حب اذاراقی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

وجہ تسمیہ[ترمیم]

اذاراقی اس مرکب کا جزوِ خاص ہونے کی وجہ سے اِس نام سے موسوم ہے۔

استعمالات[ترمیم]

عصبی دردوں میں مفید ہے۔ وجع المفاصل، نقرس اور تمام اوجاع بدن کو فائدہ دیتی ہے۔ عصبی امراض مثلاً فالج، لقوہ، استرخاء ، ضعف اعصاب میں بھی سُودمند ہے۔

جزءِ خاص[ترمیم]

اذاراقی

دیگر اجزاء مع طریقۂ تیاری[ترمیم]

دارچینی ،جائفل ، جاوتری، عود صلیب، قرنفل ہر ایک ۱۰ گرام کچلہ مدبر ۲۰ گرام۔ جملہ ادویہ کو پیس چھان کر عرق نانخواہ یا عرق پان میں خوب کھرل کریں اور چنے کے برابر گولیاں بنائیں۔

مقدار خوراک[ترمیم]

ایک سے دو گولی ہمراہ آبِ تازہ۔

[1]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

[2][3][4][5][6]

بیرونی روابط[ترمیم]