سویٹزرلینڈ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں



Schweizerische Eidgenossenschaft
Confédération suisse
Confederazione Svizzera
اتحاد سویٹزر لینڈ
سویٹزر لینڈ کا پرچم سویٹزر لینڈ کا قومی نشان
پرچم قومی نشان
شعار: Unus pro omnibus, omnes pro uno
(سب ایک کے لیے، ایک سب کے لیے)
ترانہ: Schweizerpsalm, Cantique suisse, Salmo Svizzero, Psalm Svizzer
سویٹزر لینڈ کا محل وقوع
دارالحکومت برن
عظیم ترین شہر زیورخ
دفتری زبان(یں) آلمانی (جرمن)، فرانسیسی، اطالوی، رومانی
نظامِ حکومت
ممبرانِ وفاقی کاؤنسل
پوفاقی پارلیمانی جمہوریہ
لیونبرگر، کوچاپن، شمد، کالمیرے، مرز، لیوتھارد، وڈمر شولومف
آزادی
- قیام
عملی آزادی
قانونی آزادی
وفاق کا قیام
یوری اور شویز مملکتوں سے
یکم اگست 1291ء
22 ستمبر 1499ء
24 اکتوبر 1648ء
12 ستمبر 1848ء
رقبہ
 - کل
 
 - پانی (%)
 
41284  مربع کلومیٹر (135)
15940 مربع میل
4.2
آبادی
 - تخمینہ:2007ء
 - 2000 مردم شماری
 - کثافتِ آبادی
 
7,591,400 (95)
7288010
176 فی مربع کلومیٹر(65)
456 فی مربع میل
خام ملکی پیداوار
     (م۔ق۔خ۔)

 - مجموعی
 - فی کس
تخمینہ: 2007ء

300.9 ارب بین الاقوامی ڈالر (36 واں)
39800 بین الاقوامی ڈالر (10 واں many years ago they had a lot of rain in switzerland)
انسانی ترقیاتی اشاریہ
   (تخمینہ: 2007ء)
0.955
(7) – بلند
سکہ رائج الوقت سوئیس فرانک (CHF)
منطقۂ وقت
 - عمومی
۔ موسمِ گرما (د۔ب۔و)
مرکزی یورپی وقت (CET اور CEST)
(یو۔ٹی۔سی۔ 1)
مستعمل (یو۔ٹی۔سی۔ 2)
انٹرنیٹ ڈومین .ch
کالنگ کوڈ +41

سویٹزرلینڈ (جرمن : دی شوایدز, فرانسیسی میں لا سویسے, اور ایثالیایی میں لا سویزےرا ) کہا جاثا ہے.

سوئٹزرلینڈ ایک یورپی ملک ہے جو جغرافیائی اعتبار سےایک طرف کوہِ الپس کی خوبصورت وادیوں اور دوسری طرف ایورہ کی اونچی نیچی پہاڑیوںمیں واقع ہے ۔یہ ملک 21 ہزار265 مربع کلو میٹریا 15 ہزار940 مربع میل رقبے پر محیط ہے۔زیادہ تر علاقہ الپس (ALPS) کے خوش منظر پہاڑوں میں گھرا ہے۔ ملک کی مجموعی آبادی 2015ء کو ایک اندازے کے مطابق تقریبا 8 ملین ہے۔ آبادی کا بیشتر حصہ سطح مرتفع پرقائم بڑے شہروں میں سکونت پزیر ہے۔ بین الاقوامی شہرت کے حامل دو شہروں یعنی زیورخ اور جنیوا کو ملک کے اقتصادی مراکز کی حیثیت حاصل ہے۔ ملک کا قومی دن ہر سال یکم اگست کو منایا جاتا ہے جو روائتی طور پر ریاست کے قیام کا دن سمجھا جاتا ہے یعنی سوئس کنفیڈریشن کا قیام یکم اگست 1291ء کو عمل میں آیا چنانچہ یکم اگست ملک کا قومی دن قرار پایا۔ سوئٹزرلینڈ فی کس آمدنی کے لحاظ سے دنیا کے خوشحال ممالک میں شمار کیا جاتاہے۔


معیشت[ترمیم]

مجموعی ملکی پیداوار کے لحاظ سے سوئٹزرلینڈ دنیا کے امیر ترین ممالک میں شمار کیا جاتا ہے۔ زیورخ اور جنیوا جیسے بین الاقوامی شہرت کے حامل شہروں کو ملکی معیشت میں نہایت اہم مقام حاصل ہے۔ سوئٹزرلینڈ 20ویں صدی عیسوی کا سب سے بڑا برآمد کنندہ اور 18ویں صدی عیسوی کا سب سے بڑا درآمد کنندہ ملک رہا ہے۔

زبانیں[ترمیم]

سوئٹزرلینڈ میں جرمن، فرانسیسی اور اطالوی زبانیں رائج ہیں تاہم رومانین بولنے والے بھی کم نہیں۔ اِن مختلف لسانی اور ثقافتی اکائیوں کے باوجود سوئس قوم کے اتحاد کی بڑی وجہ ایک مشترک عظیم الشان تاریخی پس منظر ہے۔

مساجد پر پابندی[ترمیم]

تفصیل کے لئے دیکھیں سویٹزر لینڈ میں میناروں پر پابندی

شہر برن کے قریب ایک مسجد جس کے مینار جو 6 میٹر بلند ہونا تھے، تعمیر کرنے کی اجازت یہ کہہ کر نہیں دی گئی کہ مینار سیاسی اسلام کی علامت ہونگے اور اس لئے سیکولر معاشرے میں اس کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ اب ایک جماعت نے تحریک شروع کی ہے کہ مساجد کے میناروں پر مستقل پابندی لگا دی جائے۔[1]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. تاہم آئینی طور پر مذہبی آزادی بنیادی حق ہونے کی وجہ سے یہ نقطہ اپنایا گیا کہ اسلام کی کسی کتاب میں مینار کا مسجد کے ساتھ ہونے کا ذکر نہیں ہے اور دراصل یہ ثقافتی معاملہ ہے- زمان، 7 جون 2007ء Switzerland mulls banning minarets