املتاس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
اضغط هنا للاطلاع على كيفية قراءة التصنيف
اضغط هنا للاطلاع على كيفية قراءة التصنيف

املتاس

گولڈن شاور (املتاس) اپنے جوبن پر۔

صورت حال
! colspan = 2 | حیثیت تحفظ
اسمیاتی درجہ نوع[2]  ویکی ڈیٹا پر (P105) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت بندی  ویکی ڈیٹا پر (P171) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مملکت اعلی  حیویات
عالم اعلی  حقیقی المرکزیہ
مملکت  نباتات
ذیلی مملکت  ویریدیپلانٹے
ذیلی مملکت  سٹرپٹوفیٹا
جزو گروہ  ایمبریوفائیٹ
تحتی گروہ  نباتات عروقی
ذیلی تقسیم  تخم بردار پودا
سائنسی نام
Cassia fistula[2][3]  ویکی ڈیٹا پر (P225) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لنی اس ، 1753  ویکی ڈیٹا پر (P225) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مرادفات [4]
  • Bactyrilobium fistula Willd.
  • Cassia bonplandiana DC.
  • Cassia excelsa Kunth
  • Cassia fistuloides Collad.
  • Cassia rhombifolia Roxb.
  • Cathartocarpus excelsus G.Don
  • Cathartocarpus fistula Pers.
  • Cathartocarpus fistuloides (Collad.) G.Don
  • Cathartocarpus rhombifolius G.Don
  ویکی ڈیٹا پر (P935) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Blossomed golden shower tree in Kerala
پھولوں سے ڈھکا املتاس کا درخت اپنے جوبن پر

املتاس (انگریزی: Amaltas) یا کیسیا فسٹولا (انگریزی: Cassia fistula) فیباشیا خاندان کا ایک پھولدار پودا ہے۔ املتاس جنوبی ایشیا میں پایا جانے والا ایک درخت ہے۔ پاکستان کے اکثر باغات میں اپنے خوبصورت پھولوں کی وجہ سے لگایا جاتا ہے۔ یہ تھائی لینڈ کا قومی درخت اور قومی پھول ہے۔[5] اس کا پھول بھارتی ریاست کیرالا کا بھی ریاستی پھول ہے۔[6] یہ ایک مشہور آرائشی پودا بھی ہے اور جڑی بوٹیوں کی دوائی میں بھی استعمال ہوتا ہے۔[7]

تفصیل[ترمیم]

املتاس یا گولڈن شاور ٹری ایک درمیانے سائز کا درخت ہے، جو تیزی سے نمو کے ساتھ 10–20 میٹر (33–66 فٹ) تک بڑھتا ہے۔ پھول 20–40 سینٹی میٹر (8–16 انچ) لمبے پینڈولس ریسمس میں پیدا ہوتے ہیں، ہر ایک پھول 4–7 سینٹی میٹر (1+5⁄8–2+3⁄4 انچ) قطر کے ساتھ برابر سائز اور شکل کی پانچ پیلی پنکھڑیوں کے ساتھ ہوتا ہے۔ پھل ایک پھلی ہے، جو 30–60 سینٹی میٹر (12–24 انچ) لمبی اور 1.5–2.5 سینٹی میٹر (9⁄16–1 انچ) چوڑی ہوتی ہے اور تیز بو کے ساتھ اور کئی بیجوں پر مشتمل ہوتی ہے۔ اس درخت کی لکڑی مضبوط اور بہت پائیدار ہوتی ہے۔

کاشت[ترمیم]

املتاس بڑے پیمانے پر اشنکٹبندیی اور ذیلی اشنکٹبندیی علاقوں میں سجاوٹی پودے کے طور پر اگایا جاتا ہے۔ یہ گرم، خشک موسم میں موسم بہار کے آخر اور موسم گرما کے شروع میں کھلتا ہے۔ پھول بہت زیادہ ہوتے ہیں، درخت پیلے رنگ کے پھولوں سے ڈھکے ہوتے ہیں۔ یہ خشک آب و ہوا میں اچھی طرح اگتا ہے۔ اس درخت کی نشو و نما اچھی طرح سے خشک مٹی پر پوری دھوپ میں ہوتی ہے۔ یہ نسبتاً خشک سالی اور تھوڑا سا نمک برداشت کرنے والا ہے۔ یہ ہلکی ٹھنڈ کو برداشت کرتا ہے، لیکن اگر سردی برقرار رہتی ہے تو اسے نقصان پہنچ سکتا ہے۔ یہ پھپھوندی کا نشانہ بن سکتا ہے، خاص طور پر بڑھتے ہوئے موسم کے دوسرے نصف کے دوران۔ موسم گرما اور موسم سرما کے درجہ حرارت کے درمیان واضح فرق کے ساتھ درخت بہتر طور پر کھلتا ہے۔

