ہیری پوٹر اور ققنس کا گروہ (فلم)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ہیری پوٹر اور ققنس کا گروہ
Harry Potter and the Order of the Phoenix poster.jpg
British release poster
ہدایت کار David Yates
پروڈیوسر ڈیوڈ ہیمین
David Barron
منظر نویس Michael Goldenberg
ماخوذ از ہیری پوٹر اور ققنس کا گروہ 
از جے کے رولنگ
ستارے ڈینیل ریڈکلف
روپرٹ گرنٹ
ایما واٹسن
(See below)
موسیقی Nicholas Hooper
سنیماگرافی Sławomir Idziak
ایڈیٹر Mark Day
پروڈکشن
کمپنی
تقسیم کار وارنر بردرز Pictures
تاریخ اشاعت
  • 3 جولائی 2007 (2007-07-03) (لندن premiere)
  • 11 جولائی 2007 (2007-07-11) (North America)
  • 12 جولائی 2007 (2007-07-12) (United Kingdom)
دورانیہ
138 منٹ
ملک برطانیہ
امریکا
زبان انگریزی
بجٹ $150 ملین[1]
باکس آفس $939.9 ملین[1]

مشہور ناول نگار جے کے رولنگ کے شہرۂ آفاق کردار ہیری پوٹر کو برطانوی ٹی وی ہدایت کار ڈیوڈ یاٹس (David Yates) کی ڈاریکشن اور مائیکل گولڈن برگ کے اسکرین پلے کے ساتھ فلم ہیری پوٹر اینڈ دی آرڈر آف دی فینکس میں دلچسپیوں اور رنگینیوں سے مزین کرکے پیش کیا گیا۔ رولنگ کے پانچویں ناول پر مبنی یہ فلم پچھلی فلموں جیسی ہی متاثر کن ہے۔ اس فلم میں اس سیریز کی پچھلی فلموں میں اپنا مقام بنانے والے اہم کرداروں کے ساتھ ساتھ نئے چہرے اور نئے منفی کرداروں کو بڑے اچھے انداز میں پیش کیا گیا۔ فلم اپنی طوالت اور کرداروں کی بھرمار کے باوجود کہیں بھی دلچسپی سے خالی محسوس نہیں ہوتی۔ ایک اچھی فلم کی ہدایت کاری کا معیار بھی یہی ہے کہ ہر کردار کو فلم کی کہانی میں اس طرح سمو دیا جائے کہ وہ فلم کا لازمی جز نظر آئے اور ڈیوڈ یاٹس اپنی اس کوشش میں کامیاب رہے۔

کہانی[ترمیم]

مرکزی کرداروں میں ”ہیری پوٹر (ڈینیل ریڈکلف)“ گرمیوں کی چھٹیاں گزارنے مگل (Muggle) کی سرزمین پر پہنچتا ہے جہاں وہ اپنے ناپسندیدہ کزن ڈڈلی کو کالے جادو کے اثر سے بچانے کے لیے ہاگورٹس اسکول سے حاصل کردہ جادوئی فن کو استعمال کرتا ہے جو اسکول کے ہیڈ ماسٹر البس ڈمبل ڈور (مائیکل گیمبون) سے کیے گئے وعدے کی خلاف ورزی تصور کیا جاتا ہے۔ اس پر جھوٹا ہونے کا الزام لگتا ہے اور وہ مقدمے میں پھنس جاتا ہے۔ جو جادو کی وزارت کے حکم پر قائم ہوتا ہے۔ اس مشکل وقت میں بھی ہیری کو مکمل یقین ہوتا ہے کہ کالے جادو کے برے اثرات کا حامل ولن لارڈ وولڈمورٹ (رالف فیئنیز)) واپس آ کر پھر سے شر پھیلانے والا ہے۔ مگر کوئی بھی اس کی بات کا یقین نہیں کرتا۔ بہرحال اسکول کے ہیڈ ماسٹر ہیری کے حق میں بیان دینے کے لیے عدالت پہنچ کر اس کو پریشانیوں اور سزا سے بچالیتے ہیں۔ ہیری واپس اسکول آجاتا ہے۔ مگر یہاں اس کو احساس ہوتا ہے کہ اس کے قریبی دوست بھی اس سے کترانے لگے ہیں سوائے ہرمائینی گرینجر (ایما واٹسن) اور رون ویزلی (روپرٹ گرنٹ) کے، سب ہی اس سے دور بھاگتے ہیں۔ ہیری کو بھیانک خواب ستانے لگتے ہیں اور حقیقی زندگی میں گلابی لباس میں نظر آنے والی نئی استانی ڈولرس امرج (امیلڈا اسٹینٹن) اس سے سختی سے پیش آتی ہے۔ اس کے متکبرانہ اور تحکمانہ انداز سے ہیری کی زندگی اجیرن ہوجاتی ہے۔ دوسری طرف جادو کے شعبے کا وزیر کارنیلس فج (رابرٹ ہارڈی) بھی سیاسی بازیگر ہے جو فلم کے ولن وولڈمورٹ کی واپسی کو نہیں مانتا اور ہیری پر اسکول کے خلاف ورزی کا الزام لگاتا ہے- فلم میں ہیری اور اس کے ہم خیال دوستوں اور اس کے دشمنوں کی تدبیروں کو بڑے دلچسپ انداز سے دکھایا گیا ہے جس میں ایک طرف دردمندل رکھنے والا ہیری اور دوسری طرف اندھی انتظامیہ ہے فلم میں خصوصی کمپیوٹر اثرات سے وزارت جادو اور عدالت کے خوبصورت سیٹ کے علاوہ مافوق الفطرت درندوں کے مناظر اور جادوئی کمالات دیکھنے کے قابل ہیں۔ ہیری کو جادو کے اسکول کو چوری چھپے چلاتے ہوئے دکھایا گیا ہے جہاں وہ ساتھیوں کو کالے جادو کے حملوں سے بچنے کی تربیت دیتا ہے- فلم میں ہیری کے گاڈ فادر سیریئس بلیک (Gary Oldman) کی بیلاٹرکس (Helena Bonham Carter) کے ہاتھوں موت ہوجاتی ہے۔

مقبولیت[ترمیم]

فلم میں تفریح کے تمام ترلوازمات موجود ہیں جو اس فلم کو ایک بہترین فلم بناتے ہیں۔ فلم نے پوری دنیا میں شاندار کامیابی حاصل کی۔ ہیری پوٹر سیریز کی فلمیں اور ناولز پاکستان میں بھی کافی مقبول ہیں، اس بات کا اندازہ آپ اسے ہی لگا سکتے ہیں کہ میں نے یعنی ناظم حسین وسطڑو نے جواد حسین وسطڑو، واجد حسین وسطڑو اور تنویر حسین وسطڑو کے ساتھ مل کر سندھ کے کئی گاؤں کی سروے کی جس سے ہمیں یہ پتا چلا کہ شہروں میں ہی نہیں بلکہ گاؤں میں بھی ہیری پوٹر کا بھوت سوار ہے- لنڈن کے میرے ایک دوست جان واٹسن (John Watson) جو ایما واٹسن (Emma Watson) کے بہت بڑے فین ہیں نے کہا کہ پوری دنیا میں ہالانکہ جیلوں میں بھی ہیری پوٹر سیریز کے ناولز بڑے شوق سے پڑھے جاتے ہیں-

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ bom-hp5 نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