وکٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

کرکٹ کے کھیل میں وکٹ کے کئی معنی ہو سکتے ہیں۔

وکٹ کے معنی[ترمیم]

کرکٹ میں استعمال ہونے والی وکٹ

تین سٹمپ کا مجموعہ[ترمیم]

ایک وکٹ تین سٹمپ (stump) پر مشتمل ہوتی ہے۔ سٹمپ لکڑی کا وہ لمبا حصہ ہے جس کا کچھ حصہ زمین میں دبایا جاتا ہے۔ وکٹ پچ (pitch) کے دونوں جانب لگائی جاتی ہے۔ وکٹ (wicket) کے اوپر دو چھوٹی لکڑیاں رکھی جاتی ہیں ان کو بیل (Bail) کہا جاتا ہے۔ بلے باز بلے کے ذریعے اپنی وکٹ کا دفاع کرتا ہے۔

ایک سٹمپ کی لمبائی 28 انچ یا 71 سینٹی میٹر ہوتی ہے۔ شروع میں وکٹ صرف دو سٹمپ پر مشتمل ہوتی تھی اور اس پر ایک بیل رکھی جاتی تھی۔ یہ وکٹ ایک گیٹ کی شکل کی ہوتی تھی۔

بلے باز کا آؤٹ ہونا[ترمیم]

ایک بلے باز کو آؤٹ کرنا، ایک وکٹ لینے کے مترادف ہوتا ہے۔ ایک گیند باز بلے باز کو آؤٹ کر کے وکٹ لیتا ہے۔

بلے باز آؤٹ اس وقت ہوتا ہے جب بیل وکٹ پر سے گیند کے لگنے سے گر جاتی ہے۔

پارٹنرشپ[ترمیم]

جتنی دیر دو بلے باز اکٹھے کھیلتے ہیں اور اسکور بناتے ہیں اس کو کرکٹ میں پارٹنرشپ (partnership) کہتے ہیں۔ جیسے مثال کی طور پر فخر زمان اور احمد شہزاد کھیل رہے ہیں احمد شہزاد نے 16 رن بنائے اور فخر زمان نے 34 34+16=50 - پہلی وکٹ کی پارٹنرشپ ایک باری یا اننگز کے شروع پر شروع ہوتی ہے اور کسی ایک بلے باز کے آ‎ؤٹ ہونے پر ختم ہوتی ہے۔ دوسری وکٹ کی پارٹنرشپ پہلے بلے باز کے آؤٹ ہونے اور دوسرے بلے باز کے آؤٹ ہونے تک جاری رہتی ہے۔ دسویں وکٹ یا آخری وکٹ کی پارٹنرشپ نویں بل باز کے آؤٹ ہونے سے دسویں بلے باز کے آؤٹ ہونے تک جاری رہتی ہے۔ دسویں بلے باز کے آؤٹ ہونے پر ایک اننگز ختم ہو جاتی ہے اور دوسری ٹیم اپنی باری شروع کرتی ہے۔

وکٹ سے جیتنا[ترمیم]

ایک ٹیم وکٹوں کے حساب سے بھی جیت سکتی ہے۔ اس کا مطلب ہوتا ہے کہ آخر میں بلے بازی کرنے والی ٹیم مقررہ اسکور حاصل کر لیتی ہے اور اس کے آؤٹ نہ ہونے والے کھلاڑیوں کی تعداد سے جیت جاتی ہے۔ یعنی اگر ٹیم مقررہ اسکور کا ہدف چار کھلاڑیوں کے آؤٹ ہونے تک حاصل کرتی ہے تو وہ ٹیم چھ وکٹوں سے جیت جاتی ہے۔

متعلقہ مضامین[ترمیم]

کرکٹ لغت

قوانین کرکٹ