تھائی لینڈ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

لوا خطا: not enough memory۔

تھائى لینڈ کے معنے ہیں آزاد لوگوں کے رہنے کى جگہ اس ملک کا پرانا نام سیام ہوا کرتا تھاـ یہ ملک تاریخ میں کبھى بھى کسى اور قوم کا غلام نہیں بنا۔ تھائی لینڈ ایک آئینی سلطنت ہے اور پارلیمنٹ کے جمہوریہ جمہوریہ اور فوجی جنتا کے درمیان دہائیوں کے درمیان تبدیل کر دیا ہے، مئی 2014 میں نیشنل کونسل برائے امن اور آرڈر کی طرف سے تازہ ترین بغاوت۔ اس کا دار الحکومت اور سب سے زیادہ آبادی شہر بینکاک ہے۔ یہ شمال میں میانمر اور لاوس کی جانب سے مشرقی طرف لاؤس اور کمبوڈیا کی طرف سے جنوبی طرف تھائی لینڈ اور ملائیشیا کے خلیج اور آمنام سمندر اور میانمار کی جنوبی افریقی طرف مغرب تک واقع ہے۔ اس کی بحری سرحدوں میں ویت نام تھائی لینڈ کے خلیج میں جنوب مشرقی، انڈونیشیا اور انڈیا میں اورامان سمندر پر جنوب مغرب تک شامل ہے۔

تھائی معیشت پی پی پی میں دنیا کی 20 سب سے بڑی جی ڈی ڈی اور نجی جی ڈی پی کی طرف سے 27 ویں بڑی معیشت ہے۔ یہ ایک نیا صنعتی ملک بن گیا اور 1990 کے دہائی میں ایک اہم برآمد کنندہ بن گیا۔ مینوفیکچرنگ، زراعت اور سیاحت معیشت کے شعبوں کی قیادت کر رہے ہیں۔ یہ علاقے اور دنیا بھر میں ایک درمیانی طاقت سمجھا جاتا ہے۔

Midori Extension.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔

نگار خانہ[ترمیم]

[

بیرونی روابط[ترمیم]

لوا خطا: not enough memory۔

حکومت
عمومی معلومات
سفر
دیگر

لوا خطا: not enough memory۔

لوا خطا: not enough memory۔ لوا خطا: not enough memory۔

لوا خطا: not enough memory۔لوا خطا: not enough memory۔

  1.  لوا خطا: not enough memory۔ لوا خطا: not enough memory۔
  2. http://web.nso.go.th/en/census/poph/data/090913_MajorFindings_10.pdf — ناشر: National Statistical Office
  3. The World Factbook — مصنف: سی آئی اے — ناشر: سی آئی اے
  4. http://stat.dopa.go.th/stat/statnew/statTDD/ — ناشر: Department of Provincial Administration
  5. ^ ا ب پ ت ٹ ث ج چ ح خ د ڈ ذ ر​ ڑ​ ز ژ س http://data.uis.unesco.org/Index.aspx?DataSetCode=DEMO_DS