جیک ما

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جیک ما
(آسان چینی میں: 马云 ویکی ڈیٹا پر مقامی زبان میں نام (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جیک ما

معلومات شخصیت
پیدائش 10 ستمبر 1964ء (عمر 55 سال)
ہانگژو[1]  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the People's Republic of China.svg عوامی جمہوریہ چین[2][1]  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت کیمونسٹ پارٹی چین[3]  ویکی ڈیٹا پر سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
زوجہ میلسا
تعداد اولاد 2 [4]  ویکی ڈیٹا پر تعداد اولاد (P1971) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مناصب
معلم   ویکی ڈیٹا پر منصب (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دفتر میں
1988  – 1999 
صدر اور سی ای او[1][5]   ویکی ڈیٹا پر منصب (P39) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دفتر میں
1999  – 10 ستمبر 2019 
در علی بابا گروپ 
عملی زندگی
تعليم ہانگژو نارمل جامعہ (بی اے)
چینگ کانگ گریجوئیٹ اسکول آف بزنس (ایم بی اے)
پیشہ علی بابا گروپ کے بانی اور ایگزیکٹو چیئرمین
شعبۂ عمل کارجو[1]  ویکی ڈیٹا پر شعبۂ عمل (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کل دولت 37300000000 امریکی ڈالر (2019)[6]  ویکی ڈیٹا پر کل دولت (P2218) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

جیک ما ین (چینی: 马云; پینین: Ma Yun، [mɑ̀ y̌n]؛[8] پیدائش 10 ستمبر، 1964ء)[9] ایک چینی کاروباری میگریٹ، سرمایہ کار اور فلاسفی ہیں۔ آپ علی بابا گروپ، کثیر الملکی ٹیکنالوجی کمپنی، کے شریک بانی اور ایگزیکٹو چیئرمین ہیں۔ اگست 2018ء کے مطابق، آپ $38.6 بلین امریکی ڈالر کی مالیت کے چین کے امیر ترین لوگوں میں سے ایک تھے اور ساتھ ہی ساتھ دنیا کے امیر ترین لوگوں میں سے بھی ایک تھے۔[7] جیک ما کا بنیادی نظریہ ایک کھلی مارکیٹ پر مبنی معیشت کے لئے تھا۔[10]

ایک اہم کاروباری شخصیت، جیک ما کو چین کے عالمی کاروباری سفیر کے طور پر دیکھا جاتا ہے، اور اس طرح فوربس کی طرف سے اکثر دنیا کے سب سے طاقتور افراد میں سے ایک کے طور پر درج کیا جاتا ہے.[11][12] اس کے علاوہ، وہ نیا کاروبار شروع کرنے والے اداروں کے لئے ایک رول ماڈل کے طور پر دیکھے جاتے ہے۔[13] 2017 میں، وہ فارچون کی طرف سے شائع کردہ سالانہ "دنیا کے 50 عظیم ترین لیڈر" کی فہرست میں دوسرے درجہ پر تھے۔[14] 10 ستمبر، 2018ء کو انہوں نے علی بابا گروپ سے ریٹائرمنٹ لے لی اور تعلیمی سرگرمیوں کی طرف دھیان دینا شروع کردیا۔[15][16][17] ڈینیل زینگ کو ان کی جگہ ایگزیکٹو چیئرمین بنایا گیا۔[18]

جیک ما نے علی بابا گروپ کے سی ای او کی حیثیت سے استعفی دے دیا اور مبینہ طور پر یہ فیصلہ کیا کہ فلسفہ پر توجہ دینے کے لیے چیئرمین کے طور پر استعفی لیا۔[19]

ابتدائی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

جیک ما 15 اکتوبر، 1964ء کو ہانگژو، ژجیانگ، چین میں پیدا ہوئے۔ ہانگژو بین الاقوامی ہوٹل میں انگریزی بولنے والے غیر ملکی لوگوں کے ساتھ گفتگو کرتے کرتے، انہوں نے چھوٹی عمر میں انگلش کا مطالعہ شروع کیا۔ آپ نو سالوں تک اپنی سائیکل پر 70 میل دور جا کر غیر ملکی سیاحوں کو اپنے علاقے کی سیر کرواتے تھے تا کہ ان سے انگریزی زبان سیکھ جائیں۔ وہ ان غیر ملکیوں کے قلمی دوست بن گئے، انہوں نے انکو "جیک" کا نام دیا کیونکہ ان کے چینی نام کا تلفظ بہت مشکل تھا اور وہ اس کو ادا نہیں کر پاتے تھے۔[20]

بعد میں اپنی جوانی میں جیک کو کالج میں پڑھنے میں کافی دشواری ہوئی۔ چینی داخلہ امتحانات سال میں صرف 1 بار منعقد ہوتے تھے اور جیک نے اس کو پاس کرنے میں 4 سال لگادیے۔ جیک نے ہانگژو ٹیچرز انسٹیٹیوٹ (ابھی ہانگژو نارمل جامعہ کے نام سے جانی جاتی ہے۔) میں داخلہ لیا اور گریجوئیشن 1988ء میں بی اے، انگریزی میں کیا۔[21][22] اسکول کے دوران، جیک اسکول کی طالب علم کونسل کے صدر تھے۔[23] گریجوئیشن کے بعد، آپ ہانگژو ڈیازی جامعہ میں انگریزی اور بین الاقوامی سرمایہ کے لیکچرار لگ گئے۔ بعد میں چینگ کانگ گراجیوٹ اسکول آف بزنس میں داخلہ لیا اور 2006ء میں وہاں سے گریجوئیٹ کیا۔[24]

