دلاور فگار

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
دلاور فگار
دلاور فگار.jpg

معلومات شخصیت
پیدائش 8 جولا‎ئی 1929  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بدایوں،  اتر پردیش،  برطانوی ہند  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 21 جنوری 1998 (69 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کراچی،  پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند
Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی ڈاکٹر بھیم راؤ امبیڈکر یونیورسٹی، آگرہ  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ شاعر،  معلم  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اعزازات
P literature.svg باب ادب

دلاور فگار (Dilawar Figar) پاکستان سے تعلق رکھنے والے اردو زبان کے نامور مزاحیہ شاعر، نقاد اور ماہر تعلیم تھے۔ ان کا اصل نام دلاورحسین تھا۔

حالات زندگی[ترمیم]

دلاور فگار 8 جولائی، 1929ء کوبدایوں، اتر پردیش، برطانوی ہندوستان میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے اپنی ابتدائی تعلیم بدایوں ہی میں حاصل کی۔ اس کے بعد انہوں نے آگرہ یونیورسٹی سے ایم اے (اردو) کی ڈگری حاصل کی۔ اس کے علاوہ انھوں نے ایم اے (انگریزی) اور ایم اے (معاشیات) کی اسناد بھی حاصل کیں۔ اپنی پیشہ ورانہ زندگی کا آغاز انہوں نے بھارت میں درس و تدریس سے کیا۔ تقسیم ہند کے بعد پاکستان آ گئے اور کراچی میں مستقل سکونت اختیار کی۔ وہ یہاں کے عبد اﷲ ہارون کالج میں بحیثیت لیکچرار کچھ عرصے تک اردو پڑھاتے تھے۔ اس وقت فیض احمد فیض یہاں کے پرنسپل ہوا کرتے تھے۔ دلاورنے شعر گوئی کا آغاز 14 برس کی عمر میں 1942ء میں کیا۔ انہیں مولوی جام نوائی بدایونی اور مولانا جامی بدایونی نامی اساتذہ کی رہنمائی ملی تھی۔

تصانیف[ترمیم]

  • حادثے (1954ء)
  • ستم ظریفیاں (1963ء )[1]
  • شامتِ اعمال
  • آداب عرض
  • عصرِ نو
  • انگلیاں فگار اپنی
  • مطلع عرض ہے
  • خدا جھوٹ نہ بلوائے
  • خوشبو کا سفر
  • آئینہ راغب
  • چراغِ خنداں
  • خوب تر کہاں
  • آبشارِ نور
  • فی سبیل اللہ
  • صلہ شہید کیا ہے؟
  • کہا سنا معاف کرنا

وفات[ترمیم]

21 جنوری 1998ء کو دلاور فگار کا انتقال ہو گیا۔[2]

حوالہ جات[ترمیم]