7/50 6/45
کیچ/سٹمپ 0/– 3/– 17/– 17/–
ماخذ: Cricinfo، 8 September 2021

ہمیش کائل بینیٹ نیوزی لینڈ کے سابق بین الاقوامی کرکٹر ہیں جو نیوزی لینڈ کی قومی کرکٹ ٹیم کے لیے کھیلے۔ وہ نیوزی لینڈ کے ڈومیسٹک مقابلوں میں ویلنگٹن کے لیے کھیلے۔ اپنے کیریئر کے آغاز میں انہوں نے سری لنکا میں 2006ء کے آئی سی سی انڈر 19 کرکٹ ورلڈ کپ میں نیوزی لینڈ کی نمائندگی کی۔

ڈومیسٹک کیریئر[ترمیم]

بینیٹ نے ابتدائی طور پر کینٹربری کے لیے ڈومیسٹک کرکٹ کھیلی۔ تاہم جون 2018ء میں اسے 2018-19ء کے سیزن کے لیے ویلنگٹن کے ساتھ معاہدہ کیا گیا۔ [1] وہ 2018–19ء فورڈ ٹرافی ٹورنامنٹ میں بارہ میچوں میں 28 آؤٹ کے ساتھ سب سے زیادہ وکٹیں لینے والے بولر تھے۔ [2] وہ گیارہ میچوں میں سترہ آؤٹ کے ساتھ 2019-20ء سپر سمیش ٹورنامنٹ میں سب سے زیادہ وکٹیں لینے والے بولر بھی تھے۔ [3] جون 2020ء میں انہیں ویلنگٹن نے 2020-21ء کے ڈومیسٹک کرکٹ سیزن سے پہلے ایک معاہدے کی پیشکش کی تھی۔ انہوں نے اپریل 2022ء میں کرکٹ کے تمام فارمیٹس سے باضابطہ ریٹائرمنٹ لے لی۔ [4] [5]

بین الاقوامی کیریئر[ترمیم]

اس نے اپنا پہلا ایک روزہ بین الاقوامی اکتوبر 2010ء میں بنگلہ دیش کے خلاف کھیلا جہاں وہ نیوزی لینڈ کا بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والا بولر تھا جس نے تین وکٹیں حاصل کیں ۔ [6] اگلے مہینے اس نے بھارت کے خلاف ڈرا میچ میں اپنا واحد ٹیسٹ میچ کھیلا پہلی اننگز میں بغیر وکٹ کے پندرہ اوورز کرانے کے بعد، [7] وہ انجری کی وجہ سے دوسری اننگز میں گیند بازی کرنے سے قاصر رہے۔ [8] بینیٹ کو برصغیر پاک و ہند میں 2011ء کے آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ کے لیے نیوزی لینڈ کی ٹیم میں شامل کیا گیا تھا۔ انہوں نے چنئی میں کینیا کے خلاف چار وکٹیں حاصل کیں جہاں انہیں مین آف دی میچ کا ایوارڈ دیا گیا۔ وہ جنوری 2014ء میں کمر کی شدید چوٹ کی وجہ سے دو سال تک باہر رہنے کے بعد نیوزی لینڈ اور بھارت کے درمیان تیسرا ایک روزہ میچ کھیلنے کے لیے ون ڈے ٹیم میں واپس آئے۔ [9] جنوری 2020ء میں بینیٹ کو مئی 2017ء میں آخری بار نیوزی لینڈ کی نمائندگی کرنے کے بعد، ہندوستان کے خلاف ان کی سیریز کے لیے نیوزی لینڈ کے[10] ٹی ٹوئنٹی انٙرنیشنل سکواڈ میں شامل کیا گیا تھا۔ اس نے 24 جنوری 2020ء کو اپنا ٹی ٹوینٹی انٹرنیشنل ڈیبیو کیا۔ [11]

کوچنگ[ترمیم]

بینیٹ ویلنگٹن ٹیم کے موجودہ باؤلنگ کوچ ہیں۔ [12]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Central Districts drop Jesse Ryder from contracts list". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 15 جون 2018. 
  2. "The Ford Trophy, 2018/19: Most wickets". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 01 دسمبر 2018. 
  3. "Super Smash, 2019/20: Most wickets". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 19 جنوری 2020. 
  4. "Daryl Mitchell, Jeet Raval and Finn Allen among major domestic movers in New Zealand". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 15 جون 2020. 
  5. "Auckland lose Jeet Raval to Northern Districts, Finn Allen to Wellington in domestic contracts". Stuff. اخذ شدہ بتاریخ 15 جون 2020. 
  6. "New Zealand in Bangladesh ODI Series - 4th ODI, 2010/11 season". Cricinfo. 
  7. "New Zealand in India Test Series - 1st Test, 2010/11 season". Cricinfo. 
  8. "Martin five sparks stunning turnaround". Cricinfo. 
  9. "Wired up Hamish Bennett glad to be back". Stuff.co.nz. 
  10. "Hamish Bennett recalled for T20Is against India". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 15 جنوری 2020. 
  11. "1st T20I (N), India tour of New Zealand at Auckland, Jan 24 2020". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 24 جنوری 2020. 
  12. "Wired up Hamish Bennett glad to be back in fold". Stuff.