یوسف چیمبرلین

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
The Right Honourable
یوسف چیمبرلین
(انگریزی میں: Joseph Chamberlain خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
تفصیل= یوسف چیمبرلین 1909ءمیں

برطانوی ایوان عمومی کا قائد حزب اختلاف
بادشاہ ایڈورڈ ہفتم
وزیر اعظم ہنری کمپبل بینرمین
Fleche-defaut-droite-gris-32.png آرتھر جیمز بالفور
آرتھر_جیمز_بالفور Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
وزیرِ استعماری کالونی
وزیر اعظم
Fleche-defaut-droite-gris-32.png مرکویسِ ریپؤن
الفریڈ لئلٹن Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 8 جولا‎ئی 1836[2][3][4][5]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
لندن[6]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 2 جولا‎ئی 1914 (78 سال)[2][3][4][5]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
لندن[6]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
وجۂ وفات سکتہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وجۂ وفات (P509) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of the United Kingdom.svg متحدہ مملکت برطانیہ عظمی و آئر لینڈ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
رکن رائل سوسائٹی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں رکن (P463) ویکی ڈیٹا پر
اولاد
عملی زندگی
مادر علمی یونیورسٹی کالج لندن  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ سیاست دان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[7]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر
ملازمت جامعہ برمنگھم  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں نوکری (P108) ویکی ڈیٹا پر
اعزازات
رائل سوسائٹی فیلو   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وصول کردہ اعزازات (P166) ویکی ڈیٹا پر
دستخط
یوسف چیمبرلین

جوزف چیمبرلین (8 جولائی 1836ء - 2 جولائی1914ء) ایک برطانوی ریاستدان تھا جو پہلا بنیادی آزاد خیال تھا ،پھر، آئرستان کی داخلی خود مختاری کی مخالفت کے بعد، ایک آزاد خیال یونینسٹ اور آخر میں قدامت پسندوں کے ساتھ اتحاد میں ایک اہم سامراجی (استعماری وسعت پسند) کے طور پر کام کیا۔ انہوں نے اپنے پیشے کے دوران دونوں بڑی برطانوی جماعتوں کو تقسیم کیا۔

چیمبرلن نے برمنگھم میں اپنے پیشے کا آغاز سب سے پہلے پیچ کے ایک صنعتکار اور پھر اس شہر کے قابل ذکر ناظم کے طور پر کیا۔ وہ ایک بنیاد پرست آزادخیال پارٹی کے رکن تھے اور ابتدائی تعلیمی شق 1870ء کے مخالف تھے۔ ایک خود ساختہ کاروباری کے طور پر، انہوں نے کبھی کسی یونیورسٹی میں نہیں پڑھا اور اشرافیہ کو وہ حقارت سے دیکھتے تھے۔ وہ مراعات یافتہ سیاست دانوں کے مقابلے میں نسبتاً دیر سے 39 سال کی عمر میں ایوانِ عمومی میں داخل ہوئے۔ سطحی آزاد خیال تنظیم میں اپنے اثر و رسوخ کے ذریعے منصب تک پہنچے، وہ گلاڈسٹون کی دوسری حکومت (85ء-1880ء) میں صدر تجارتی مجلس بھی رہے۔ اس وقت، چیمبرلین قدامت پسند رہنما لارڈ سیلیسبری کی مخالفت کی وجہ سے مشہور تھے اور 1885ء عام انتخابات میں انہوں نے "غیر مجاز منصوبہ " پیش کیا، تاہم جس کا نفاذ نہ ہو سکا جو نئے حاملین شہریت زرعی مزدوروں کے مفاد کے لیے تھا، جس کے نعرہ میں "تین ایکڑ اور ایک گائے "دینے کا وعدہ کیا گیا تھا۔ چیمبرلین نے 1886 ء میں آئرستان کے داخلی خود مختاری کے قوانین کے احتجاج میں گلاڈسٹون کی تیسری حکومت سے استعفی دیا۔اس نے آزاد خیال پارٹی کےتقسیمی منصوبہ میں مدد دی اور لبرل یونینسٹ رکن بن گیا ، وہ جماعت جو برمنگھم کے گردوپیش کے ارکان پارلیمان کے اتحادپر مشتمل ہے ۔

