احمد خان مدہوش

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
احمد خان مدہوش
پیدائش احمد سومرو
5 اپریل 1931(1931-04-05)ء

گاؤں سلطان چانڈیو، ضلع دادو، برطانوی ہندوستان
وفات 26 جون 2010(2010-60-26) (عمر  79 سال)

کراچی، پاکستان
آخری آرام گاہ جوہی، ضلع دادو
قلمی نام مدہوش
پیشہ شاعر
زبان سندھی
نسل سندھی
شہریت Flag of پاکستانپاکستانی
موضوع غزل، وائی، بیت، آزاد نظم
نمایاں کام دل جوں گالھیوں
نظر میں نظربند

احمد خان مدہوش (انگریزی: Ahmed Khan Madhosh) (پیدائش: 5 اپریل، 1931ء - وفات: 26 جون، 2010ء) پاکستان سے تعلق رکھنے والے سندھی زبان کے بڑے کہنہ مشق اور مقبول شاعر تھے۔ وہ کئی کتب کے مصنف تھے۔ ان کا شمار سندھی زبان کے بڑے غزل گو شعرا میں ہوتا ہے۔[1][2]

حالات زندگی[ترمیم]

احمد خان مدہوش 15 اپریل، 1931ء کو گاؤں سلطان چانڈیو، ضلع دادو، برطانوی ہندوستان میں حاجی خان سومرو عرف شغلی فقیر سومرو کے گھر میں پیدا ہوئے۔ احمد خان مدہوش کی پیدائش کے بعد اس کے والد خاندان کے ساتھ ضلع دادو کے شہر جوہی میں سکونت اختیار کی۔ اس کے والد دھوبی کی دکان چلاتے تھے۔ اس کے علاوہ اس کے والد نعت خواں بھی تھے اس لیے شغلی سے مشہور تھے۔ 1952ء میں پرائمری کے استاد مقرر ہوئے۔ انہوں نے ملازمت کے ساتھ ساتھ اپنی تعلیم کی طرف بھی توجہ دی اور اس نے 1957ء میں سندھی فاضل اور 1965ء میں ادیب فاضل کا امتحان پاس کیا۔[1]

خدمات[ترمیم]

1960ء میں شاعری کی شروعات کی اور مدہوش تخلص اختیار کیا۔ اس کی شاعری لاتعداد جریدوں میں شائع ہوئی۔ علاوہ ازیں مدہوش کا کلام ریڈیو پاکستان، پاکستان ٹیلی وژن اور پرائیویٹ چینلز سے نشر ہوتا ہے۔ 1993ء میں بطور پرائمری استاد ریٹائرڈ ہوئے۔ مدہوش سندھی ادبی بورڈ جامشورو کے بورڈ آف گورنرز کے رکن رہے۔ شاعری میں اس کے استاد فیض بخشاپوری تھے۔[3]

وفات[ترمیم]

احمد خان مدہوش 26 جون، 2010ء کو کراچی میں وفات پاگئے۔[1][2]

حوالہ جات[ترمیم]