امیر حیدر خان ہوتی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
امیر حیدر خان ہوتی
ایم این اے
قومی اسمبلی پاکستان
دفتر سنبھالا
2013
وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا
عہدہ سنبھالا
مارچ 31, 2008 – مارچ 20, 2013
پیشرو شمس الملک
جانشین طارق پرویز خان
ذاتی تفصیلات
پیدائش 5 فروری 1971ء (عمر 47 سال)[1][2]
مردان، پاکستان
قومیت پاکستانی قوم
سیاسی جماعت عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی)

امیر حیدر خان ہوتی (پیدائش: 5 فروری ء1971) خیبر پختونخوا کی صوبائی قانون ساز اسمبلی کے رکن ہیں اور اسی صوبے کے وزیراعلٰی بھی ہیں۔ امیر حیدر خان ہوتی قوم پرست جماعت عوامی نیشنل پارٹی سے تعلق رکھتے ہیں اورسابق وفاقی وزیر اعظم خان ہوتی کے صاحبزادے ہیں۔ اورخان عبد الولی خان کے نواسے ہیں۔ آپ کی والدہ ایک نامورمدرسہ کے طور پر جانی جاتی ہیں
ابتدائی تعلیم رسالپور کے پریزنٹیشن کانونٹ ہائیاسکول میں پائی۔ امیر حیدر خان ہوتی نے کالج کی تعلیم ایچی سن کالج لاہور سے حاصل کی جبکہ 1992ء میں ایڈورڈز کالج پشاور سے گریجویشن کا امتحان پاس کیا۔ سیاسی طور پر آپ ضلع مردان میں اپنی پارٹی کے منتظم کے طور پر متحرک ہوئے اور بعد میں ضلعی نائب صدر بھی منتخب ہوئے۔
صوبائی قانون ساز اسمبلی میں آپ پہلی بار کامیاب ہوئے اور آپ اپنے آبائی حلقے PF-23 مردان 1 سے 11009 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے۔ بعد میں پارٹی کے فیصلے پر وزیر اعلٰی کے لیے نامزد ہوئے اور بھاری اکثریت سے کامیاب قرار پائے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ dawn/1march2008 نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
  2. نقص حوالہ: ٹیگ <ref>‎ درست نہیں ہے؛ pildat/dob نامی حوالہ کے لیے کوئی مواد درج نہیں کیا گیا۔ (مزید معلومات کے لیے معاونت صفحہ دیکھیے)۔
سیاسی دفاتر
ماقبل 
شمس الملک
وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا
2008 – 2013
مابعد 
طارق پرویز خان