فلمی سفر[ترمیم]

2017ء میں جیک نے اداکاری کے سفر کا آغاز کنگ فو مختصر فلم گونگ شو ڈاؤ میں اداکاری کرتے ہوئے کیا۔ اسی سال آپ نے ایک گانے کے فیسٹیول میں لیا اور علی بابا گروپ کی 18ویں سالگرہ کے موقع پر رقص کیا۔[25][26][27]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت https://www.thefamouspeople.com/profiles/jack-ma-6221.php — اخذ شدہ بتاریخ: 28 جولا‎ئی 2018
  2. http://www.nytimes.com/2011/05/16/technology/16yahoo.html
  3. https://www.wsj.com/articles/its-official-chinas-e-commerce-king-is-a-communist-1543238782
  4. Alibaba hit $13 billion in sales in the first hour of Singles' Day. Meet the event's creator and Alibaba cofounder Jack Ma, the richest person in China. — اخذ شدہ بتاریخ: 21 جنوری 2020 — ناشر: Business Insider
  5. https://www.smh.com.au/business/companies/party-for-60-000-jack-ma-s-rock-star-farewell-from-alibaba-20190911-p52q1d.html
  6. https://www.forbes.com/billionaires/list/;5/#version:static — ناشر: فوربس — شائع شدہ از: 5 مئی 2019
  7. ^ ا ب "Jack Ma". Forbes (باللغة انگریزی). مؤرشف من الأصل في 25 دسمبر 2018. اخذ شدہ بتاریخ 17 مارچ 2018. 
  8. Tausche، Kayla (10 September 2014). "Alibaba's Jack Ma gets special gift for 50th birthday". CNBC.com. مؤرشف من الأصل في 25 دسمبر 2018. اخذ شدہ بتاریخ 05 جنوری 2016. 
  9. "Jack Ma — born Ma Yun —". Business Insider. مؤرشف من الأصل في 25 دسمبر 2018. اخذ شدہ بتاریخ 27 مارچ 2018. 
  10. "China will struggle to produce another Jack Ma". The Economist (باللغة انگریزی). مؤرشف من الأصل في 25 دسمبر 2018. اخذ شدہ بتاریخ 17 ستمبر 2018. 
  11. "The World's Most Powerful People". Forbes (انگریزی میں). مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  12. "The World's Billionaires". Forbes (انگریزی میں). مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  13. "How Jack Ma became the role model for startup generation". www.bloomberg.com. مؤرشف من الأصل في 25 دسمبر 2018. 
  14. "Theo Epstein". Fortune (باللغة انگریزی). 2017-03-23. مؤرشف من الأصل في 25 دسمبر 2018. اخذ شدہ بتاریخ 14 فروری 2018. 
  15. "China's richest man Jack Ma to stand down from Alibaba". Margi Murphy. Telegraph. 8 September 2018. مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 08 ستمبر 2018.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  16. "Billionaire Jack Ma prepares for life after Alibaba. He'll retire Monday, report says". LULU YILUN CHEN and TOM MACKENZIE. Los Angeles Times. 7 September 2018. مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 08 ستمبر 2018.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  17. "Alibaba's Jack Ma, China's richest man, to retire from company he co-founded". دی اکنامک ٹائمز. 8 September 2018. مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 08 ستمبر 2018.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  18. Choudhury، Saheli. "Alibaba announces Jack Ma succession plan: CEO Daniel Zhang to take over as chairman in a year". CNBC (باللغة انگریزی). مؤرشف من الأصل في 25 دسمبر 2018. اخذ شدہ بتاریخ 09 ستمبر 2018. 
  19. "China will struggle to produce another Jack Ma". The Economist (باللغة انگریزی). مؤرشف من الأصل في 6 جنوری 2019. اخذ شدہ بتاریخ 26 ستمبر 2018. 
  20. Kalyani Mookherji (2008). Brief biography of Jack Ma. Google Books. Prabhat Prakashan. مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  21. "Alibaba Group". News.alibaba.com. مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 2016-03-05.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  22. Rose، Charlie (2015-01-29). "Alibaba's Jack Ma on Early Obstacles, His Ambitions". Bloomberg.com. مؤرشف من الأصل في 25 دسمبر 2018. اخذ شدہ بتاریخ 02 جون 2015. 
  23. Fannin، Rebecca (2008-01-01). "How I Did It: Jack Ma, Alibaba.com". Inc. Magazine. اخذ شدہ بتاریخ 12 اپریل 2010. 
  24. "Alumni Profiles". English.ckgsb.edu.cn. مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 2015-06-02.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  25. Horwitz، Josh. "Jack Ma is using Singles Day, a symbol of crass commercialism, to revitalize Tai Chi in China". Quartz. مؤرشف من الأصل في 25 دسمبر 2018. 
  26. "This could well be the oddest video you'll see this week". NewsComAu. مؤرشف من الأصل في 25 دسمبر 2018. 
  27. Ciolli، Joe (13 October 2017). "Billionaire Alibaba CEO Jack Ma sings at surprise music festival appearance". Business Insider Singapore. مؤرشف من الأصل في 25 دسمبر 2018. 

بیرونی روابط[ترمیم]