زید حامد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
سید زید الزمان حامد
معلومات شخصیت
تاریخ پیدائش 14 مارچ 1964ء (عمر 55 سال)
رہائش راولپنڈی
قومیت پاکستان
دیگر نام سید زید زمان حامد
مذہب اسلام
عملی زندگی
مادر علمی این ای ڈی یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تعلیم از (P69) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ مشیر سلامتی امور اور سیاسی تجزیہ کار
شعبۂ عمل بین الاقوامی تعلقات  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شعبۂ عمل (P101) ویکی ڈیٹا پر
ویب سائٹ
ویب سائٹ ذاتی موقع حبالہ
نمایۂ صارف

زید حامد ایک آزاد[1] و باگفتہ خود[2] (Self-Styled) دفاعی امور بالخصوص افغان امور کے ایک ماہر ہیں۔ ان کا تعلق پاکستان سے ہے۔ آپ کا ٹی وی شو براس ٹیکس[3] اس وقت وسیط کے مقبول ترین پروگراموں میں سے ایک ہے جو ہر اتوار کی شب 8:00 نیوز ون چینل سے نشر کیا جاتا ہے۔ براس ٹیکس کے لیے پاکستانی مفل فکر (Thinktank) کا نام بھی جال محیط عالم اور اخبارات میں آتا ہے جو علاقائی و عالمی سیاسیات و واقعات کے پاکستان پر اثرات کا مطالعہ کرتا ہے۔[1] انہوں نے افغان جہاد میں خود بھی حصہ لیا۔[2] اسی لیے زید کے تجزیے حقیقت سے نزدیک سمجھنے والے حلقے میں بھی پائے جاتے ہیں۔۔[4] تعلیمی اعتبار سے زید کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ انجینئر ہیں اور این ای ڈی یونیورسٹی سے برقیاتی ہندسیات میں سند تکمیل کی [2] جبکہ براس ٹیک کے اپنے موقع پر شمارندی ہندسیات میں تکمیل سند کا ذکر ملتا ہے[3]۔

تنقید[ترمیم]

6 اکتوبر 2008ء کو کراچی کے ایک روزنامے امّت میں شائع ہونے والے مضمون۔[5] کے مطابق 2000ء میں کراچی کے ایک شخص یوسف علی نے نبوّت کا جھوٹا دعویٰ کیا جس کو لاہور ہائیکورٹ نے ناقابل تردید ثبوت کی بنا پر سزائے موت سنادی تھی۔[6] لیکن بعد از کافی علما نے یوسف کے حق میں بیان دیے کہ یوسف پہ لگایا جانا والا الزام غلط تھاکہ اسں نے نبوت کا دعویٰ کیا۔ اور یہ الزام بھی غلط ہے کہ یوسف نے زید حامد کو اپنا خلیفہ بنایا تھا اس حوالے سے کراچی کے ایک ہفت روزہ تکبیر میں اس حوالہ سے کافی مواد شائع ہوا جس میں موجودہ زید حامد کو زید زمّان بتایا گیا ہے کہا جاتا ہے کہ زید حامد نے اس حوالے سے کافی ترد یدی بیان دے چکے ہیں کہ یوسف کی اپنی سوچ سے میرا کوئی واسطہ نہیں،اور کہا میں حضرت محمدؐ کوآخری نبی اور ختم نبوتؐ پہ یقین رکھتا ہوں۔

بیرونی روابط[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب Indian muslim. in پر ایک مضمون
  2. ^ ا ب پ pakistan herald پر ایک مضمون
  3. ^ ا ب brasstack کا موقع آن لائن
  4. pakistan first.com کا موقع آن لائن
  5. جسارت اخبار کا عکس (امت اخبار کے مضمون کا عکس آن لائن پتہ تبدیل یا ختم ہوجانے کی صورت میں یہاں دیکھا جاسکتا ہے)
  6. یوسف کے بارے میں مضمون