1895ء کے عام انتخابات سے ، لبرل یونینی ، چیمبرلن کے سابق مخالف لارڈ سلیسبری کے تحت قدامت پسند پارٹی کے ساتھ اتحاد میں تھے۔ اس حکومت میں چیمبرلین نے مزدوروں کی معاوضہ کی شق 1897ء کو فروغ دیا۔ [8] [9] انہوں نے استعماری کالونیوں کے ریاستی وزیر کے طور پر بھی کام کیا، ایشیا، افریقہ اور غرب الہند میں سلطنت کے قیام کے لیے مختلف منصوبوں کو فروغ دیا۔ انہوں نے جنوبی افریقہ میں دوسری بوئر جنگ (1902ء - 1899ء) شروع کرنے کی وجہ سے اہم ذمہ داری حاصل کی اور جنگ کی کوششوں کے لیے سب سے زیادہ ذمہ دار حکومتی وزیر تھا۔ وہ یونینسٹ حکومت کے 1900 ءمیں دوبارہ "خاکی انتخابات" میں ایک اہم شخصیت بن گیا۔ 1903 میں، انہوں نے محصولی اصلاحات (یعنی بغیر درآمدی ٹیکس مفت تجارت کی موجودہ پالیسی کے برخلاف درآمدی ٹیکس کے نفاذ ) کی تحریک میں حصہ لینے کی وجہ سے کابینہ سے استعفی دیا ۔ انہوں نے اس موقف کے لیے اکثر یونینی ارکان پارلیمنٹ کی حمایت حاصل کی، لیکن یونینسٹوں نے 1906ء کے عام انتخابات میں بھاری شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ برمنگھم میں ان کی 70 ویں سالگرہ کے عوامی جشن کے بعد ہی، وہ دل کے دورے کے بعد معذور ہوا جس سے اس کی عوامی سیاست کا خاتمہ ہوا۔

وزیر اعظم نہ بننے کے باوجود، وہ اپنے وقت کے سب سے زیادہ اہم برطانوی سیاست دانوں میں سے تھا ، ساتھ ہی ساتھ فصیح مقرر اور بلدیاتی مصلح بھی تھا۔ مؤرخ ڈیوڈ نیکولس قلمبند کیا کہ اس کی شخصیت پرکشش بالکل نہیں تھی: وہ مغرور اور بے رحم اور قابل تنفرتھا۔ وہ اپنی بڑی خواہشات میں کبھی کامیاب نہیں ہوا۔ تاہم، وہ جمہوریت کے انتہائی ماہر بنیادی منتظم تھے اور اس نے دوسری بوائر جنگ کے جیتنے میں مرکزی کردار ادا کیا۔ وہ برطانیہ کے نوآبادیاتی پیش نامے کے قیام، خارجی، محصولی اور بلدیاتی پالیسیوں کے ایجنڈا کو قائم کرنے اور دو بڑی سیاسی جماعتوں کو گہرائی سے تقسیم کرنے کے لیے زیادہ مشہور ہیں ۔ [10]

  1. "ترجمہ سکھلائی"۔
  2. ^ ا ب http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb119566527 — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  3. ^ ا ب دائرۃ المعارف بریطانیکا آن لائن آئی ڈی: https://www.britannica.com/biography/Joseph-Chamberlain — بنام: Joseph Chamberlain — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Encyclopædia Britannica
  4. ^ ا ب ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w65h7tgd — بنام: Joseph Chamberlain — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  5. ^ ا ب فائنڈ اے گریو میموریل شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/cgi-bin/fg.cgi?page=gr&GRid=20921 — بنام: Joseph Chamberlain — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  6. ^ ا ب مدیر: الیکزینڈر پروکورو — عنوان : Большая советская энциклопедия — اشاعت سوم — باب: Чемберлен Джозеф — ناشر: Great Russian Entsiklopedia, JSC
  7. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb119566527 — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  8. Empty citation (معاونت)
  9. Lester Markham (2001). The Employers' Liability/Workmen's Compensation Debate of the 1890s Revisited. 
  10. David Nicholls, "Chamberlain, Joseph" in David Loades, ed. Reader's Guide to British History (2003) 1: 243–44.