پیشہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

یادآوری : profession کے ليے علمی اور فنی لحاظ سے درست لفظ ، فنیہ ہے (جبکہ مِھنَہ بھی ایک دوسرا متبادل ہوسکتا ہے) ، اس بات کی وضاحت مضمون کی ابتدائی سطور سے ہوجاۓ گی ؛ لیکن اس کے باوجود چند وجوہات کی بنا پر اس مضمون میں پروفیشن کے ليے وہی لفظ استعمال ہوا ہے جو کہ رائج ہے، یعنی پیشہ ، درحقیقت پیشہ occupation کے ليے درست نہ کہ profession کے لیۓ۔ اگر آپ کوئی راۓ رکھتے ہوں تو تبادلہ خیال کے صفحہ پر اظہار کردیجیۓ تاکہ باھم مشورہ اور مضمون میں بہتری کی جاسکے۔

پیشہ (profession) سے مراد ایک ایسے روزگارزندگی یعنی حِرفہ کی ہوتی ہے کہ جسکو اختیار کرنے کے ليے مشق اور تعلیم کے ساتھ ساتھ خصوصی معلومات کی بھی ضرورت ہوتی ہے اور عام طور پر اسکا واسطہ یا رابطہ کسی پیشہ ور ادارے سے بھی جڑا ہوتا ہے۔ مزید یہ کہ فنیہ یا پیشہ ، کی اپنی اخلاقیات ہوتی ہے جس پر عمل کرنا لازمی ہوتا ہے۔ پیشے کی تعلیم کی تکمیل کے بعد کوئی سند (certificate) عطا کی جاتی ہے جو کہ یا تو ایک دانشنامہ ہو سکتا ہے یا کوئی درجہ (degree) بھی۔ اس سند کے ساتھ مشق یا تدریب کی مدت مکمل ہوجانے کے بعد ایک اجازہ (license) دیا جاتا ہے جو تعلیم مکمل کرنے والے (پیشہ ور / professional) کو اس شعبہ حیات میں ایک ماہر کی حیثیت سے کام کرنے کی اجازت دیتا ہے۔

تاریخی طور پر تین پیشے اپنی الگ شناخت رکھتے تھے ؛ وزارت ، طب اور قانون۔ ان تینوں پیشوں کے اپنے دستور آداب تھے (ہیں) جن پر ان پیشوں میں داخل ہونے والوں کو اقرار نامہ یا حلف اٹھانا لازمی ہوتا ہے۔ اور اسی حلف برداری یا اعتراف نامہ اٹھانے یعنی professing کی وجہ سے انکو profession کہا گیا۔ اسکے علاوہ ان تینوں میں ہی اعلی تعلیم ، خصوصی معلومات ، اخلاقیات کا معیار اور خدمت اہم ترین عناصر میں شمار ہوتے ہیں۔

اب تک کے بیان سے یہ بات واضع ہوچکی ہے کہ کسی شعبہ حیات کو پروفیشن اس وقت کہا جاتا ہے جب کم از کم اس میں مشق ، تعلیم ، خصوصی معلومات ، حاصل کردہ سند ، اور حلف برداری جیسے عناصر شامل ہوں۔ جبکہ ایک پیشے کے ليے ان تمام عناصر کی ضرورت نہیں ہوا کرتی اور اگر کوئی صرف مشق کرکے اور سیکھ کر کوئی بھی روزگار حیات اختیار کرتا ہے تو ہم اسکو پیشہ ہی کہتے ہیں ، اسی وجہ سے مضمون کی ابتداء میں اس بات کی وضاحت درج کردی گئی ہے۔

اکثر معاشریاتدانوں نے پیشہ وریت (professionalism) کو ایک قسم کی خود ساختہ امتیازیت (elitism) کہا ہے، یا وہ اسے طائفہ کے خطوط پر استوار ایک خصوصی تنظیم سازی بھی کہتے ہیں۔ جارج برنارڈ شاہ کے پیشہ وریت کے بارے میں الفاظ یوں ہیں ؛ ترجمہ: عوام کے خلاف خیانت سازیاں۔

تاریخ[ترمیم]

جیسا کہ اوپر ذکر آیا کہ تاریخی طور پر پیشے کی اصطلاح (profession کے معنوں میں) ؛ مذہبی علماء، طبیبوں اور قانوندانوں تک محدود رہیں ، یا یوں کہ لیں کہ ان تین شعبہ جات سے تعلق رکھنے والوں کی اجارہ داری رہی، پھر ساتھ ساتھ عسکری مسئُولوں (officers) کو بھی مساوی درجہ دیا جانے لگا (جنہیں آج کے جدید مہندس کے اجداد سمجھا جاتا ہے)۔

علم طرزیات میں ترقی کے ساتھ ساتھ 19ویں صدی تک دیگر شعبہ جات زندگی کے اختصاصات بھی وسعت اختیار چکے تھے اور پھر رفتہ رفتہ ان اختصاص کے حامل شعبوں نے بھی پیشہ وری کا درجہ حاصل کرلیا۔ آج تقریباً ان تمام شعبہ روزگار کا کاروبار حیات کو فنیہ / profession کہا جاتا ہے کہ جو ابتداء میں بیان کردہ پیشے کی تعریف پر پورے اترتے ہوں۔


مثالیں[ترمیم]

‘‘http://ur.wikipedia.org/w/index.php?title=پیشہ&oldid=720803’’ مستعادہ منجانب