بیج کو پھیلانے والے[ترمیم]

شہد کی مکھیوں اور تتلیوں کی مختلف انواع املتاس کے پھولوں کی افزائش گر کے طور پر جانی جاتی ہیں، خاص طور پر بڑھئی مکھیاں۔ سنہ 1911ء میں، رابرٹ اسکاٹ ٹروپ نے اس بات کا تعین کرنے کے لیے ایک تجربہ کیا کہ املتاس کے بیج کیسے منتشر ہوتے ہیں۔ اس نے پایا کہ گیدڑ پھلوں کو کھاتے ہیں اور بیج کو پھیلانے میں مدد کرتے ہیں۔

استعمالات[ترمیم]

بطور غذا[ترمیم]

ہندوستان میں، املتاس کے پھول کچھ لوگ کھاتے ہیں۔ اسے چودھویں صدی کے فرانس میں بھی کھایا جاتا تھا۔ پتیوں کا استعمال مویشیوں، بھیڑوں اور بکریوں کی خوراک کو طاقتور کرنے کے لیے بھی کیا جاتا ہے، جنہیں کم معیار کے چارے کھلائے جاتے ہیں۔

بطور دوا[ترمیم]

ایورویدک طب میں، املتاس کے درخت کو آراگوادھا کے نام سے جانا جاتا ہے، جس کا مطلب ہے "بیماریوں کا قاتل"۔ پھلوں کے گودے کو ایک جلاب آور سمجھا جاتا ہے اور آیورویدک نصوص میں طبی نگرانی کے بغیر کسی بھی استعمال کے خلاف سختی سے مشورہ دیا گیا ہے۔ اگرچہ یہ ہزاروں سال سے جڑی بوٹیوں میں استعمال ہوتا رہا ہے، لیکن جدید دور میں اس پر بہت کم تحقیق کی گئی ہے، حالانکہ یہ کچھ بڑے پیمانے پر تیار کردہ جڑی بوٹیوں کے جلاب میں ایک جزو ہے۔ جب اس طرح استعمال کیا جاتا ہے، تو اسے "کیسیا پوڈز" کے نام سے جانا جاتا ہے۔ پھولوں کے پیسٹ کو مرہم کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے۔ ہندوستان میں گودے سے بنی کیتھارٹک کو بعض اوقات تمباکو میں شامل کیا جاتا ہے۔

نگار خانہ[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Botanic Gardens Conservation International (BGCI)، IUCN SSC Global Tree Specialist Group (2018)۔ "Cassia fistula"۔ IUCN Red List of Threatened Species۔ 2018: e.T136142327A136142329۔ اخذ شدہ بتاریخ 07 مئی 2022 
  2. ^ ا ب پ BHL page ID: https://biodiversitylibrary.org/page/358396 — مصنف: لنی اس — عنوان : Species Plantarum — جلد: 1 — صفحہ: 377
  3.   ویکی ڈیٹا پر (P830) کی خاصیت میں تبدیلی کریں"معرف Cassia fistula دائراۃ المعارف لائف سے ماخوذ"۔ eol.org۔ اخذ شدہ بتاریخ 18 فروری 2024ء 
  4. "The Plant List: A Working List of All Plant Species"۔ اخذ شدہ بتاریخ June 19, 2014 
  5. "National tree of Thailand: Golden-yellow flowers cascading down Amaltash trees"۔ www.telegraphindia.com۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 جنوری 2024 
  6. "Golden tree (Cassia fistula) | Feedipedia"۔ www.feedipedia.org (بزبان انگریزی)۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 جنوری 2024 
  7. "Cassia fistula | Biodiversity at LUMS"۔ biodiversity.lums.edu.pk۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 جنوری 2024