مشرقی تیمور

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش


Repúblika Demokrátika Timór Lorosa'e
República Democrática de Timor-Leste
Republik Demokratik Timor Timur / ريڤوبليك ديموكراتيك تيمور
جمہوری جمہوریہ مشرقی تیمور
مشرقی تیمور کا پرچم مشرقی تیمور کا قومی نشان
پرچم قومی نشان
شعار: Honra, pátria e povo
(عزت، وطن اور عوام)
ترانہ: Pátria
مشرقی تیمور کا محل وقوع
دارالحکومت دیلی
عظیم ترین شہر دیلی
دفتری زبان(یں) تیتون
نظامِ حکومت
صدر
وزیرِ اعظم
پارلیمانی جمہوریہ
جوزے راموس ہورتا
زانانا گسماؤ
آزادی
- اعلانِ آزادی
تاریخِ آزادی
انڈونیشیا سے
28 نومبر 1975ء
20 مئی 2002ء
رقبہ
 - کل
 
 - پانی (%)
 
14874  مربع کلومیٹر (158)
5743 مربع میل
برائے نام
آبادی
 - تخمینہ:2007ء
 - کثافتِ آبادی
 
1,155,000 (153)
64 فی مربع کلومیٹر(139)
166 فی مربع میل
خام ملکی پیداوار
     (م۔ق۔خ۔)

 - مجموعی
 - فی کس
تخمینہ: 2007ء

3700 لاکھ بین الاقوامی ڈالر (185 واں)
800 بین الاقوامی ڈالر (177 واں)
انسانی ترقیاتی اشاریہ
   (تخمینہ: 2007ء)
0.514
(150) – متوسط
سکہ رائج الوقت تیوری اسکودو (TPE)
منطقۂ وقت
 - عمومی
۔ موسمِ گرما (د۔ب۔و)

(یو۔ٹی۔سی۔ -5)
غیر مستعمل (یو۔ٹی۔سی۔ -5)
ملکی اسمِ ساحہ
    (انٹرنیٹ)
.tl
رمزِ بعید تکلم
  (کالنگ کوڈ)
+670

مشرقی تیمور انڈونیشیا کے ساتھ چھوٹا سا ملک ہے جس کا دارلحکومت دیلی ہے۔


تاریخ[ترمیم]

1975؁ میں سلطنتِ پرتگال نے تیمور کو آزاد کِیا تو انڈونیشیا نے فورا جزیرہ؏ تیمور پر قبضہ کر لیا اور آزادی پسند فرقوں کو جبرا اپنے ماتحت کرنے کی کوشش کی ـ مغربی طاقتوں نے انڈونیشیا کی حمایت کی اس ڈر سے کہ مشرقی تیمور چین کی مدد حاصل کرتے ہوئے کامیونسٹ بن جائے گاـ

1999 ؁ میں انڈونیشیا ریفرینڈم پر رضامند ہو گیا جس ٘میں مشرقی تیمور کے باشندے مقامی خود ٘مختاری اور آزادی کے درمیان فیصلہ کریں گےـ جب نتیجہ آزادی کے حق میں آیا تو وہ تیموری جو انڈونیشیا کے حق میں تھے سڑکوں میں تشدد اور قتلِ عام کرنے لگے ـ سینکڑوں ہلاک ہوئےـ

اقوامِ متحدہ کے ّآنے سے جنگ بندی ہوئی اور اس ادارے کی کوششوں سے امن و امان رہا ہے ـ

فہرست متعلقہ مضامین مشرقی تیمور[ترمیم]