جنیوا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
جنیوا
جنیوا کے مختلف مناظر، اوپر بائیں: قصر اقوام، وسط بائیں: CERN تجربہ گاہ،
دائیں: Jet d'Eau، نیچے: جھیل اور شہر کا طائرانہ منظر

نشان
رقبہ
 - کُل 15.86 کلومیٹر2 (6.12 میل2)
بلندی 375 میٹر (1,230 فٹ)
آبادی (2007ء)
 - کُل 185,726
 کثافتِ آبادی 11,710/کلومیٹر2 (30,330/میل2)
ویب سائٹ http://ville-ge.ch/

جنیوا (انگریزی: Geneva، فرانسیسی: Genève، جرمن: Genf، اطالوی: Ginevra) سویٹزرلینڈ کا دوسرا سب سے بڑا شہر ہے۔ یہ سویٹزرلینڈ کے فرانسیسی بولنے والے علاقے روماندی کا سب سے زیادہ آبادی والا شہر ہے۔ یہ اس مقام پر واقع ہے جہاں جھیل جنیوا دریائے رہون میں گرتی ہے۔ یہ جنیوا ضلع کا دارالحکومت ہے۔ شہری حدود کے اندر کی آبادی ایک لاکھ 85 ہزار 726 (بمطابق 2007ء) ہے۔ کئی بین الاقوامی تنظیموں کے دفاتر واقع ہونے کی وجہ سے جنیوا کو عالمی شہر تسلیم کیا جاتا ہے۔ ان دفاتر میں اقوام متحدہ کے یورپی صدر دفاتر بھی شامل ہیں۔ 2006ء میں کیے گئے ایک جائزے کے مطابق جنیوا (زیورخ کے بعد) دنیا میں سب سے اعلیٰ معیار زندگی کا حامل شہر ہے۔

یہاں عالمی ادارۂ صحت (WHO)، عالمی ادارۂ محنت (ILO)، اقوام متحدہ کے اعلیٰ کمشنر برائے مہاجرین (UNHCR)، اقوام متحدہ کے اعلیٰ کمشنر برائے انسانی حقوق (UNHCHR)، عالمی تنظیم برائے حقوق دانش (WIPO)، بین الاقوامی بعید مواصلات اتحاد (ITU)، عالمی موسمیاتی تنظیم (WMO)، عالمی تجارتی تنظیم (WTO) اور بین الپارلیمانی اتحاد (IPU)، یورپی تنظیم برائے جوہری تحقیق (CERN)، بین الاقوامی تنظیم برائے معیار بندی (IOS)، ہوائی اڈوں کی بین الاقوامی مؤتمر (ACI)، عالمی اقتصادی فورم (WEF)، عالمی تنظیم برائے اسکاؤٹ تحریک (WOSM)، بین الاقوامی انجمن صلیب احمر (ICRC) اور بین الاقوامی ایڈز انجمن (IAS) کے دفاتر واقع ہیں۔

ان عالمی تنظیموں کے علاوہ کئی کثیر القومی اداروں کے صدر دفاتر بھی اس شہر میں واقع ہیں جن میں سیرونو، ایس ٹی مائیکرو الیکٹرانکس، سوسائت جنرال، میڈیرینین شپنگ کمپنی اور سیٹا شامل ہیں۔ ان کے علاوہ پروکٹر اینڈ گیمبل، ڈیوپونٹ، انوسٹا، ہیولٹ-پیکارڈ، جے ٹی انٹرنیشنل، الیکٹرانک آرٹس اور سن مائیکروسسٹمز جیسے معروف کثیر القومی اداروں کے یورپی صدر دفاتر بھی یہیں ہیں۔

گھڑی سازی کی قدیم روایت کے باعث یہ شہر دنیا بھر میں شہرت رکھتا ہے اور رولیکس، ریمنڈ ویل، اومیگا، پیٹک فلپ اور فرینک میولر جیسے معروف گھڑی ساز یہیں سے وابستہ ہیں۔

دنیا کی قدیم ترین جامعات میں سے ایک جامعہ یہیں واقع ہے جسے جامعہ جنیوا کہا جاتا ہے۔ یہ جامعہ 1559ء میں جون کیلون نے قائم کی۔