برقی رو

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
VFPt Solenoid correct2.svg
برقناطیسیت
برق -- مقناطیسیت
برقی سکونیات
برقی بار
قانون کولمب
برقی میدان
قانون گاس
برقی جُہد
مقناطیسی سکونیات
قانون ایمپیئر
مقناطیسی میدان
مقناطیسی حرکات
برقی حرکیات
جار برقی
یورینٹز قوت
برحرکی قوت
برقناطیسی تحریض
قانون فیراڈے لینز
ہٹاؤ جار
میکسویل مساوات
برقناطیسی میدان
برقناطیسی اشعاع
برقی دوران
برقی ایصال
برقی مزاحمت
گنجائش
تحریضیت
مسدودیت
اصداء ساز
قائد الموج

برقی رو (electric current) سے مراد بار دار ذرات (charged particles) کا بہاؤ یا بار دار ذرات کے بہاؤ کی شرح rate ہوتی ہے۔
بار دار ذرات سے مراد برقیہ electron اور آئین ions وغیرہ ہیں۔

‏‎:

مثالیں[ترمیم]

آسمانی بجلی پلازمہ کرنٹ کی مثال ہے۔ آسمانی بجلی گرنے کے دوران دس کروڑ وولٹ کے تحت لگ بھگ 30,000 ایمپئر کا کرنٹ ہوا میں سے گزرتا ہے جس کی وجہ سے روشنی، ریڈیو کی لہریں، ایکس رے اور گاما رے نکلتی ہیں۔ اس پلازمہ کا درجہ حرارت 28,000 ڈگری سنٹی گریڈ تک پہنچ جاتا ہے۔[1]

برقی رو کی اکائی ایمپئر Ampere ہوتی ہے جسے A سے ظاہر کرتے ہیں۔۔ اگر کسی تار سے ایک ایمپئر کرنٹ گزر رہا ہے تو اسکا مطلب ہوتا ہے کہ اس تار میں سے ایک کولمب چارج فی سیکنڈ گزر رہا ہے (یعنی ہر سیکنڈ میں 6.241  × 1018 الیکٹران گزر رہے ہیں)۔


اے سی اور ڈی سی کرنٹ کا فرق[ترمیم]

جب بھی کسی چیز میں سے برقی رو (کرنٹ) گزرتی ہے تو اس چیز کے اطراف مقناطیسی میدان پیدا ہو جاتا ہے۔ آلٹرنیٹنگ کرنٹ (AC) اور ڈائریکٹ کرنٹ (DC) میں یہ فرق ہوتا ہے کہ ڈائریکٹ کرنٹ کی وجہ سے بننے والا تار کے گرد اور تار کے اندر مقناطیسی میدان تبدیل نہیں ہوتا اور مستقل رہتا ہے۔ ڈی سی کرنٹ کا مقناطیسی میدان صرف اسی وقت تبدیل ہوتا ہے جب سویچ آن یا آف کیا جاتا ہے۔ اس کے برعکس آلٹرنیٹنگ کرنٹ کی وجہ سے بننے والا مقناطیسی میدان ہر وقت تبدیل ہوتا رہتا ہے جس کی وجہ سے امالی کرنٹ (induced current) اور eddy current بنتے ہیں۔
اسی وجہ سے ٹرانسفورمر اے سی میں کام کرتے ہیں اور ڈی سی میں کام نہیں کرتے۔

مزید دیکھئے[ترمیم]

حوالہ[ترمیم]

  1. See Flashes in the Sky: Earth's Gamma-Ray Bursts Triggered by Lightning