ثانیہ سعید

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ثانیہ سعید
معلومات شخصیت
پیدائش 28 اگست 1972 (49 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کراچی  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شریک حیات شاید شفاعت (شادی۔ 1998ء–تاحال)
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ کراچی  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تعلیمی اسناد بیچلر  ویکی ڈیٹا پر (P512) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ فلمی ہدایت کارہ،  اداکارہ اور ادکارہ  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحہ  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ثانیہ سعید (انگریزی: Sania Saeed) (ولادت: 28 اگست 1972ء) پاکستانی اداکارہ اور میزبان ہیں۔

ثانیہ سعید ٹیلی ویژن پر پہلی بار ایک منچ ڈرامے میں نظر آئیں جو 8 مارچ 1989ء کو پروگرام آدھی دنیا میں دکھایا گیا تھا۔ اس ڈرامے کا نام عورت تھا۔ ثانیہ سعید نے نیٹ ورک ٹیلی ویژن مارکیٹنگ کے کراچی کے مرکز سے اپنے کام کا آغاز کیا۔[1] اس کے بعد، 1991ء میں ثانیہ سعید حسینہ معین کے ڈرامے آہٹ میں کام کیا جس کے ہدایت کارہ ساحرہ کاظمی تھیں۔ ثانیہ سعید نے 1992ء میں انور مقصود کے ڈرامے ستارہ اور مہر النساء میں بھی کام کیا، اس کی ہدایتکاری زارک نے کی تھی۔ اس کے بعد ثانیہ پاکستانی ٹیلی ویژن انڈسٹری میں اپنے کام کے لئے مشہور ہو گئیں۔[2] ثانیہ سعید دو دہائیوں سے تھیٹر اور ٹیلی ویژن میں کام کر رہی ہیں۔

ثانیہ سعید نے 1991ء اور 2011ء میں بھی پی ٹی وی ایوارڈ برائے بہترین اداکارہ جیتا تھا اور بہترین اداکارہ کے درجے میں چار لکس اسٹائل ایوارڈ حاصل کیے۔ ثانیہ سعید نے کتنی گرہیں باقی ہيں کے متعدد اقساط میں زوہاب خان، شمعون عباسی، عصمت زیدی، سونیا حسین، بدر خلیل، خالد احمد اور ثناء عسکری کے ساتھ کام کیا۔

ابتدائی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

ثانیہ سعید 28 اگست 1972ء کو پاکستان کے شہر کراچی میں پیدا ہوئیں۔ ثانیہ سعید کے والد منصور سعید ایک سیاسی کارکن تھے اور اردو میں کتابوں، دستاویزی فلموں اور تھیٹر ڈراموں کا ترجمہ کرتے تھے۔ ان کے والد کے عمدہ کاموں میں کارل سگن کا کاسموس، جیکب بروونوسکی کا ایسینٹ آف مین اور برٹولٹ بریکٹ کا گیلیو کی زندگی کے ترجمے شامل ہیں۔[3][4]

ثانیہ کی والدہ، عابدہ سعید نے 1983ء میں سیڈلنگ مونٹیسوری اسکول قائم کیا تھا جو آج تک چل رہا ہے۔[5][6]

پیشہ وارانہ زندگی[ترمیم]

1982ء میں ثانیہ کے والد منصور سعید نے دوسرے ہم خیال ساتھیوں کے ساتھ دستک کے نام سے ایک تھیٹر گروپ قائم کیا تھا۔

ایوارڈز اور نامزدگی[ترمیم]

سال نامزد کام درجہ ایوارڈ نتیجہ
2003ء شاید کی پھر بہار آئے بہترین اداکارہ ٹی وی لکس اسٹائل ایوارڈ[7] فاتح
2009ء جھمکا جان بہترین ٹی وی اداکارہ دوسرا لکس اسٹائل اعزاز[8] فاتح
2010ء دی گھوسٹ بہترین ٹی وی اداکارہ لکس اسٹائل اعزاز[9] فاتح
2011ء ہوا ریت اور آنگن بہترین ٹی وی اداکارہ لکس اسٹائل اعزاز[10] فاتح
2011ء پاکستان ٹیلی ویژن نیٹ ورک بہترین ٹی وی اداکارہ 16 ویں پی ٹی وی ایوارڈ[11] فاتح
2012ء آؤ کہانی بنتے ہیں بہترین ٹی وی اداکارہ لکس اسٹائل اعزاز[12] نامزد
2013ء زرد موسم بہترین اداکارہ پہلا ہم ایوارڈ[13] نامزد
2013ء اسیرزادی بہترین اداکارہ دوسرا ہم ایوارڈ[14] فاتح
2016ء منٹو بہترین اداکارہ (جیوری) دوسرا اے آر وائی فلم ایوارڈ زیر التواء

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Revisiting an Icon". 
  2. Hussain، Abbas (10 مارچ 2014). "A CANDID CONVERSATION WITH SANIA SAEED". Youlin Magazine. Lahore Pakistan. 
  3. "Sania Saeed and Nimra Bucha make Mushk an unforgettable experience!". HIP. اگست 2, 2020. 
  4. "Sania Saeed and Sarmad Khoosat Pair Up for a Theatre Play". HIP. اگست 8, 2020. 
  5. "Sania Saeed & Farah Shah play lesbian lovers in 'Kitni Girhein Baqi Hain' & shock Pakistan!". HIP. اگست 3, 2020. 
  6. "Nadia Jamil and Sania Saeed's play goes to Islamabad and Karachi". HIP. اگست 6, 2020. 
  7. 2nd Lux Style Awards
  8. "Best Actress winner at 8th Lux Style Awards". 
  9. "Best Actress winner at 9th Lux Style Awards". 
  10. "Best Actress winner at 10th Lux Style Awards". 
  11. "Best Actress nomination at 16th PTV Awards". 
  12. "Best Actress nomination at 11th Lux Style Awards". 03 مارچ 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 08 مارچ 2021. 
  13. 1st Hum Awards
  14. 2nd Hum Awards